فرموداتِ قائد اعظم محمد علی جناح

الف نظامی نے 'تاریخ کا مطالعہ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 10, 2012

  1. سید عاطف علی

    سید عاطف علی محفلین

    مراسلے:
    8,509
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    گاہے گاہے باز خواں ایں قصہءِ پارینہ را
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  2. الشفاء

    الشفاء محفلین

    مراسلے:
    2,691
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    نگہ بلند سخن دلنواز جاں پرسوز
    یہی ہے رخت سفر میر کارواں کے لئے۔

    بہترین۔۔۔:)
     
    • متفق متفق × 2
  3. احمدبسراء

    احمدبسراء محفلین

    مراسلے:
    184
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    اللہ آپ کو جزائے خیر عطا کرے۔آمین
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  4. آبی ٹوکول

    آبی ٹوکول محفلین

    مراسلے:
    3,502
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Drunk
    جزاک اللہ خیرا نظامی بھائی محمد علی جناح علیہ رحمہ بلا شبہ قائد اعظم ہی تھے قول کہ سچے بات کہ پکے عمل کہ کھرے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  5. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,393
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بہت شاندار شراکت
    اللہ آپ کو جزائے خیر عطا فرمائے آمین
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  6. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,221
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
  7. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,221
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
  8. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,221
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
  9. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,221
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    آخر میں ہم قائد اعظم محمد علی جناح رحمۃ اللہ علیہ کا وہ خطاب آپ کے سامنے رکھنا چاہتے ہیں جو ان کے کردار کی سچائی کی سچی اور کھری شہادت کے طور پر تاریخ کے سینے پر چمک رہا ہے۔ یہ خطاب آپ نے 30 جولائی 1948 ء کو لاہور میں اسکاوٹ ریلی سے کیا تھا۔ آپ نے فرمایا :-​

    " میں نے بہت دنیا دیکھ لی۔ اللہ تعالی نے عزت ، دولت ، شہرت بھی بے حساب دی۔ اب میری زندگی کی ایک ہی تمنا ہے کہ مسلمانوں کو باوقار و سر بلند دیکھوں۔ میری خواہش ہے کہ جب مروں تو میرا دل گواہی دے کہ جناح نے اللہ کے دین اسلام سے خیانت اور پیغمبر اسلام حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی امت سے غداری نہیں کی۔ مسلمانوں کی آزادی ، تیظیم ، اتحاد اور مدافعت میں اپنا کردارٹھیک ٹھیک ادا کیا اور میرا اللہ کہے کہ اے میرے بندے! بے شک تو مسلمان پیدا ہوا۔ بے شک تو مسلمان مرا "
     
    • زبردست زبردست × 4
  10. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,221
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اگست 1941 میں قائد اعظم نے راک لینڈ کے شاہی مہمان خانے میں طلبا اور نوجوانوں کو تبادلہ خیال کا موقع مرحمت فرمایا اور بیماری کے باوجود پون گھنٹہ تک گفتگو کرتے رہے۔ اس موقع پر نواب بہادر یار جنگ بھی موجود تھے۔ جناب محمود علی بی اے نے یہ گفتگو ریکارڈ کی اور اورئینٹ پریس کو بھیجی۔ اس گفتگو میں قائد اعظم سے سوالات بھی کیے اور قائد اعظم نے ان کے جوابات مرحمت فرمائے۔
    سوال: مذہب اور مذہبی حکومت کے لوازمات کیا ہیں؟
    جواب:
    قائد اعظم نے فرمایا: جب میں انگریزی زبان میں مذہب کا لفظ سنتا ہوں تو اس زبان اور قوم کے محاورہ کے مطابق میرا ذہن "خدا اور بندے" کی باہمی نسبتوں اور روابط کی طرف منتقل ہو جاتا ہے۔ میں نہ تو کوئی مولوی ہوں ، نہ مجھے دینیات میں مہارت کا دعوی ہے البتہ میں نے قرآن مجید اور اسلامی قوانین کے مطالعہ کی اپنے طور کوشش کی ہے۔ اس عظیم الشان کتاب یعنی قرآن مجید میں اسلامی زندگی کے متعلق ہدایات کے بارے میں زندگی کا روحانی پہلو ، معاشرت ، سیاست ، غرض انسانی زندگی کا کوئی شعبہ ایسا نہیں ہے جو قرآن کریم کی تعلیمات کے احاطہ سے باہر ہو۔
    بحوالہ:
    1- ماہنامہ "المعارف" قائد اعظم نمبر ، نومبر -دسمبر 1976 صٖفحہ 72 تا 74
    2- قائد اعظم اور قرآن فہمی ، صفحہ 66 از محمد حنیف شاہد ، نظریہ پاکستان فاونڈیشن لاہور
     
