حالاتِ حاضرہ کی کہانی، شعروں کی زبانی

فرقان احمد نے 'محفل چائے خانہ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 8, 2020

  1. عبد الرحمن

    عبد الرحمن لائبریرین

    مراسلے:
    1,983
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    کپڑے بدل کر بال بنا کر کہاں چلے ہو کس کے لیے
    رات بہت کالی ہے ناصرؔ گھر میں رہو تو بہتر ہے
    ناصر کاظمی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • زبردست زبردست × 1
  2. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,835
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    خود کو بکھرتے دیکھتے ہیں کچھ کر نہیں پاتے ہیں
    پھر بھی لوگ خداؤں جیسی باتیں کرتے ہیں
    افتخار عارف
     
    آخری تدوین: ‏اپریل 3, 2020
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  3. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    18,028
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    آج کل لہور شہر کا یہ عالم ہے۔۔۔

    وہاں ہیں ہم جہاں بیدمؔ نہ ویرانہ نہ بستی ہے
    نہ پابندی نہ آزادی نہ ہشیاری نہ مستی ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 7
  4. عبد الرحمن

    عبد الرحمن لائبریرین

    مراسلے:
    1,983
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    تغیرت البلاد ومن علیھا
    و وجہ الارض مغیر قبیح
    تغیر کل ذی طعم و لون
    و قل بشاشۃ الوجہ الملیح

    منثور ترجمہ:

    شہر بدل گیا اور اس کے رہنے والے بھی بدل گئے۔
    اور زمین بد صورت اور گرد آلود ہو گئی۔
    ہر مزہ دار اور رنگ دار چیز بدل گئی۔
    اور خوب صورت چہرے کی بشاشت ماند پڑ گئی۔

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 2
  5. یونس

    یونس محفلین

    مراسلے:
    309
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    عجیب مرض ہے جس کی دوا ہے تنہائی
    بقائے شہر ہے اب شہر کے اجڑنے میں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 1
  6. ٹرومین

    ٹرومین محفلین

    مراسلے:
    439
    یونہی بے سبب نہ پھرا کرو کوئی شام گھر بھی رہا کرو
    وہ غزل کی سچی کتاب ہے اسے چپکے چپکے پڑھا کرو

    کوئی ہاتھ بھی نہ ملائے گا جو گلے ملوگے تپاک سے
    یہ نئے مزاج کا شہر ہے یہاں فاصلے سے ملا کرو
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  7. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    25,343
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    یہ دنیا ہے تو کیا اے ہم نفس تفسیرِ غم کیجے
    وہی آدابِ محفل بھی، وہی آدابِ زنداں بھی
    ٭
    عزیز حامد مدنی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  8. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    25,343
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بندشوں سے اور بھی ذوقِ رہائی بڑھ گیا
    اب قفس بھی ہم اسیروں کو پرِ پرواز ہے
    ٭
    اصغرؔ گونڈوی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  9. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,220
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    سینہ و دل حسرتوں سے چھا گیا
    بس ہجوم یاس ! جی گھبرا گیا !
    میر درد۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  10. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    14,427
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    پونی کی ہو گی یا چٹیا؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 4
  11. مریم افتخار

    مریم افتخار مدیر

    مراسلے:
    5,181
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    جُوڑا
     
    • پر مزاح پر مزاح × 4
  12. شمشاد خان

    شمشاد خان محفلین

    مراسلے:
    1,807
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    گھر پر رہنا ہی بہتر ہے، ویسے بھی لاک ڈاؤن ہے اور باہر پولیس ڈنڈے ہاتھ میں لیے استقبال کرتی ہے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 4
  13. عبد الرحمن

    عبد الرحمن لائبریرین

    مراسلے:
    1,983
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    بتاتے ہوئے شرم آ رہی ہے۔ :noxxx::)
    تصویر مل سکتی ہے؟ :p
     
