نسخ کی حمایت میں۔۔۔

طالب سحر نے 'ادبیات و لسانیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 6, 2016

  1. طالب سحر

    طالب سحر محفلین

    مراسلے:
    380
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    مجھے معلوم ہے کہ محفلین کی اکثریت اردو متن کو Perso-Arabic رسم الخط کے نستعلیق اسلوب میں لکھتی اور پڑھتی ہے، اور شاید زیک کے علاوہ کوئی بھی نسخ کا حمایتی نہیں ہے- مجھے بھی نستعلیق اچھا لگتا ہے، لیکن بعض اوقات نسخ میں لکھا ہوا متن زیادہ آسانی سے پڑھا جاسکتا ہے- گو کہ نستعلیق کا عادی ہونے کی وجہ سے مجھے نسخ کے بیشتر ٹائپ فیسز بہت بھدّے لگتے ہیں، لیکن کرلپ کا نفیس پاکستانی ویب نسخ فونٹ اور بی بی سی اردو پر استعمال ہونے والا اردو نسخ ایشیا ٹائپ فونٹ تو بھلا لگتا ہے- خیر یہ تو ہوئی میری ذاتی رائے-

    اس سلسلے میں کمال ابدالی صاحب کا ایک مضمون بعنوان "اردو کے رسم الخط کا مسئلہ" نستعلیق کے بعض نظری اور عملی مسائل کی جانب توجہ دلاتا ہے اور نسخ کی حمایت کرتا ہے- یہ مضمون محفلین کی تنقید کا منتظر ہے- یہ پہلی دفعہ The Annual of Urdu Studies کے شمارہ 28 (سن 2013) میں شایع ہوا تھا، اور یہاں سے اتارا جاسکتا ہے- جو لوگ اسے کاغذ پر چھپا ہوا پڑھنا چاہتے ہیں، وہ "آج" کا شمارہ 83 (جون 2014) دیکھ سکتے ہیں-

    تدوین: ڈاکٹر کمال ابدالی صاحب کے مضمون کا تازہ نسخہ!
     
    مدیر کی آخری تدوین: ‏جولائی 6, 2016
    • معلوماتی معلوماتی × 5
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  2. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
  3. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,826
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    فنی مسائل کے بارے میں تو رسم الخط یا فونٹس کے ماہرین ہی اپنی رائے دیں گے۔ لیکن چند ایک گزارشات میری:

    -مضمون نگار نے مضمون کے آغاز ہی میں دیوناگری اور لاطینی (رومن) خط کی حمایت کر کے اپنا سارا موقف واضح کر دیا کہ وہ مضمون میں کیا سمت اختیار کریں گے۔ عرض یہ ہے کہ اردو کے عربی رسم الخط کی تبدیلی نہ ہمیں گاندھی جی کے دور میں منظور تھی اور نہ ہی جنرل ایوب کے زمانے میں اس کو لاطینی میں کرنے کی کوشش، اور نہ ہی آئندہ ہوگی۔ عربی رسم الخط، اردو کا جزو لاینفک ہے، اور یقینا ایسا ہی رہے گا۔
    -کسی بھی زبان میں کچھ ایسے مسائل ضرور ہوتے ہیں کہ جو اس زبان کا جزو بن چکے ہوتے ہیں اور لوگوں کی لاکھ کوششوں کے باوجود اس زبان کو استعمال کرنے والے ان مسائل کو قبول کرتے ہیں۔ مثال کے طور پر، امریکن لاکھ کوشش کر لیں، انگلش کے اولین استعمال کرنے والے یعنی برطانیہ کے گورے لفظ کلر میں U کو ترک کرنے پر آمادہ نہیں ہوئے اور نہ ہی ہونگے۔ لاکھ سر پیٹو کہ بچوں کو یاد کرنے میں آسانی ہوگی، اس کی افادیت بہت ہے لیکن برطانوی گورے تیار نہیں، چاہے امریکن اپنی انگریزی کو امریکن کہنا شروع کر دیں۔ سو اردو والے کیوں خ، ض، ظ، ز وغیرہ کو چھوڑیں۔ اگر اردو میں حروفِ علت کے مسائل ہیں تو ایسے مسائل ہر زبان میں ہوتے ہیں، کس زبان میں نہیں ہیں؟ اس کی وجہ سے صدیوں سے رائج رسم الخط ہی بدل دیں؟
    -نستعلیق، اتنا خوبصورت فانٹ ہے کہ لفظ نستعلیق ایک صفت بن چکا ہے۔ نستعلیق فانٹ کہنے میں شاید وہ لطف نہ آئے جتنا یہ کہنے میں کہ "وہ ایک نستعلیق آدمی ہے"۔ فقط ایک لفظ موصوف کی ساری خوبیوں کو بکمال و تمام پڑھنے سننے والوں کی ذہن میں اجاگر کر دیتا ہے۔

