1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $418.00
    اعلان ختم کریں

لیاقت علی عاصم بہت چپ ہو شکایت چھوڑ دی کیا۔۔۔۔ لیاقت علی‌ عاصم

محمداحمد نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 15, 2008

  1. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,625
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    غزل

    بہت چپ ہو شکایت چھوڑ دی کیا
    رہ و رسمِ محبت چھوڑ دی کیا

    یہ کیا اندر ہی اندر بُجھ رہے ہو
    ہواؤں سے رقابت چھوڑ دی کی

    مناتے پھر رہے ہو ہر کسی کو
    خفا رہنے کی عادت چھوڑ دی کیا

    لیے بیٹھی ہیں آنکھیں آنسوؤں کو
    ستاروں کی سیاحت چھوڑ دی کیا

    غبارِ دشت کیوں بیٹھا ہوا ہے
    مرے آہو نے وحشت چھوڑ دی کیا

    یہ دنیا تو نہیں مانے گی عاصم
    مگر تم نے بھی حجت چھوڑ دی کیا


    لیاقت علی عاصم کی "نشیبِ شہر" سے انتخاب
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 18
  2. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بہت خوب جناب۔
    جون ایلیا کی یاد آ گئی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    کیا بات ہے احمد ۔۔ خاصے سعد بخت ثابت ہوئے ہو!
    سدا خوش رہو سلامت رہو مسکراتے رہو کھلکھلاتے رہو !
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,070
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    واہ واہ، لا جواب غزل ہے۔

    شکریہ احمد صاحب، نوازش!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  5. امیداورمحبت

    امیداورمحبت محفلین

    مراسلے:
    3,057
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بہت خوب ۔ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  6. ایم اے راجا

    ایم اے راجا محفلین

    مراسلے:
    3,230
    جھنڈا:
    Pakistan
    بہت خوب انتخاب ہے لاجواب، واہ واہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  7. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    غبارِ دشت کیوں بیٹھا ہوا ہے
    مرے آہو نے وحشت چھوڑ دی کیا


    بہت خوب :)
    بہت شکریہ احمد!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  8. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,625
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    ایم اے راجا, زرقا مفتی, شمشاد, فرحت کیانی, ماوراء, محسن حجازی, محمد وارث, ملائکہ, م۔م۔مغل

    انتخاب کی پسندیدگی کا شکریہ!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  9. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    اس شکریہ کیلئے شکریہ ۔۔۔۔۔۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. نوید صادق

    نوید صادق محفلین

    مراسلے:
    2,278
    احمد ساحب! غزل کے لئے شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  11. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,625
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    بڑی عنایت! نوید صاحب
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  12. جیا راؤ

    جیا راؤ محفلین

    مراسلے:
    1,888

    بہت چپ ہو شکایت چھوڑ دی کیا
    رہ و رسمِ محبت چھوڑ دی کیا

    بہت خوب !!

    غبارِ دشت کیوں بیٹھا ہوا ہے
    مرے آہو نے وحشت چھوڑ دی کیا

    واہ واہ بہت ہی پیارا شعر ہے۔۔۔ !!
    خوبصورت غزل شئیر کرنے کا بہت شکریہ احمد صاحب۔۔۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  13. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بہت چپ ہو شکایت چھوڑدی کیا ------- لیاقت علی عاصم

    غزل

    بہت چپ ہو شکایت چھوڑدی کیا!
    رہ و رسم محبت چھوڑدی کیا

    یہ کیا اندر ہی اندر بجھ رہے ہو
    ہواؤں سے رقابت چھوڑدی کیا

    مناتے پھر رہے ہو ہر کسی کو
    خفا رہنے کی عادت چھوڑدی کیا

    لیے بےٹھی ہیں آنکھیں آنسوؤں کو
    ستاروں کی سیاحت چھوڑدی کیا!

    غبارِ شہر کیوں بےٹھا ہوا ہے
    مرے آہو نے وحشت چھوڑدی کیا!

    فقیروں کی طرف آنے لگے پھر
    نمائش گاہِ شہرت چھوڑدی کیا!

    مرے کمرے کو معبد کہنے والی
    کہاں ہے تو ،عبادت چھوڑدی کیا!

    یہ دنیا تو نہیں مانے گی عاصم
    مگر تم نے بھی حجت چھوڑدی کیا

    لیاقت علی عاصم
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  14. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,371
    بہت چُپ ہو شکایت چھوڑ دی کیا! - لیاقت علی عاصم

    غزل
    (لیاقت علی عاصم)

    بہت چُپ ہو شکایت چھوڑ دی کیا!
    رہ و رسم محبت چھوڑ دی کیا

    یہ کیا اندر ہی اندر بجھ رہے ہو
    ہواؤں سے رقابت چھوڑ دی کیا

    مناتے پھر رہے ہو ہر کسی کو
    خفا رہنے کی عادت چھوڑ دی کیا

    لیے بیٹھی ہیں آنکھیں آنسوؤں کو
    ستاروں کی سیاحت چھوڑ دی کیا!

    غبار شہر کیوں بیٹھا ہوا ہے
    مرے آہو نے وحشت چھوڑ دی کیا!

    فقیروں کی طرف آنے لگے پھر
    نمائش گاہِ شہرت چھوڑ دی کیا!

    مرے کمرے کو معبد کہنے والی
    کہاں ہے تو عبادت چھوڑ دی کیا!

    یہ دنیا تو نہیں مانے گی عاصم
    مگر تم نے بھی حجت چھوڑ دی کیا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,070
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    تھری اِن وَن اینڈ کاؤنٹنگ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  16. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    شکریہ وارث صاحب۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  17. مجیب

    مجیب محفلین

    مراسلے:
    48
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    مناتے پھر رہے ہو ہر کسی کو
    خفا رہنے کی عادت چھوڑ دی کیا


    کیا کہنے

    بہت خوب !
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  18. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,625
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    واقعی ! یہ غزل ایسی ہی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  19. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    پڑھ کر روح سرشار ہوگئی ۔ کمال غزل ہے سبحان اللہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر