Khursheed

محفلین
محترم اساتذہ کرام اصلاح کا بہت شکریہ
نہایت ادب سے
گدگدائے تری چوڑیوں کی کھنک
تمنائی نہیں بلکہ جب کوئی چوڑیاں پہن کر بال بکھرا رہا ہو تو اس وقت کھنک پیدا ہو گی اسی کیفیت کو بیان کیا ہے اور نقرئی یا چاندی کی گھنتیاں اس لیے کہ وہ مندر میں ہیں جہاں سونا چاندی عام ہوتا ہے اور عقیدت سے آہنی کی بجائے چاندی کی بنائی گئی ہیں
 

Khursheed

محفلین
کوئی تھک ہار کے آتا ہے اس کا محبوب اس کے گلے میں بانہیں ڈال کے چوڑیوں بھری کلائی کے ساتھ اس کے بال بکھراتا ہے تو چوڑیوں کی کھنک اس کو گدگدا کے اس کی تھکاوٹ دور کر دیتی ہے
اسی طرح ہر ٹیپ کا مصرعہ اپنا مفہوم رکھتا ہے
 

Khursheed

محفلین
جیسے مندر میں سونے کی اک مورتی
ہاتھ باندھے مقابل پجارن کھڑی
چاندی کی گھنٹیاں جب بجانے لگی
گنگنائے تری پائلوں کی چھنک

پہلے تین مصرعوں میں جو منظر بیان ہوا ہے اس میں گھنٹیوں کی آواز سن کر محبوب کی پائلوں کی چھنک کانوں میں گنگنانے لگتی ہے
 
جیسے مندر میں سونے کی اک مورتی
ہاتھ باندھے مقابل پجارن کھڑی
چاندی کی گھنٹیاں جب بجانے لگی
گنگنائے تری پائلوں کی چھنک

پہلے تین مصرعوں میں جو منظر بیان ہوا ہے اس میں گھنٹیوں کی آواز سن کر محبوب کی پائلوں کی چھنک کانوں میں گنگنانے لگتی ہے
گھنٹیاں چاندی ہی کی کیوں ہیں؟ چاندی کی گھنٹیاں محاورہ یا روز مرہ، دونوں ہی نہیں... پھر یہاں چاندی کا تذکرہ وزن پورا کرنے کی مشق کے علاوہ اور کیا ہو سکتا ہے؟ چاندی کی ی بھی اتنی دب رہی ہے کہ مصرعے کی روانی مخدوش ہو رہی ہے.
پائل تو خود چھنکتی ہے، ایک طرح سے پائل کی چھنک اس کا گیت ہے ... خود چھنک کس طرح گنگنا سکتی ہے؟؟؟
پھر یہ گنگناہٹ ہو کدھر رہی ہے؟ ٹیپ کے مصرعے مطابق سرخ ہونٹوں تلے ایسا ہوتا جو اپنے آپ میں مہمل بات ہے ... اگر یہ آواز کانوں میں محسوس ہو رہی ہے (جیسا کہ ہونا چاہیے) تو اس کی طرف کوئی اشارہ نہیں.
 

Khursheed

محفلین
سر چونکہ ذکر ہورہاہے مندر کا تو مندر میں عقیدت کی وجہ سے مورتیاں گھنٹیاں وغیرہ سونے چاندی کی ہوتی ہیں اور اس منظر میں کھڑے شخص کا تخیل ہے کہ گھنٹیوں کی آواز سے اس کے ذہن میں اپنے محبوب کی پائل آجاتی ہے تھوڑی ایبسٹریکشن کہ لیں
 
سر چونکہ ذکر ہورہاہے مندر کا تو مندر میں عقیدت کی وجہ سے مورتیاں گھنٹیاں وغیرہ سونے چاندی کی ہوتی ہیں اور اس منظر میں کھڑے شخص کا تخیل ہے کہ گھنٹیوں کی آواز سے اس کے ذہن میں اپنے محبوب کی پائل آجاتی ہے تھوڑی ایبسٹریکشن کہ لیں
چلیں، جب کبھی آپ اپنا مجموعہ شائع کریں تو یہ سب نکات فٹ نوٹس میں ساتھ لگا دیجیے گا :)
اب اور کیا کہوں ... الفاظ کا مافی الضمیر کا ساتھ دینا ضروری ہوتا ہے... ورنہ معنی یونہی در بطن شاعر رہ جاتے ہیں.
 

