1. اردو محفل سالگرہ پانزدہم

    اردو محفل کی پندرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

جون ایلیا غزل - نہ ہوا نصیب قرارِ جاں، ہوسِ قرار بھی اب نہیں - جون ایلیا

محمداحمد نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 1, 2011

  1. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    22,283
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed


    غزل


    نہ ہوا نصیب قرارِ جاں، ہوسِ قرار بھی اب نہیں
    ترا انتظار بہت کیا، ترا انتظار بھی اب نہیں

    تجھے کیا خبر مہ و سال نے ہمیں کیسے زخم دیئے یہاں
    تری یادگار تھی اک خلش، تری یادگار بھی اب نہیں

    نہ گلے رہے نہ گماں رہے، نہ گزارشیں ہیں نہ گفتگو
    وہ نشاطِ وعدہء وصل کیا، ہمیں اعتبار بھی اب نہیں

    کسے نذر دیں دل و جاں بہم کہ نہیں وہ کاکُلِ خم بہ خم
    کِسے ہر نفس کا حساب دیں کہ شمیمِ یار بھی اب نہیں

    وہ ہجومِ دل زدگاں کہ تھا، تجھے مژدہ ہو کہ بکھر گیا
    ترے آستانے کی خیر ہو، سرِ رہ غبار بھی اب نہیں

    وہ جو اپنی جاں سے گزر گئے، انہیں کیا خبر ہے کہ شہر میں
    کسی جاں نثار کا ذکر کیا، کوئی سوگوار بھی اب نہیں

    نہیں اب تو اہلِ جنوں میں بھی، وہ جو شوق شہر میں عام تھا
    وہ جو رنگ تھا کبھی کو بہ کو، سرِ کوئے یار بھی اب نہیں

    جون ایلیا


     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 13
    • زبردست زبردست × 3
  2. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,159
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    واہ واہ کیا خوبصورت غزل ہے، لاجواب۔

    بہت شکریہ احمد صاحب شیئر کرنے کیلیے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    22,283
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت شکریہ وارث بھائی، محفل میں شاعری کا تناسب آج کل نہ ہونے کے برابر ہوگیا تھا ۔ اس قحط میں یہ غزل پڑھنے کو ملی تو بہت لطف آیا سو اسے یہاں شئر کیا ہے۔

    ویسے کافی احباب آج کل غائب ہیں اور باقی جو ہیں وہ مجھ سمیت کرکٹ ورلڈکپ میں لگے ہوئے ہیں۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. پرویز اختر

    پرویز اختر محفلین

    مراسلے:
    4
    ماشا اللہ بہت پیاری غزل ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. زھرا علوی

    زھرا علوی محفلین

    مراسلے:
    1,698
    موڈ:
    Asleep
    وہ جو اپنی جاں سے گزر گئے، انہیں کیا خبر ہے کہ شہر میں
    کسی جاں نثار کا ذکر کیا، کوئی سوگوار بھی اب نہیں

    کیا خوب غزل ہے۔۔!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. محمد مسلم

    محمد مسلم محفلین

    مراسلے:
    222
    نہیں اب تو اہلِ جنوں میں بھی، وہ جو شوق شہر میں عام تھا
    وہ جو رنگ تھا کبھی کو بہ کو، سرِ کوئے یار بھی اب نہیں

    بہت اعلیٰ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    کیا خوبصورت انتخاب ہے۔ شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,844
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    کسے نذر دیں دل و جاں بہم کہ نہیں وہ کاکُلِ خم بہ خم
    کِسے ہر نفس کا حساب دیں کہ شمیمِ یار بھی اب نہیں

    وہ جو اپنی جاں سے گزر گئے، انہیں کیا خبر ہے کہ شہر میں
    کسی جاں نثار کا ذکر کیا، کوئی سوگوار بھی اب نہیں

    کیا خوبصورت غزل ہے۔ شامل کرنے کا بہت شکریہ احمد بھائی!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    22,283
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت شکریہ فرخ بھائی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    بہت ہی عمدہ ۔ پوری غزل لاجواب ہے۔۔بہت خوب!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  11. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,992
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    واہ لاجواب انتخاب احمد بھائی۔ بہت خوبصورت ہے۔ زبردست :)

    وہ ہجومِ دل زدگاں کہ تھا، تجھے مژدہ ہو کہ بکھر گیا
    ترے آستانے کی خیر ہو، سرِ رہ غبار بھی اب نہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    22,283
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت شکریہ ! یہ غزل مجھے بھی بے حد پسند ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  13. سید زبیر

    سید زبیر محفلین

    مراسلے:
    4,362
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بہت خوبصورت کلام شئیر کیا ہے
    وہ جو اپنی جاں سے گزر گئے، انہیں کیا خبر ہے کہ شہر میں
    کسی جاں نثار کا ذکر کیا، کوئی سوگوار بھی اب نہیں
    بہت شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,220
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    تُسی گریٹ ہو مسٹر احمد صاحب
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1

اس صفحے کی تشہیر