1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

جون ایلیا نظم "سزا" ۔ جون ایلیا

حجاب نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 18, 2007

  1. حجاب

    حجاب محفلین

    مراسلے:
    3,433
    سزا


    ہر بار میرے سامنے آتی رہی ہو تم
    ہر بار تم سے مل کے بچھڑتا رہا ہوں میں
    تم کون ہو یہ خود بھی نہیں جانتی ہو تم
    میں کون ہوں یہ خود بھی نہیں جانتا ہوں میں
    تم مجھ کو جان کر ہی پڑی ہو عذاب میں
    اور اسطرح خود اپنی سزا بن گیا ہوں میں

    تم جس زمین پر ہو میں اُس کا خدا نہیں
    پس سر بسر اذیت و آزار ہی رہو
    بیزار ہو گئی ہو بہت زندگی سے تم
    جب بس میں کچھ نہیں ہے تو بیزار ہی رہو
    تم کو یہاں کے سایہ و پرتو سے کیا غرض
    تم اپنے حق میں بیچ کی دیوار ہی رہو

    میں ابتدائے عشق سے بے مہر ہی رہا
    تم انتہائے عشق کا معیار ہی رہو
    تم خون تھوکتی ہو یہ سُن کر خوشی ہوئی
    اس رنگ اس ادا میں بھی پُر کار ہی رہو

    میں نے یہ کب کہا تھا محبت میں ہے نجات
    میں نے یہ کب کہا تھا وفادار ہی رہو
    اپنی متاعِ ناز لُٹا کر مرے لیئے
    بازارِ التفات میں نادار ہی رہو

    جب میں تمہیں نشاطِ محبت نہ دے سکا
    غم میں کبھی سکونِ رفاقت نہ دے سکا
    جب میرے سب چراغِ تمنا ہوا کے ہیں
    جب میرے سارے خواب کسی بے وفا کے ہیں
    پھر مجھ کو چاہنے کا تمہیں کوئی حق نہیں
    تنہا کراہنے کا تمہیں کوئی حق نہیں( جون ایلیا )
    ٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪٪
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    کیا بات ہے جون ایلیا کی اور شکریہ آپ کے شیئر کرنے کا۔
     
  3. حجاب

    حجاب محفلین

    مراسلے:
    3,433
    شکریہ ۔
     
  4. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    بہت خوب حجاب :)
     
  5. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    بہت خوب حجاب۔
     
  6. امر شہزاد

    امر شہزاد محفلین

    مراسلے:
    225
    موڈ:
    Cheerful
    جون ایلیا کی ایک نظم

    ہر بار میرے سامنے آتی رہی ہو تم
    ہر بار تم سے مل کے بچھڑتا رہا ہوں میں
    تم کون ہو یہ خود بھی نہیں جانتی ہو تم
    میں کون ہو یہ خود بھی نہیں جانتا ہوں میں
    تم مجھ کو جان کر ہی پڑی ہو عذاب میں
    اور اس طرح خود اپنی سزا بن گیا ہوں میں

    تم جس زمین پر ہو میں اس کا خدا نہیں
    پس سر بسر اذیت و آزار ہی رہو
    بیزار ہو گئی ہو بہت زندگی سے تم
    جب بس میں کچھ نہیں ہے تو بیزار ہی رہو
    تم کو یہاں‌کے‌سایہ‌و‌پر‌تو‌س ے‌کیا‌غرض
    تم اپنے حق میں بیچ کی دیوار ہی رہو

    میں ابتدائے عشق سے بے مہر ہی رہا
    تم انتہائے عشق کا معیار ہی رہو
    تم خون تھوکتی ہو یہ سن کر خوشی ہوئی
    اس رنگ اس ادا میں بھی پرکار ہی رہو

    میں نے یہ کب کہا تھا محبت میں ہے نجات
    میں نے یہ کب کہاتھا وفادار ہی رہو
    اپنی متاع ناز لُٹا کر مرے لیے
    بازارِ التفات میں نادار ہی رہو

    جب میں تمھیں‌نشاطِ محبت نہ دے سکا
    غم میں کبھی سکونِ رفاقت نہ دے سکا
    جب میرے سب چراغِ تمنا ہوا کے ہیں
    جب میرے سارے خواب کسی بے وفا کے ہیں
    پھر مجھ کو چاہنے کا تمھیں کوئی حق نہیں
    تنہا کراہنے کا تمھیں کوئی حق نہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 14
  7. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,163
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ امر شہزاد صاحب، جون ایلیا کی خوبصورت نظم شیئر کرنے کیلیئے
     
  8. خرم شہزاد خرم

    خرم شہزاد خرم لائبریرین

    مراسلے:
    10,816
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    بہت خوب شہزاد بھائی بہت پیاری نظم ہے بہت شکریہ
     
  9. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,674
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    بہت خوبصورت!
     
  10. خاورچودھری

    خاورچودھری محفلین

    مراسلے:
    309
    شکریہ امر اسے پڑھ کر لطف لیا
     
  11. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    یہ نظم پہلے بھی یہاں موجود ہے۔ پھر بھی دوبارہ پڑھ کر مزہ آیا۔ بہت شکریہ۔
     
  12. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,632
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت اچھی نظم ہے امیر شہزاد صاحب - بہت شکریہ!
     
  13. زھرا علوی

    زھرا علوی محفلین

    مراسلے:
    1,698
    موڈ:
    Asleep
    بہت کٹھور قسم کی نظم ہے۔۔۔:)
     
  14. امیداورمحبت

    امیداورمحبت محفلین

    مراسلے:
    3,057
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
  15. ساجداقبال

    ساجداقبال محفلین

    مراسلے:
    2,018
    ”کیا“ کے لاحقے والی جون ایلیا کی چند نظمیں/غزلیں ہیں۔ ایک غزل یا غالباً نظم جس میں‌ ایک مصرعہ ”کوئی رہتا ہے آسمان میں کیا“ ہے، کسی کے پاس یا محفل پر موجود ہے؟
     
  16. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    جون جی کی اپنی آواز میں احباب کی نظر
     

اس صفحے کی تشہیر