Khursheed

محفلین
سر آپکی اصلاح قابلِ قدر ہے ایک بالکل نیا بندہ تو صرف سیکھنے کی کوشش کررہا ہے آپ جیسے اساتذہ سے اس لیے تھوڑی سی بحث کی گستاخی بھی کر لیتا ہے
 
سر آپکی اصلاح قابلِ قدر ہے ایک بالکل نیا بندہ تو صرف سیکھنے کی کوشش کررہا ہے آپ جیسے اساتذہ سے اس لیے تھوڑی سی بحث کی گستاخی بھی کر لیتا ہے
بحث بالکل کریں ... لیکن ساتھ یہ بھی سمجھیں کہ جس قسم کے ابہامات کی نشاندہی کی جا رہی وہ معیوب سمجھے جاتے ہیں... ان کو دور کریں گے تو آپ کے کلام کا حسن بڑھے گا.
 

فہد اشرف

محفلین
گھنٹیاں چاندی ہی کی کیوں ہیں؟ چاندی کی گھنٹیاں محاورہ یا روز مرہ، دونوں ہی نہیں
ایلن پو کی نظم "دی بیلز" سلور بیلز سے ہی شروع ہوتی ہے
Hear the sledges with the bells—
Silver Bells
What a world of merriment their melody foretells!

اردو میں بھی شاید نقرئی گھنٹیوں کا استعمال بھی پڑھا پڑھا سا لگ رہا ہے۔
 
ایلن پو کی نظم "دی بیلز" سلور بیلز سے ہی شروع ہوتی ہے
Hear the sledges with the bells—
Silver Bells
What a world of merriment their melody foretells!

اردو میں بھی شاید نقرئی گھنٹیوں کا استعمال بھی پڑھا پڑھا سا لگ رہا ہے۔
کمال کرتے ہیں میاں ... بات اردو محاورے کی ہو رہی ہے، آپ حوالہ انگریزی ادب کا دے رہے ہیں :)
 

فہد اشرف

محفلین
کمال کرتے ہیں میاں ... بات اردو محاورے کی ہو رہی ہے، آپ حوالہ انگریزی ادب کا دے رہے ہیں :)
یہ تو ایسے ہی لکھ دیا تھا۔ گو کہ اردو ادب میں اس کی مثال نہیں مل رہی لیکن پھر بھی مجھے چاندی کی گھنٹی کوئی نئی ترکیب نہیں لگ رہی شاید اس کی وجہ یہ ہو کہ ہندوستان میں چاندی کی گھنٹیاں حقیقت میں ہوتی ہیں جسے اکثر ہندو لوگ اپنے گھر کے مندروں اور پوجا کی تھالیوں میں رکھتے ہیں۔

اخترالایمان کی چھوٹی سی نظم

دور کی آواز

نقرئی گھنٹیاں سی بجتی ہیں
دھیمی آواز میرے کانوں میں
دور سے آ رہی ہو تم شاید
بھولے بسرے ہوئے زمانوں میں
اپنی میری شکایتیں شکوے
یاد کر کر کے ہنس رہی ہو کہیں
بشکریہ ریختہ
 

Khursheed

محفلین
یہ تو ایسے ہی لکھ دیا تھا۔ گو کہ اردو ادب میں اس کی مثال نہیں مل رہی لیکن پھر بھی مجھے چاندی کی گھنٹی کوئی نئی ترکیب نہیں لگ رہی شاید اس کی وجہ یہ ہو کہ ہندوستان میں چاندی کی گھنٹیاں حقیقت میں ہوتی ہیں جسے اکثر ہندو لوگ اپنے گھر کے مندروں اور پوجا کی تھالیوں میں رکھتے ہیں۔

اخترالایمان کی چھوٹی سی نظم

دور کی آواز

نقرئی گھنٹیاں سی بجتی ہیں
دھیمی آواز میرے کانوں میں
دور سے آ رہی ہو تم شاید
بھولے بسرے ہوئے زمانوں میں
اپنی میری شکایتیں شکوے
یاد کر کر کے ہنس رہی ہو کہیں
بشکریہ ریختہ

جی ترکیب تو استعمال ہوتی ہے
 

Khursheed

محفلین
یہ تو ایسے ہی لکھ دیا تھا۔ گو کہ اردو ادب میں اس کی مثال نہیں مل رہی لیکن پھر بھی مجھے چاندی کی گھنٹی کوئی نئی ترکیب نہیں لگ رہی شاید اس کی وجہ یہ ہو کہ ہندوستان میں چاندی کی گھنٹیاں حقیقت میں ہوتی ہیں جسے اکثر ہندو لوگ اپنے گھر کے مندروں اور پوجا کی تھالیوں میں رکھتے ہیں۔

اخترالایمان کی چھوٹی سی نظم

دور کی آواز

نقرئی گھنٹیاں سی بجتی ہیں
دھیمی آواز میرے کانوں میں
دور سے آ رہی ہو تم شاید
بھولے بسرے ہوئے زمانوں میں
اپنی میری شکایتیں شکوے
یاد کر کر کے ہنس رہی ہو کہیں
بشکریہ ریختہ
اچھی نظم ہے
 
Top