احمد ندیم قاسمی ''خدا کرے کہ میری ارض پاک پر اترے''

سارا نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 8, 2008

  1. فاروق احمد بھٹی

    فاروق احمد بھٹی محفلین

    مراسلے:
    2,422
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Question
    بہت کمال ۔۔خوبصورت۔۔ شریک محفل کرنے کا شکریہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  2. نایاب

    نایاب لائبریرین

    مراسلے:
    13,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Goofy
    آمین ثم آمین
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  3. تہذیب

    تہذیب محفلین

    مراسلے:
    295
    جھنڈا:
    Syria
    موڈ:
    Cool
    بہت خوبصورت دعا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. تہذیب

    تہذیب محفلین

    مراسلے:
    295
    جھنڈا:
    Syria
    موڈ:
    Cool
    بہت خوبصورت دعا
     
  5. RAZIQ SHAD

    RAZIQ SHAD محفلین

    مراسلے:
    147
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  6. RAZIQ SHAD

    RAZIQ SHAD محفلین

    مراسلے:
    147
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    گھنی گھٹائیں یہاں ایسی بارشیں برسائیں​
    کہ پتھروں کو بھی روئیدگی محال نہ ہو
    اس شعر کو احمد ندیم قاسمی صاحب نے کس طرح باندھا ہے
    اس شعر کے پہلے مصرع کو آخری رکن فعلن کو فعلان بنا کر باندھا یا لکھنے میں کہیں پر کچھ غلطی ہو رہی ہے
    کیا اس طرح ممکن ہے
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فِعْلان
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فَعِلن
    جواب ارسال کیجئے گا ​
     
  7. قاری محمد عثمان صدیقی

    قاری محمد عثمان صدیقی محفلین

    مراسلے:
    88
    خون جگر دے کے نکھار یں گے رخ برگ گلاب. ھم نے گلشن کے تحفظ کی قسم کھا ئی ہے.
     
  8. دوست محمد

    دوست محمد محفلین

    مراسلے:
    6
    زبردست !
    سارا جی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. RAZIQ SHAD

    RAZIQ SHAD محفلین

    مراسلے:
    147
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    گھنی گھٹائیں یہاں ایسی بارشیں برسائیں
    کہ پتھروں کو بھی روئیدگی محال نہ ہو
    اس شعر کو احمد ندیم قاسمی صاحب نے کس طرح باندھا ہے
    اس شعر کے پہلے مصرع کو آخری رکن فعلن کو فعلان بنا کر باندھا یا لکھنے میں کہیں پر کچھ غلطی ہو رہی ہے
    کیا اس طرح ممکن ہے
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فِعْلان
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فَعِلن
    جواب ارسال کیجئے گا​
     
  10. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,219
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فِعْلان​
    122/2121/2211/2121
    گ نی گ ٹا/ئے ی ہا اے/سِ با ر شے/بر سا ئے
    گھنی گھٹائیں یہاں ایسی بارشیں برسائیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. دوست محمد

    دوست محمد محفلین

    مراسلے:
    6
    گھنی گھٹا سے یہاں ایسی بارشیں برسیں.......
    مجھے تو اس طرح صحیح لگتا ہے۔
     