    • پر مزاح پر مزاح × 4
  14. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    14,427
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    بے وجہ گھر سے نکلنے کی ضرورت کیا ہے
    موت سے آنکھ ملانے کی ضرورت کیا ہے
    سب کو معلوم ہے باہر کی ہوا ہے قاتل
    یونیہی قاتل سے الجھنے کی ضرورت کیا ہے
    دل کے بہلانے کو گھر میں ہی وجہ کافی ہے
    یونہی گلیوں میں بھٹکنے کی ضرورت کیا ہے
    ایک نعمت ہے زندگی، اسے سنبھال کے رکھ
    قبرستان کو سجانے کی ضرورت کیا ہے
    گلزار

    (آخری شعر کچھ ٹھیک نہیں لگ رہا)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  15. مریم افتخار

    مریم افتخار مدیر

    مراسلے:
    5,181
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    گلزار؟
     
    • دوستانہ دوستانہ × 2
  16. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    14,427
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    جی۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  17. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    14,427
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    خوددار میرے شہر کا فاقوں سے مر گیا
    راشن تو بٹ رہا تھا، وہ فوٹو سے ڈر گیا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  18. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    3,148
    سارے شعر بس ان کے لئے ہیں
    گھر میں جو دبک کے بیٹھے ہیں
    ابھی ابھی آیا ہے سر میں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  19. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    14,427
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    اپنے گھر کے , در و دیوار سے , ڈر لگتا ہے
    گھر کے باہر , تیرے گلزار سے , ڈر لگتا ھے

    فاصلے بن گئے , تکمیلِ محبت , کا سبّب
    وصلِ جانآں سے , رُخِ یار سے , ڈر لگتا ھے

    اُسکی یادوں سے ھی تسکینِ تصور کر لوں
    اب مجھے , محفلِ دلدار سے , ڈر لگتا ھے

    سارے تبدیل ہوئے , مہر و وفا کے دستور
    چاہنے والوں کے , اب پیار سے ڈر لگتا ھے

    خوشبٔووں, لذّتوں, رنگوں میں خوف پنہاں ھے
    برّگ سے , پھول سے, اشجار سے ڈر لگتا ھے

    تھی کسی دور علیلوں کی عیادت واجب
    لیکن اب , قربتِ بیمار سے , ڈر لگتا ھے

    جنکی آمد کو سمجھتے تھے خدا کی رحمت
    ایسے مہمانوں کے , آثار سے , ڈر لگتا ھے

    اب تو لگتا ھے, میرا ہاتھ بھی اپنا نہ رہا
    اس لئے , ہاتھ کی تلوار , سے ڈر لگتا ھے

    تن کےکپڑے بھی عدّو, پیر کے جُوتے دشمن
    سر پہ پہنے ہوئی , دَستار سے ڈر لگتا ھے

    جو گلے مل لے میری جان کا دشمن ٹھہرے
    اب , ہر اک , یارِ وفادار سے , ڈر لگتا ھے

    ایک نادِیدہ سی ہستِی نے جھنجوڑا ایسے
    خلق کو , گنبد و مِینار , سے ڈر لگتا ھے

    بن کے یاجوج , ماجوج نمودار ہوا , چاروں اور
    اِس کی اسی, رفتار سے, ڈر لگتا ھے

    عین ممکن ھے یہاں سب ہوں کورونا آلود
    شہر کے. کُوچہ و باز٘ار سے ڈر لگتا ھے

    خوف آتا ھے ٹی وی چینل دیکھ کر
    ہر رسالے سے , ہر اخبار سے , ڈر لگتا ھے

    اب تو اپنوں سے مصافحہ بھی پُرخطر ھے جناب
    یوں نہیں ھےکہ فقَط اغیّار سے, ڈر لگتا ھے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 2
  20. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    14,427
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    اجنبی سی شہر کی آب و ہوا ہے، تخلیہ
    زرد پتوں کا ہوا کو مشورہ ہے، تخلیہ

    پہلے ہی اس شہر میں افسردگی کچھ کم نہ تھی
    اس نے بھی اب گھر سے باہر لکھ دیا، تخلیہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2

اس صفحے کی تشہیر