جمال احسانی غزل ۔ کسی بھی دشت، کسی بھی نگر چلا جاتا ۔ جمال احسانی

محمداحمد نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 9, 2009

  1. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,907
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    غزل

    کسی بھی دشت، کسی بھی نگر چلا جاتا
    میں اپنے ساتھ ہی رہتا جدھر چلا جاتا

    وہ جس منڈیر پہ چھوڑ آیا اپنی آنکھیں میں
    چراغ ہوتا تو لو بھول کر چلا جاتا

    اگر میں کھڑکیا ں، دروازے بند کر لیتا
    تو گھر کا بھید سرِ رہ گزر چلا جاتا

    مرا مکاں مری غفلت سے بچ گیا ورنہ
    کوئی چرا کے مرے بام و در چلا جاتا

    تھکن بہت تھی مگر سایہء شجر میں جمال
    میں بیٹھتا تو مرا ہم سفر چلا جاتا

    جمال احسانی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 8
  2. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,552
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    واہ واہ واہ، لا جواب غزل ہے، کیا خوبصورت اشعار ہیں۔

    بہت شکریہ احمد صاحب شیئر کرنے کیلیے!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,907
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    انتخاب کی پسندیدگی کا شکریہ وارث بھائی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  4. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce


    احمد میاں واہ واہ ۔ بہت خوب ، جمال صاحب کا کلام ِ دلپزیر پیش کرنے کو شکریہ
    ایک جگہ املا کی غلطی ہے اسے دیکھ لیجے گا ’’ رہ ‘‘ تو نہیں ہے وہاں جہاں سرخ نشان لگا یا گیا ہے۔؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,907
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت شکریہ آپ کی توجہ کا اور "ٹائپو" کو "ہائی لائٹ" کرنے کا۔

    انتخاب کی پسندیدگی کا شکریہ!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  6. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    آپ کا بھی شکریہ جناب
    "ٹائپو" کو "ہائی لائٹ" کو ہائی لائٹ کرنے کا ۔:)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,907
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    "پھر بھی خوش رہیے۔"

    بقول "انور جاوید ہاشمی صاحب"
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. امیداورمحبت

    امیداورمحبت محفلین

    مراسلے:
    3,058
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    کسی بھی دشت، کسی بھی نگر چلا جاتا
    میں اپنے ساتھ ہی رہتا جدھر چلا جاتا

    بہت خوب ۔ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. آصف شفیع

    آصف شفیع محفلین

    مراسلے:
    501
    بہت خوبصورت غزل ہے جمال احسانی کی۔ مجھے تو یہ غزل عرصہ دراز سے زبانی یاد ہے۔ ایک ایک شعر دل موہ لینے والا ہے۔ پوسٹ کرنے کا شکریہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,907
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    umeedaurmohabbat اور آصف شفیع صاحب،

    انتخاب کی پسندیدگی کا بہت شکریہ!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. ش زاد

    ش زاد محفلین

    مراسلے:
    491
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    احمد بھائی بہت بہت شکریہ آپ نے ناچیز کی فرمائش پر یہ غزل پیش کی

    اور یہ شعر جو میں نے کہیں اس طرح پڑھا تھا


    ہزار ہا شجرِسائیہ دار راہ میں تھے
    میں بیٹھتا تو مرا ہمسفر چلا جاتا

    کی بھی تصحیح ہو گئی
    آپ کا ایک بار پھر شکریہ احمد بھائی
     
  12. سارہ خان

    سارہ خان محفلین

    مراسلے:
    15,819
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    بہت خوب ۔۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,907
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    ش زاد بھائی،

    شکریہ تو ہمیں آپ کا کرنا چاہیے کے آپ کے توسط سے ہم اس دلفریب غزل سے متعارف ہوئے ہیں۔

    خوش رہیے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,907
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت شکریہ ۔۔۔!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. راجہ صاحب

    راجہ صاحب محفلین

    مراسلے:
    6,542
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    کسی بھی دشت، کسی بھی نگر چلا جاتا
    میں اپنے ساتھ ہی رہتا جدھر چلا جاتا

    وہ جس منڈیر پہ چھوڑ آیا اپنی آنکھیں میں
    چراغ ہوتا تو وہ بھول کر چلا جاتا

    اگر میں کھڑکیا ں، دروازے بند کر لیتا
    تو گھر کا بھید سرِ رہ گزر چلا جاتا

    مرا مکاں مری غفلت سے بچ گیا ورنہ
    کوئی چرا کے مرے بام و در چلا جاتا

    تھکن بہت تھی مگر سایہء شجر میں جمال
    میں بیٹھتا تو مرا ہم سفر چلا جاتا

    جمال احسانی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  16. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    جمال احسانی کی انتہائی خوبصورت غزل ہے یہ اور عرصہ دراز سے ہماری پسندیدہ ترین غزلوں میں شمار ہوتی ہے۔ شکریہ راجہ صاحب
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  17. زبیر مرزا

    زبیر مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,997
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    کسی بھی دشت، کسی بھی نگر چلا جاتا
    میں اپنے ساتھ ہی رہتا جدھر چلا جاتا

    وہ جس منڈیر پہ چھوڑ آیا اپنی آنکھیں میں
    چراغ ہوتا تو لو بھول کر چلا جاتا

    اگر میں کھڑکیا ں، دروازے بند کر لیتا
    تو گھر کا بھید سرِ رہ گزر چلا جاتا

    مرا مکاں مری غفلت سے بچ گیا ورنہ
    کوئی چرا کے مرے بام و در چلا جاتا

    تھکن بہت تھی مگر سایہء شجر میں جمال
    میں بیٹھتا تو مرا ہم سفر چلا جاتا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 2
  18. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,847
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    مجھے خیال آ رہا ہے کہ یہ غزل پوسٹ ہو چکی ہے، شاید احمد نے کی تھی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • متفق متفق × 1
  19. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    بجا۔۔۔ بلکہ دو مرتبہ پوسٹ ہو چکی ہے۔ ایک مرتبہ محمد احمد صاحب نے کی جب کہ دوسری مرتبہ راجہ صاحب نے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,847
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    محمد وارث، ان تینوں کو یکجا کر دیں۔ آج کل ٹیگ کا نظم عجیب ہو گیا ہے، جو زیادہ سود مند نہیں لگتا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر