1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

پاکستان کا آخری ٹرپ

زیک نے 'اراکین کے سفرنامے' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 22, 2019

  1. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    23,926
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بہت عمدہ اور لاجواب۔
    چونکہ تمام تصاویر ہی بہت خوبصورت تھی تو شاید چند تصاویر کے علاوہ سب ہی زبردست ریٹنگ کی مستحق ٹھہریں۔
    البتہ ایسی تصاویر بھی ہیں، جو باقی تصاویر کی نسبت زیادہ تعریف کی مستحق ہیں۔ وقت ملا تو ان کا اقتباس لے لوں گا۔

    جو مسائل آپ نے بتائے، خاص طور پر صفائی کے حوالے سے، وہ پورے پاکستان کے عمومی مسائل ہیں، جن کی ذمہ داری عوام سے لے کر انتظامیہ تک سب پر عائد ہوتی ہے۔ کیونکہ کوئی بھی بہتری کے لیے اپنا کردار ادا کرنے کے لیے تیار نظر نہیں آتا۔ گنے چنے افراد رضاکارانہ بنیادوں پر کچھ کر بھی رہے ہوں تو قابلِ تعریف تو ضرور ہے مگر زیادہ سود مند نہیں۔

    صحت کی مناسب سہولیات کا فقدان بھی پورے ملک کا المیہ ہے۔ اور اس کی ذمہ داری حکومتوں پر عائد ہوتی ہے۔ اسی سے اندازہ لگا لیں کہ اسلام آباد جو کہ وفاقی دارلحکومت ہے۔ اس میں بھی ایک ہی جنرل سرکاری ہسپتال ہے۔ اور اسلام آباد سے مراد روات سے لے کر ٹیکسلا تک کا اسلام آباد ہے، صرف سیکٹرز نہیں۔ تو پھر دور دراز کے علاقہ جات کا تو پوچھیے ہی مت۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  2. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,550
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    زبردست روداد سفر لکھی زیک بھائی۔ یقین کریں بہت مزہ آیا۔ پڑھتے ہوئے تصور میں میں بھی آپ کے ساتھ ساتھ ہوں اور وہی کچھ دیکھ رہا ہوں۔ہر تصویر باکمال اور لاجواب ایک سے ایک بڑھ کر ہے۔آپ کا فن فوٹو گرافری داد تحسین کے قابل ہے ۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,267
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    بہت شکریہ لاریب
     
    • دوستانہ دوستانہ × 3
  4. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,267
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    بہت شکریہ تابش
     
    • دوستانہ دوستانہ × 2
  5. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,267
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    بہت شکریہ عدنان
     
    • دوستانہ دوستانہ × 3
  6. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,267
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    سوال مشکل ہے لیکن کوشش کرتا ہوں۔

    تنزانیہ کی سفاری کا مقابلہ مشکل ہی نہیں ناممکن ہے کہ وہاں ہر جگہ ہر قسم کے جانور پھر رہے تھے۔ شیر اتنے دیکھے کہ گنتی ہی بھول گئی۔ لہذا اس سے تو نیچے ہی ہو گا پاکستان کا سفر۔

    نیوزی لینڈ کی خوبصورتی اور ایڈونچر اپنی مثال آپ تھے۔ وہ بھی پاکستان سے بہتر لگا۔

    پیرو کی خوبصورتی کے متعلق سن رکھا تھا لیکن وہاں جا کر بالکل دنگ رہ گئے۔ اینڈیز کے پہاڑوں کی اپنی خوبصورتی ہے لیکن اتنے اونچے پہاڑوں پر انہوں نے جیسے قلعے اور عمارتیں بنائیں اس کی مثال گلگت بلتستان میں نہیں ملتی۔ گلگت بلتستان میں نہ وہ سکیل ہے نہ بوجوہ زیادہ پرانے کھنڈرات (زلزلے بھی شاید اس کی وجہ ہیں) اور زیادہ تر وہ وادیوں کا علاقہ ہے جبکہ Inca پہاڑوں پر انتہائی بڑے پتھروں سے تعمیر کرتے تھے۔ پھر پیرو کا ایمزون جنگل بھی بہترین ہے۔

    اگر پاکستان اور کسی اور سفر کا مقابلہ کیا جا سکتا ہے تو وہ ہمارا آلپس (جرمنی، آسٹریا، سوئٹزرلینڈ) کا سفر ہے۔ خوبصورتی کے لحاظ سے دونوں بہترین ہیں۔ سڑکیں، ٹرینیں وغیرہ یقیناً یورپ میں بہت بہتر ہیں۔ لیکن جہاں پاکستان نے مار کھائی وہ وہاں کی گندگی ہے۔ آلپس انتہائی صاف ستھرا علاقہ ہے جبکہ پاکستان میں ہر طرف کوڑا۔

    ایک اور سفر جو پاکستان کے سفر کے مقابلے کا کہا جا سکتا ہے وہ الاسکا، واشنگٹن اور قرب و جوار کا سفر تھا۔ پاکستان قدرتی خوبصورتی میں اس سے آگے تھا لیکن گندگی یہاں بھی کھٹکتی ہے۔

    حقیقت یہ ہے کہ پاکستان کے شمالی علاقے بہت خوبصورت ہیں۔ facilities کی کمی ایک چھوٹا مسئلہ ہے لیکن جہاں جہاں سیاح جا رہے ہیں کوڑے کے ڈھیر اکٹھے ہو رہے ہیں اور قدرت کو تباہ کر رہے ہیں۔ درخت بھی کٹ رہے ہیں۔ یقینی طور پر وادی کاغان میں آج 25 سال پہلے کے مقابلے میں کم درختُ ہیں۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 4
    • زبردست زبردست × 2
  7. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,267
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    کوڑا ہر جگہ ہوتا ہے۔ یہاں نہ صرف سرکاری ملازمین باقاعدگی سے صفائی کرتے ہیں بلکہ رضاکار بھی یہ کام کرتے رہتے ہیں۔ ہمارے شہر میں کوئی دو کلومیٹر کی سڑک کے دونوں طرف کی صفائی کی ذمہ داری ہمارے سائیکلنگ کلب نے لی ہوئی ہے۔ ہر تین ماہ بعد ہم صفائی کرتے ہیں۔