  12. RAZIQ SHAD

    RAZIQ SHAD محفلین

    مراسلے:
    147
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    میں شاید اپنی بات کو سمجھا نہ سکا اس لئے میرے سوال کا جواب ابھی بھی ادھورا ہے
    بحر مجتث میں لکھا گیا کلام ہے جس کے ارکان یا افاعیل
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فِعْلن
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فَعِلن
    سارا کلام ان افاعیل کے نیچے لکھا گیا ہے لیکن یہ ایک مصرع
    گھنی گھٹائیں یہاں ایسی بارشیں برسائیں
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فِعْلان
    ان ارکان کے نیچے باندھا گیا
    میرا پوچھنے کا مقصد یہ تھا کہ کیا عملِ تسبیغ کے تحت آخری رکن فِعْلن کو فِعْلان بنایا گیا ہے یا بعد میں لکھنے والوں نے مصرع غلط لکھا ہے
    ہو سکتا ہے احمد ندیم قاسمی صاحب نے اسے
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فِعْلن
    کے نیچے ٹھیک باندھا ہو اور بعد میں لکھنے والوں نے اس مصرع کو غلط لکھ دیا ہو مجھے اس کے بارے میں پوچھنا ہے
    جس طرح ناصر کاظمی کے کلام کے مقطع کو اکثر سائٹ پر اس طرح لکھا پایا
    وہ رات کا بے نوا مسافر، وہ تیرا شاعر وہ تیرا ناصر
    تری گلی تک تو ہم نے دیکھا، پھر نہ جانے کدھر گیا
    آخری مصرع میں تقریبا" ہر سائٹ پر اس طرح لکھا پایا (پھر نہ جانے کدھر گیا سے پہلے تھا غائب ہے)
    حالانکہ مقطع اس طرح ہے
    مَفاعلاتن مَفاعلاتن مَفاعلاتن مَفاعلاتن
    وہ رات کا بے نوا مسافر، وہ تیرا شاعر وہ تیرا ناصر
    تری گلی تک تو ہم نے دیکھا، تھا پھر نہ جانے کدھر گیا
    امید ہے میں اپنی بات سمجھانے میں کامیاب رہا ہوں مجھے صرف یہ پوچھنا ہے کہ
    یہ مصرع
    گھنی گھٹائیں یہاں ایسی بارشیں برسائیں
    کیا اسی طرح باندھا گیا ہے اگر اس طرح باندھا گیا ہے تو باقی کلام اس مصرع کے علاوہ
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فِعْلن
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فَعِلن
    ان ارکان کے نیچے باندھا گیا ہے
    جبکہ
    مفاعلن فَعِلاتن مفاعلن فِعْلان
    گھنی گھٹائیں یہاں ایسی بارشیں برسائیں
    اس مصرع کو ان افاعیل کے نیچے باندھا گیا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  13. وقار علی ذگر

    وقار علی ذگر محفلین

    مراسلے:
    252
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
  14. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,219
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    عمل تسبیغ کا تو مجھے علم نہیں البتہ
    فِعْلن کو فِعْلان اور فَعِلان میں بدلا جا سکتا ہے۔​
    عروضی انداز میں تفصیل کے لئے اوور ٹو محمد وارث بھائی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  15. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,136
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    جی بھائی ۔ آپ دونوں درست کہہ رہے ہیں ۔ یہاں فعلن کو فعلان میں بدلا جاسکتا ہے ۔ برسائیں (برسائے) کا وزن ویسے تو مفعولن نظر آتا ہے لیکن یہاں ئیں (ئے) کا ہمزہ گردیا گیا ہے ۔ اس لئے یہ برساے رہ گیا جو فعلان کے وزن پر ہے ۔ اور درست ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • متفق متفق × 1
  16. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,707
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    مفاعلن ۔ فعِلاتن ۔ مفاعلن ۔ فعلان
    گنی گٹا ۔ ءِ یہا اے ۔ سِ بارشے ۔ برساءِ
     
    • متفق متفق × 3
  17. RAZIQ SHAD

    RAZIQ SHAD محفلین

    مراسلے:
    147
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    فاتح صاحب بہت ممنون ہوں ۔۔۔۔مجھے جواب مل گیا ہے جو میں پوچھنا چاہ رہا تھا ۔ کہ مصرع اسی طرح ہے
    گھنی گھٹائیں یہاں ایسی بارشیں برسائیں
    بس آخری رکن فعلن کو فعلان کر دیا گیا مصرع ٹھیک ہے
    سلامت رہیں​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. RAZIQ SHAD

    RAZIQ SHAD محفلین

    مراسلے:
    147
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    سوال کرنے کا مظلب یہی تھا کہ مصرع درست ہے یا کسی نے غلط لکھ دیا ہے بعض اوقات بڑے شعرا کے کلام کو بعد مین لکھنے والے غلط لکھ دیتے ہیں چونکہ وہ علمِ عروض سے واقفیت نہیں رکھے اور اگر کسی ایک بھی سائٹ پر غلط لکھا گیا شعر کسی نے کاپی کرکے آگے شعر کر دیا تو ہر آدمی تک وہی شعر پہنچے گا
    جیسے میر کا ایک شعر ہے جسے لوگوں نے بگاڑ کر ایسے پیش کیا کہ اب زُبان زَدِ عام ہے
    میر کیا سادہ ہیں بیمار ہوئے جس کے سبب
    اسی عطار کے لونڈے سے دوا لیتے ہیں
    حالانکہ یہ شعر اس طرح نہیں ہے بس مشہور ہوگیا ۔۔
    صحیح شعر یوں ہے
    میر کیا سادے ہیں بیمار ہوئے جس کے سبب
    اسی عطار کے لڑکے سے دوا لیتے ہیں
     

اس صفحے کی تشہیر