بہار

  1. عرفان سعید

    جاپان کا موسمِ بہار

    کچھ عرصہ پہلے جاپان کے موسمِ خزاں کی کچھ تصاویر شریکِ محفل کرنے کے لیے ایک لڑی شروع کی تھی۔ جاپان کا موسمِ خزاں اب اگرچہ بہار کا موسم گزر چکا ہے اور گرمیاں اپنا زور دکھا رہی ہیں، پھر بھی ارادہ ہے کہ جاپان میں گزارے ہوئے موسمِ بہار کی چند یادیں تصاویر کی شکل میں پوسٹ کی جائیں۔
  2. طارق شاہ

    کلیم عاجز ::::::یہ سمندر ہے، کنارے ہی کنارے جاؤ!::::: . Kalim Ahmed Ajiz

    غزل کلِیم عاجؔز یہ سمندر ہے، کنارے ہی کنارے جاؤ! عِشق ہر شخص کے بس کا نہیں پیارے، جاؤ یُوں تو مقتل میں تماشائی بہت آتے ہیں آؤ اُس وقت ،کہ جِس وقت پُکارے جاؤ دِل کی بازی لگے، پھر جان کی بازی لگ جائے عِشق میں ہار کے بیٹھو نہیں ، ہارے جاؤ کام بن جائے، اگر زُلفِ جنُوں بن جائے! اِس لیے...
  3. طارق شاہ

    کلیم عاجز ::::::بڑی طَلب تھی ، بڑا اِنتظار ،دیکھو تو! ::::: . Kalim Ahmed Ajiz

    غزل کلِیم عاجِزؔ بڑی طَلب تھی بڑا اِنتظار، دیکھو تو بہار لائی ہے کیسی بہار، دیکھو تو یہ کیا ہُوا، کہ سلامت نہیں کوئی دامن چَمن میں پُھول کِھلے ہیں کہ خار، دیکھو تو لہُو دِلوں کا چراغوں میں کل بھی جلتا تھا اور آج بھی، ہے وہی کاروبار دیکھو تو یہاں، ہر اِک رَسَن و دار ہی دِکھاتا ہے عجیب شہر،...
  4. کاشفی

    میرے وطن یہ عقیدتیں اور پیار تجھ پہ نثار کر دوں

    میرے وطن یہ عقیدتیں اور پیار تجھ پہ نثار کر دوں محبتوں کے یہ سلسلے بےشمار تجھ پہ نثار کر دوں میرے وطن میرے بس میں ہو تو تیری حفاظت کروں میں ایسے خزاں سے تجھ کو بچا کے رکهوں بہار تجھ پہ نثار کر دوں تیری محبت میں موت آئے تو اس سے بڑھ کر نہیں ہے خواہش یہ ایک جان کیا، ہزار ہوں تو ہزار تجھ پہ نثار...
  5. طارق شاہ

    کلیم عاجز ::::::زخموں کے نئے پھول کھلانے کے لئے آ ::::: . Kalim Ahmed Ajiz

    غزل زخموں کے نئے پھول کِھلانے کے لئے آ پھر موسمِ گُل یاد دلانے کے لئے آ مستی لئے آنکھوں میں بکھیرے ہوئے زُلفیں آ، پھر مجھے دِیوانہ بنانے کے لئے آ اب لُطف اِسی میں ہے، مزا ہے تو اِسی میں! آ اے مِرے محبُوب! ستانے کے لئے آ آ، رکھ دَہَنِ زخم پہ، پِھر اُنگلیاں اپنی دِل بانسری تیری ہے،...
  6. کاشفی