    پاکستان کا مسئلہ کلچر اور سکیل کا ہے۔ ہر شخص کوڑا پھینک رہا ہے۔ اس وجہ سے اتنا زیادہ کوڑا اکٹھا ہو جاتا ہے کہ صفائی کرنا بھی مشکل ہو جاتا ہے۔ پھر کوڑے کے ڈھیر دیکھ کر جو لوگ عام طور سے کوڑا پھینکتے شرمندہ ہوں وہ بھی دلیر ہو جاتے ہیں اور مسئلہ اور بڑھ جاتا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • متفق متفق × 2
    • زبردست زبردست × 1
  8. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    23,926
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    ابھی ابھی چیف کمیشنر اسلام آباد کی جانب سے یہ ویڈیو اپلوڈ کی گئی ہے۔ اب دیکھتے ہیں کہ کس حد تک عملدرآمد ہوتا ہے اسلام آباد میں۔

     
    • زبردست زبردست × 2
  9. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,784
    یورپی آلپس اور پاکستانی شمالی علاقہ جات کی خوبصورتی کا موازنہ کریں تو کسے زیادہ نمبر دیں گے؟ (کوڑے کو فی الحال ذہن سے نکال دیں)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,784
    کچھ روز قبل شاپروں کے استعمال پر اسلام آباد کی مشہور سیور فوڈز چھاپے کے دوران سرکار نے مالکان سے ٹھکائی بھی کھائی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    23,926
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    اسلام آباد میں اب پلاسٹک شاپنگ بیگز پر پابندی ہے۔ دوکانوں پر کاغذ اور کپڑوں کے بیگ ہیں۔ کپڑے والے قیمتاً دے رہے ہیں۔ اور لوگ خود گھروں سے بھی لانا شروع ہو گئے ہیں۔ دودھ دہی کے لیے گھر سے برتن لے کر جاتے ہیں۔
     
    • متفق متفق × 2
    • زبردست زبردست × 1
  12. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    23,926
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    سیور کو بھاری جرمانہ بھی ہوا ہے اور سیل بھی ہوا ہے۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  13. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,784
    90 کی دہائی میں مجھے یاد ہے میں خود گھر سے کپڑے کے تھیلے بھر بھر کر اسلام آباد کے سنڈے بازار سے سبزی لایا کرتا تھا۔ الحمدللہ پرانا پاکستان واپس آ رہا ہے۔
     
  14. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,267
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    24 سال عمر اور نوے کی دہائی میں اتوار بازار سے سودا لاتے تھے۔ واہ!
     
    • پر مزاح پر مزاح × 7
  15. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,528
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    دسمبر 1999 کا ذکر ہوگا۔بڑے بھائی یا والد صاحب کے ساتھ بازار جاتے رہے ہوں گے۔
     
    • متفق متفق × 1
  16. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,784
    والد صاحب کے ساتھ ہی جاتا تھا۔
     
  17. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,267
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    اس بات سے تو واقف ہوں لیکن مختلف رپورٹس اور مشاہدے سے اندازہ ہوا کہ اگرچہ کوہ پیماؤں کی سپورٹ کا کام پاکستان میں بہت عرصے سے ہو رہا ہے لیکن اس سے مناسب سبق نہیں سیکھے گئے۔ مثلاً یہ آرٹیکل:

    Bad Times In The Baltoro - Austere Risk Management

    دنیا میں ایسے اور ترقی پذیر ممالک بھی ہیں جہاں سیاحوں کو ایمرجنسی میں مدد کا کوئی باقاعدہ انتظام نہیں۔ ایسی صورت میں آپ ٹریول انشورنس لیتے ہیں۔ وہ بھی مقامی مدد ہر ہی انحصار کرتی ہے لیکن کچھ حد تک معاملات کو بہتر ہینڈل کر سکتی ہے اور پھر آپ کو واپس بھی پہنچا سکتی ہے۔ یہاں پاکستان سفر پر مختلف ممالک کی وارننگز کی وجہ سے زیادہ تر انشورنس ملتی ہی نہیں ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  18. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,167
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    آپ ایک امریکن کے منہ سے پاکستان کے بارے میں جو بات نکلوانا چاہ رہے ہیں وہ قریب قریب ناممکن ہے۔ :)

    آپ کو یہ بھی پوچھنا چاہیئے کہ تھا کہ رہائش، طعام، سواری سب کچھ 40 ڈالر یومیہ فی کس اور کس ملک میں ممکن تھا!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  19. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,784
    میں تو صرف فطرتی خوبصورتی کا تقابل جاننا چاہ رہا تھا۔ زیک کی مرضی ہے جیسا مرضی جواب دیں یا اگنور کر دیں سوال۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,167
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    کوڑے کا مسئلہ واقعی ایک بڑا مسئلہ ہے نہ صرف پاکستان میں بلکہ اور ممالک میں بھی۔ ابھی کچھ عرصہ قبل انڈین آرمی کے ایک کوہ پیما دستے نے نیپالیوں کے ساتھ مل کر ماؤنٹ ایورسٹ سے 11 ہزار کلو کچرا اٹھایا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1

اس صفحے کی تشہیر