    ذاتی طور پر مجھے نسخ پڑھنے میں کوئی مسئلہ نہیں ہے، پڑھنے میں آسان ہے لیکن بعض اوقات بد نما بھی ہو جاتا ہے۔ لیکن نسخ نستعلیق کی بحث کی آڑ لے کر، اردو کے رسم الخط کو تبدیل کرنے کی ہر کوشش ناقابل قبول ہے۔

    اور آخر میں محض آپ کی اطلاع کے لیے عرض ہے کہ زیک کے علاوہ ایک اور دوست محترم حسان خان صاحب نسخ کے بہت بڑے حامی ہیں۔ اور زیک اور حسان میں شاید یہی ایک قدر مشترک ہے۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 12
    • متفق متفق × 5
    • زبردست زبردست × 4
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  4. فلک شیر

    فلک شیر محفلین

    مراسلے:
    7,460
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    حسان خان کا بلاگ تک نسخ میں ہے... اس قدر نسخ پرور واقع ہوئے ہیں :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3
  5. فہیم

    فہیم لائبریرین

    مراسلے:
    33,426
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Sleepy
    بات صرف پڑھنے میں آسانی کی ہو تو "تاہوما" کا کوئی مقابل نہیں دور تک بلکہ بہت دور تک :)
     
    • متفق متفق × 1
  6. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,826
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    ذرا بی بی سی ربط پر کلک کریں، نسخ عمدہ ہے لیکن "موزوں ترین" کو "موضون ترین" لکھنا متنفر کر گیا :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  7. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    26,156
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    میری رائے میں نسخ اور نستعلیق کی بحث کو عربی اور دیگر رسم الخط کی بحث سے الگ رکھنا چاہئے۔

    مضمون میں ایک نکتہ یہ اٹھایا گیا ہے کہ الفاظ کی ادائیگی واضح نہیں ہوتی اور ے مجہول کی مثال دی ہے۔
    اس طرح کی تو کئی مثالیں انگریزی اور دیگر زبانوں سے دی جا سکتی ہیں۔
    مثلاً
    mint اور mind میں i کی ادائیگی مختلف ہے، کیا اس طرح کے "مسائل" کی بنا پر انگریزی رسم الخط کو تبدیل کیا جا سکتاہے؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • متفق متفق × 3
  8. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    11,287
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    بھئی ہم جیسے جہلاء کو تو تعلیق، فارسی میں نسخ ،عربی میں اور نستعلیق اردو میں اچھا لگتا ہے ۔ باقی اہل علم جانیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • متفق متفق × 3
  9. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    11,287
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    میرے خیال میں ٹاہوما بڑے فونٹ میں بہت بھدا ہو جاتا ہے ۔چھوٹے فونٹ میں البتہ خوش آئندلگتا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  10. فہیم

    فہیم لائبریرین

    مراسلے:
    33,426
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Sleepy
    میانہ روی ، زیادتی سے بہتر جو ہے:)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  11. عباس اعوان

