فیض ہم دیکھیں گے

فرحت کیانی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 25, 2007

  1. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    ہم دیکھیں گے، ہم دیکھیں گے
    لازم ہے کہ ہم بھی دیکھیں گے
    وہ دن کہ جس کا وعدہ ہے
    جو لوحِ ازل میں لکھا ہے
    جب ظلم و ستم کے کوہ گراں
    روئی کی طرح اُڑ جائیں گے
    ہم محکوموں کے پاؤں تلے
    یہ دھرتی دھڑدھڑدھڑکے گی
    اور اہلِ حکم کے سر اوپر
    جب بجلی کڑ کڑ کڑکے گی
    جب ارضِ خدا کے کعبے سے
    سب بُت اُٹھوائے جائیں گے
    ہم اہلِ سفا مردودِ حرم
    مسند پہ بٹھائے جائیں گے
    سب تاج اچھالے جائیں گے
    سب تخت گرائے جائیں گے
    بس نام رہے گا اللہ کا
    جو غائب بھی ہے حاضر بھی
    جو ناظر بھی ہے منظر بھی
    اٹھّے گا انا الحق کا نعرہ
    جو میں بھی ہوں اور تم بھی ہو
    اور راج کرے گی خلقِ خدا
    جو میں بھی ہوں اور تم بھی ہو
    لازم ہے کہ ہم بھی دیکھیں گے۔۔۔
     
    مدیر کی آخری تدوین: ‏اگست 8, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 13
    • زبردست زبردست × 3
  2. پاکستانی

    پاکستانی محفلین

    مراسلے:
    4,529
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    [youtube]http://www.youtube.com/watch?v=TIsLhMIaqgg][/youtube]​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    بہت خوب۔
     
  4. پاکستانی

    پاکستانی محفلین

    مراسلے:
    4,529
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
  5. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    بہت شکریہ :)
     
  6. طالوت

    طالوت محفلین

    مراسلے:
    8,353
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Bashful
    ہم دیکھیں گے
    لازم ہے کہ ہم بھی دیکھیں گے
    وہ دن کہ جس کا وعدہ ہے
    جو لوحِ ازل میں لکھا ہے
    جب ظلم و ستم کے کوہ گراں
    روئی کی طرح اُڑ جائیں گے
    ہم محکوموں کے پاؤں تلے
    یہ دھرتی دھڑ دھڑ دھڑکے گی
    اور اہل حرم کے سر اوپر
    جب بجلی کڑکڑ کڑکے گی
    جب ارضِ خدا کے کعبے سے
    سب بُت اٹھوائے جائیں گے
    ہم اہل صفا مردودو حرم
    مسند پہ بٹھائے جائیں گے
    سب تاج اچھالے جائیں گے
    سب تخت گرائے جائیں گے
    بس نام رہے گا اللہ کا
    جو غائب بھی ہے ، حاضر بھی
    جو ناظر بھی ہے ، منظر بھی
    اٹھے گا انا الحق کا نعرہ
    جو میں بھی ہوں اور تم بھی ہو
    اور راج کرے گی خلقِ خدا
    جو میں بھی ہوں اور تم بھی ہو

    (فیض احمد فیض)
    -------------------------------------
    وسلام
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. زین

    زین لائبریرین

    مراسلے:
    12,400
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    بہت ہی خوب۔
    شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,661
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    مگر یہ نظم "نسخہ ہائے وفا" میں نہیں ہے - نہ جانے کس کتاب سے یہ نظم لی گئ ہے -
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  9. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    اسکی پیروڈی جیو والوں نے بنائی تھی، کیا کوئی پوسٹ کر سکتا ہے؟
     
  10. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    حیرت ہے ویسے۔ پاکستانی پرچم دکھایا جا رہا ہے، اور کہا جا رہا کہ یہ ہماری آزادی کی پہچان ہے۔ لیکن جس زبان میں یہ اعلان کیا جار ہا ہے، وہ ''انگریزی'' ہے۔ یہ کیسی آزادی ہے؟؟؟ ہاہاہا!
     
  11. سلمان امین

    سلمان امین محفلین

    مراسلے:
    27
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    لازم ہے کہ ہم بھی دیکھیں گے۔
    انشااللہ۔
     
  12. rahmat khan

    rahmat khan محفلین

    مراسلے:
    14
    اہل سفا سے مراد مدینہ میں دھونی رما کر علم سیکھنے والے تھے جنہیں مکہ سے نکال کر مردود حرم قرار دیا گیا تھا۔ بہت ہی لطیف بیان ہے۔ اسلام کی ابتدائی تاریخ سے واقفیت اس نظم کا لطف دوبالا کر دیتی ہے
     
  13. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,846
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    واہ جی خوب نظم ہے۔:)
     
    آخری تدوین: ‏جولائی 28, 2017
  14. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    24,092
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    نظم
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  15. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,846
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    ایک سوال ہے،غزل اور نظم میں کیا فرق ہے،اور شناخت کیا ہے؟
     
  16. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    24,092
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    ویسے تو یہ ایک مکمل موضوع ہے، اور غالباً محفل پر اس پر مواد بھی مل جائے گا۔
    غزل کے حوالے سے ایک پوسٹ
     
  17. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,846
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    واہ بھائی بہت شکریہ۔مجھ جیسے کو تو آپ کے بتائے ہوئے مراسلے کا بھی ترجمعہ درکار ہے ۔
    اتنے مشکل الفاظ اُففففففففففف:feelingbeatup:
    پھر بھی کچھ پلے پڑی اور کچھ سر سے گزر گئی۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  18. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    24,092
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    دو تین جملوں میں یوں سمجھیں:
    غزل کا ہر شعر مفہوم میں مکمل ہو تا ہے اور غزل میں ہر شعر کا مضمون دوسرے سے مختلف بھی ہو سکتا ہے۔ عمومی طور پر غزل کا کوئی موضوع نہیں ہوتا۔ البتہ مسلسل غزل کسی ایک موضوع کو پس منظر میں رکھ کر لکھی جا سکتی ہے۔
    نظم کا ایک عنوان ہوتا ہے۔ اور تمام نظم اسی عنوان پر بات کر رہی ہوتی ہے۔ ہر اگلا شعر پچھلے شعر کا تسلسل ہوتا ہے۔

    غزل کی ایک خاص ہیئت ہے، جبکہ نظم کی مختلف اقسام ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  19. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,846
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    جزاک اللہ بھائی ،بہت شکریہ
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  20. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,109
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    سر نسخہ ہائے وفا میں ہی ہے کتاب کا نام مرے دل مرے مسافر نظم کا نام وَ یبقَی وَجْهُ رَبَّک
     

اس صفحے کی تشہیر