میں ڈھونڈتا ہوں جسے آج بھی ہوا کی طرح - کمار پاشی

کاشفی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 20, 2016

  1. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    غزل
    (کمار پاشی)
    میں ڈھونڈتا ہوں جسے آج بھی ہوا کی طرح
    وہ کھوگیا ہے خلا میں مری صدا کی طرح

    نہ پوچھ مجھ سے مرا قصہء زوالِ جنوں
    میں پانیوں پہ برستا رہا گھٹا کی طرح

    تمام عمر رہا ہوں میں جسم میں محصور
    تمام عمر کٹی ہے مری سزا کی طرح

    اُتار دے کوئی مجھ پر سے یہ بدن کی ردا
    کہ مار ڈالے مجھے بھی مرے خدا کی طرح

    نِکھرتا جائے یونہی رنگِ شام اے پاشی
    بکھرتا جاؤں یوں ہی میں گلِ نوا کی طرح
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • زبردست زبردست × 1
  2. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    22,251
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت خوب

    انتخاب کی داد قبول کیجے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. گلزار خان

    گلزار خان محفلین

    مراسلے:
    806
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بہت خوب عمدہ نظم
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. سعیدالرحمن سعید

    سعیدالرحمن سعید معطل

    مراسلے:
    330
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    کیا خوب غزل ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    بہت شکریہ!
     
  6. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    بہت شکریہ!
     
  7. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    بہت شکریہ!
     
  8. شیخ محمد نواز

    شیخ محمد نواز محفلین

    مراسلے:
    308
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    میں ڈھونڈتا ہوں جسے آج بھی ہوا کی طرح
    وہ کھوگیا ہے خلا میں مری صدا کی طرح

    واہ واہ واہ ۔ ۔ ۔جتنی داد دی جائے کم ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,261
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine

اس صفحے کی تشہیر