    بہاروں پھول برساؤ میرا محبوب آیا ہے

    بہاروں پھول برساؤ میرا محبوب آیا ہے
  7. جاسمن

    موسموں اور مہینوں کے نام

    ایسے اشعار جن میں موسموں اور مہینوں کے نام آئیں۔
  8. محمد بلال اعظم

    جب عمر بھر نہ آئیں نبھانی محبتیں۔۔۔ محمد بلال اعظم

    علالت کے دوران لکھی گئی غزل۔۔۔ شاید کسی قابل ہو جب عمر بھر نہ آئیں نبھانی محبتیں پھر کیا کسی پہ ہم نے لُٹانی محبتیں اب شب بخیر زندگی، پھر رات ہو گئی اور یاد آ رہی ہیں پرانی محبتیں اب نفرتوں کی آگ میں جلنے لگا ہے دل اب کیا کسی سے ہم نے بڑھانی محبتیں تازہ رفاقتوں سے اب اکتا گیا ہوں میں پھر...
  9. نوید رزاق بٹ

    بہار آئی تھی ایک پل کو

    بہار آئی تھی ایک پل کو ابھی تو کہنے تھے راز دل کے ابھی تو خاموش تھے فسانے ابھی تو کھُلنے کو مضطرب تھے حساب سارے نئے پرانے ابھی تو غنچے بھی نہ کھِلے تھے ابھی تو بلبل بھی بے خبر تھا ابھی تو سُوکھے پڑے تھے پتےّ ابھی تو سوزِ فراق تر تھا تم آئے اور یوں چلے گئے بس؟ چلو یونہی پھر تمھارے آنے کی اِس...
  10. محمد اسامہ سَرسَری

    الفت ، خلوص ، پیار ہے موسم بہار کا

    الفت ، خلوص ، پیار ہے موسم بہار کا اک یادگارِ یار ہے موسم بہار کا عاشق کا اک خمار ہے موسم بہار کا معشوق پر نثار ہے موسم بہار کا بادل ہیں آب دیدہ تو دلسوز برق ہے تصویرِ اضطرار ہے موسم بہار کا برسات سجدہ ریزِ سرورِ حبیب ہے شاید کہ خوش ہے یار ، ہے موسم بہار کا زیور نما دریچہ ہے ، خانہ ہے زرنما...
  11. Tahir Shahzad

    ذرا ذرا سا نہیں بے حساب تم سا ہے۔۔۔

    ----------- غزل ------------- ذرا ذرا سا نہیں بے حساب تم سا ہے کھلا ہوا یہ چمن میں گلاب تم سا ہے تمام رات جسے دیکھتا رہا ہوں میں عجیب بات ہے وہ ماہتاب تم سا ہے بہار آئی تو لے آئی یاد پھر سے تری سنو بہار کا سارا شباب تم سا ہے یقیں ہے تم ہی بستے ہو آس پاس مرے یہ میری جاگتی آنکھوں میں خواب تم...
  12. کاشفی

    فروغِ حسن عروجِ شباب دیکھے کون - عشرت گیاوی

    غزل (سید احمد علی شمیم عشرت گیاوی) فروغِ حسن عروجِ شباب دیکھے کون یہ دوپہر کا چڑھا آفتاب دیکھے کون فراقِ یار کے جینے سے موت اچھی ہے یہ روز روز کا رنج و عذاب دیکھے کون اٹھایا میں نے تو عیش و نشاط روز وصال شب فراق کا رنج و عذاب دیکھے کون انہیں نظر ہی نہیں حال زار پر میرے یہ...
  13. کاشفی

    حمدِ غفور و رحیم

    حمدِ غفور و رحیم سبحان اللہ وبحمدہ سبحان اللہ العظیم نہیں ہے کوئی بھی ہم کو ترے سوا معلوم ہمیں تو صرف ہے اک تو ہی اے خدا معلوم خدا کی ذات اگرچہ نہیں ہے نامعلوم خدا ہے کیسا، کہاں ہے خدا، خدا معلوم ہے کائنات کی رگ رگ سے صرف تو واقف ہر ایک ذرہ کا تجھ ہی کو ہے پتا معلوم خدا کے ذکر سے...
  14. تعبیر

    بہار

Top