    • زبردست زبردست × 1
  11. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,221
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
  12. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    جزاک اللہ نظامی بھائی ۔ آپ کا یہ دھاگہ منافق ن لیک اور ان ہمنواؤں کے ڈھکے چھپے ایجنڈے پر گہری چوٹ ہے جو ملکی اساس کا بیڑا غرق کرنا چاہتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  13. سردار محمد نعیم

    سردار محمد نعیم محفلین

    مراسلے:
    1,838
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Aggressive
    فرمان قائد
    اب ہم سب پاکستانی ہیں اور ہم میں سےکوئی بھی سندھی ، بلوچی ، بنگالی ، پٹھان یا پنجابی نہیں ہے۔ ہمیں صرف اور صرف اپنے پاکستانی ہونے پر فخر ہونا چاہئیے۔
    (15 جون، 1948)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    لوگ کچھ بھی کہتے رہیں حقیقت یہ ہے کہ پاکستان دنیا کے ان ممالک میں شامل ہے جہاں نسل پرستی آٹے میں نمک کے برابر ہے۔
     
    • متفق متفق × 1
  15. مرزا حنیف احمد

    مرزا حنیف احمد معطل

    مراسلے:
    222
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Aggressive
    اسی لئے ووٹ نسلی بنیادوں پر دیتے ہیں۔
     
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  16. مرزا حنیف احمد

    مرزا حنیف احمد معطل

    مراسلے:
    222
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Aggressive
    نواز شریف کی دائمی نااہلی سے قبل تک آپ نون لیگ کے شیدائی تھے، اب یہ منافق ہو گئی ہے۔
     
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  17. مرزا حنیف احمد

    مرزا حنیف احمد معطل

    مراسلے:
    222
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Aggressive
    اگر مولوی بن جاتے تو کبھی پاکستان نہ بنتا۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  18. مرزا حنیف احمد

    مرزا حنیف احمد معطل

    مراسلے:
    222
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Aggressive
    اسلام میں نیشنل ازم کا کوئی تصور نہیں ہے۔ یہ ایک مغربی آئیڈیولوجی ہے۔ اسلام میں امت کا تصور ہے جبکہ قائد اعظم نے ایک مسلم نیشنل موومنٹ کیلئے جدوجہد کی۔
     
    • متفق متفق × 2
  19. مرزا حنیف احمد

    مرزا حنیف احمد معطل

    مراسلے:
    222
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Aggressive
    یہ نعرہ جماعت اسلامی نے پہلی بار پاکستان کے قیام کے بعد احمدی مخالف تحریک کے دوران لگایا تھا۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  20. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اکثر ایسا نہیں ہوتا، اگر زیادہ تر ایسا ہوتا تو پیپلز پارٹی پورے ملک سے ووٹ نہ لے کر حکومت نہ بنا پاتی، نہ ہی ن لیگ خیبر پی کے اور بلوچستان سے بھی زیادہ ووٹ حاصل کرپاتی۔
    شیدائی تو میں کبھی کسی بھی سیاسی جماعت کا نہیں رہا، نواز کے لئے نرم گوشہ ضرور تھا مگر جب موجودہ دور حکومت میں جب نواز رفتہ رفتہ پاکستان کو سیکولر ریاست بنانے کے لئے پیش رفت شروع کی تو قابل نفرت ہوگیا۔ بلکہ اعلانیہ اس کا اظہار بھی کیا تھا۔
     

اس صفحے کی تشہیر