    عباس اعوان محفلین

    مراسلے:
    2,460
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Cool
    دیو ناگری خط تو اردو اہلِ زبان کو کبھی بھی قبول نہیں ہو گا کیوں کہ پھر اردو ختم ہو جائے گی اور صرف ہندی رہ جائے گی۔یہی صورتحال رومن میں تبدیل کرنے کی ہے کہ زبان ثقافت کا حصہ ہوتی ہے، اور ہم ثقافت کے اس اہم جزو کے ختم کرنے کے حق میں نہیں ہیں۔
    میری ذاتی رائے تو یہ ہے کہ میں رومن اردو پڑھنا تو دور کی بات، نسخ میں لکھی اردو بھی نہیں پڑھتا، اردو نستعلیق تھی اور نستعلیق ہی رہے گی۔ اور یہ بات سمجھنی چاہیے کہ رسم الخط اور فونٹ دو الگ الگ چیزیں ہیں، کیسا ہی خوبصورت نسخ فونٹ کیوں نہ بنا دیں، ہم تو نستعلیق کے دیوانے رہیں گے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • متفق متفق × 2
  12. عباس اعوان

    عباس اعوان محفلین

    مراسلے:
    2,460
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Cool
    فونٹ بنانے کی دشواریوں کی آڑ لے کر رسم الخط تبدیل کرنے کی کوشش مت کریں۔
     
  13. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,909
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    کرنا چاہیئے۔ کئی یورپین زبانوں میں ایسے ریفارم کئے گئے ہیں۔
     
    • متفق متفق × 2
  14. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    26,156
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    ریفارم کرنا اور رسم الخط ہی بدل لینا دو مختلف چیزیں ہیں۔
    یہ ٹھیک ہے کہ زبانوں کے رسم الخط بھی تبدیل ہوئے ہیں۔ اور کم از کم مجھے یہاں ایسی کوئی ضرورت محسوس نہیں ہوتی۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • متفق متفق × 2
  15. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,826
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    آپ کی بات درست ہے لیکن کیا کریں کہ مضمون نگار نے اپنی بات ہی یہاں سے شروع کی ہے کہ اردو کو دیوناگری کر دو یا کاش ایسا کر دیتے، دیوناگری نہ سہی کم از کم رومن تو کر دیتے۔ بین السطور، وہ یہ حسرت دبا کر بیٹھے ہوئے ہیں :)
     
    آخری تدوین: ‏مئی 6, 2016
    • متفق متفق × 4
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  16. طالب سحر

    طالب سحر محفلین

    مراسلے:
    380
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    آپ کی طرح میں بھی اردو کے فارسی-عربی رسم الخط کا شیدائی ہوں- یہ درست ہے کہ مضمون نگار نے مضمون کے آغاز میں دیوناگری اور لاطینی (رومن) کا ذکر کیا ہے- 13 صفحوں کے اس مضمون میں دو ڈھائی صفحوں کے بعد بات نستعلیق کے مسائل کی گئی ہے اور نسخ کی خوبیاں بیان کی گئی ہیں۔ بنیادی طور پر اس مضمون کا فوکس رسم الخط کی تبدیلی کے بجائے اس کے اسلوب پر ہے- میری ذاتی رائے میں بات نستعلیق بمقابلہ نسخ کی ہونی چاہیئے- کم از کم میرے مراسلے کا تو یہی مقصد ہے-
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  17. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,826
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    مطلب آپ بھی نستعلیق آدمی ہیں :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 4
  18. طالب سحر

    طالب سحر محفلین

    مراسلے:
    380
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    آپ کی بات تو اچھی ہے- لیکن جیسا کہ آپ نے مضمون میں پڑھا ہو گا، "فونٹ بنانے کی دشواریوں" کا مضمون میں ذکر نہیں ہے-
     
  19. طالب سحر

    طالب سحر محفلین

    مراسلے:
    380
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    من آنم کہ من دانم
    :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  20. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,909
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    نسخ اپنایا ہوتا تو پرنٹنگ اور کمپیوٹنگ کے مسائل سے جان چھوٹنے کے نتیجے میں آج کافی آگے ہوتے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1

اس صفحے کی تشہیر