داغ حیاء و شرم سے چُپ چاپ کب وہ آ کے چلے - داغ دہلوی

کاشفی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 15, 2010

  1. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    غزل
    (داغ دہلوی رحمتہ اللہ علیہ)

    حیاء و شرم سے چُپ چاپ کب وہ آ کے چلے
    اگر چلے تو مجھے سِیدھیاں سُنا کے چلے

    وہ شاد شاد دمِ صبح مُسکرا کے چلے
    ستم تو یہ ہے کہ مجھ کو گلے لگا کے چلے

    یہ چال ہے کہ قیامت ہے اے بُتِ کافر
    خدا کرے کہ یوں ہی سامنے خدا کے چلے

    ہمارے دُودِ جگر میں ذرا نہیں طاقت
    یہ ابرِ تر ہے کہ گھوڑے پہ جو ہَوا کے چلے

    مرے بُجھائے بُجھے گی نہ یہ لگی دل کی
    بُجھاتے جاؤ کہاں آگ تم لگا کے چلے

    تمہیں ہو چُور بھری بزم میں اِدھر آؤ
    نظر چُرائے ہوئے دل کہاں چُرا کے چلے

    ہوئے ہیں شادی و غم اختیار میں اُن کے
    کبھی ہنسا کے چلے وہ کبھی رُلا کے چلے

    ہماری خاک کی ڈھیری تمہارے کوچے میں
    ذرا لگی تھی کہ جھونکے وہیں ہوا کے چلے

    وہ مہماں نہیں ایسے کہ جائیں خالی ہاتھ
    کہ جب چلے تو مرے دل کو لے لِوا کے چلے

    طریقِ عشق میں سُوجھا کسے نشیب و فراز
    وہ کیا چلے جو سہارے پہ رہنما کے چلے

    نہیں ہے دل کو مرے صرصر فنا سے خطر
    یہ کشتی ایسی ہے جو سامنے ہوا کے چلے

    بچائیں دل کو کہاں تک ہم ایسے تیروں سے
    نِگہ نِگہ کے چلے ہیں اَدا اَدا کے چلے

    دکھائی دی ہمیں راہِ عدم جو تیرہ و تار
    ہم اپنی مشعلِ داغِ جگر جلا کے چلے

    پڑی جو اُس کی نظر دل تڑپ کے یوں نکلا
    کہ جس طرح کوئی نخچیر تیر کھا کے چلے

    خبر نہیں کہ کوئی تاک میں بھی بیٹھا ہے
    یہ جھٹپٹے میں کہاں آپ منہ چھپا کے چلے

    اِدھر تو آؤ مجھے دو دو باتیں کرنی ہیں
    یہ کیا کہ دُور سے صورت فقط دکھا کے چلے

    وہ رحم کھائیں گے کیا داغ ہوش میں آؤ
    تم اُن کے آگے بُرا حال کیوں بنا کے چلے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. جیہ

    جیہ لائبریرین

    مراسلے:
    15,059
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Blah
    بہت خوب۔ شکریہ کاشفی بھائی اس خوبصورت غزل کے لئے۔ مقطع بہت پسند آیا

    وہ رحم کھائیں گے کیا داغ ہوش میں آؤ
    تم اُن کے آگے بُرا حال کیوں بنا کے چلے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    شکریہ جیہ بہنا! جیتی رہیں ہنستی مُسکراتی رہیں۔۔ خوش رہیں ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,826
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    واہ کیا خوبصورت غزل انتخاب کی ہے۔ بہت شکریہ کاشفی صاحب!
    اس شعر میں شاید "جھونکے" ہونا چاہیے۔
    ہماری خاک کی ڈھیری تمہارے کوچے میں
    ذرا لگی تھی کہ جھوکے وہیں ہوا کے چلے

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    شکریہ سخنور صاحب!
     

اس صفحے کی تشہیر