میر دلی کے نہ تھے کوچے، اوراق مصور تھے ۔ میر تقی میر

فاتح نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 22, 2014

  1. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    کچھ موجِ ہوا پیچاں، اے میر! نظر آئی
    شاید کہ بہار آئی، زنجیر نظر آئی

    دلّی کے نہ تھے کُوچے، اوراقِ مصوّر تھے
    جو شکل نظر آئی، تصویر نظر آئی


    مغرور بہت تھے ہم، آنسو کی سرایت پر
    سو صبح کے ہونے کو تاثیر نظر آئی

    گل بار کرے ہے گا اسبابِ سفر شاید
    غنچے کی طرح بلبل دل گیر نظر آئی

    اس کی تو دل آزاری بے ہیچ ہی تھی یارو
    کچھ تم کو ہماری بھی تقصیر نظر آئی
    (میر تقی میر)​
     
    • زبردست زبردست × 4
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. عبد الرحمن

    عبد الرحمن لائبریرین

    مراسلے:
    1,971
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    واہ!
    بہت زبردست انتخاب فاتح بھائی!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  3. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,351
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    اہا اہا کیا خوب انتخاب ہے
    شراکت کا شکریہ
    سلامت رہیں
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر