جون ایلیا ہر خراش نفس ، لکھے جاؤں

نیرنگ خیال نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 25, 2013

  1. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,812
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    ہر خراش نفس ، لکھے جاؤں
    بس لکھے جاؤں ، بس لکھے جاؤں​
    ہجر کی تیرگی میں روک کے سانس
    روشنی کے برس لکھے جاؤں​
    ان بسی بستیوں کا سارا لکھا
    ڈھول کے پیش و نظر پس لکھے جاؤں​
    مجھ ہوس ناک سے ہے شرط کہ میں
    بے حسی کی ہوس لکھے جاؤں​
    ہے جہاں تک خیال کی پرواز
    میں وہاں تک قفس لکھے جاؤں​
    ہیں خس و خار دید ، رنگ کے رنگ
    رنگ پر خارو خس لکھے جاؤں​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,384
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    مجھ ہوس ناک سے ہے شرط کہ میں
    بے حسی کی ہوس لکھے جاؤں​
    ہے جہاں تک خیال کی پرواز
    میں وہاں تک قفس لکھے جاؤں​
    کیا کہنے جون صاحب کی کیا بات ہے​
    ایک صاحب اسلوب شاعر جس کا اسلوب اس کے ساتھ ہی ختم ہو گیا​
    شراکت کا شکریہ​
    شاد و آباد رہیں​
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  3. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,812
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بالکل جون صاحب اپنے مزاج کے شاعر تھے۔۔ انکا اسلوب سب سے منفرد تھا۔ اللہ ان کے درجات بلند فرمائے :)
     
    • متفق متفق × 1
  4. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,384
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    شاید آپ کو معلوم ہو جون صاحب نے 17 سال ایک کمرے میں کتابوں کے ساتھ گزار دئے اور کثرت مطالعہ سے اس کی دماغی حالت پر بھی فرق پڑ گیا سنی سنائی بات ہے اس میں کہاں تک صداقت ہے احباب ہی بہتر رائے دے سکتے ہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. سید زبیر

    سید زبیر محفلین

    مراسلے:
    4,362
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بہت خوب نیرنگ خیال ! واہ
    ہجر کی تیرگی میں روک کے سانس
    روشنی کے برس لکھے جاؤں
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  6. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,812
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    جی اتنے سال کی صداقت پر تو کچھ نہیں کہہ سکتا۔ مگر علامہ تھے۔ عربی، اردو فارسی کے علاوہ عبرانی پر بھی عبور حاصل تھا۔ بہت وسیع مطالعہ رکھتے تھے۔ جسکا ادراک ان کی نثر اور شعر دونوں سے ہوتا ہے۔ خود اپنے مشاعرے میں فرماتے ہیں کہ
    "مجھے روشنی سے ڈر لگنے لگا تھا۔ کمرے میں بیٹھا رہتا تھا۔ نفسیاتی مریض بن گیا تھا میں۔ اور آپ اس شاعر کا کلام سننے کو آگئے ہیں جسکی شاعری کی کتاب کل چھپ رہی ہے۔ اور ابھی اس نے خود بھی نہیں دیکھی۔" اور اک اور جگہ فرماتے ہیں کہ
    "میری ساری عمر رائیگاں گئی۔ رائیگاں کیوں نہ جاتی۔ ایسا آدمی جس کو اس کے باپ نے یہی سبق پڑھایا ہو کہ علم بڑی دولت ہے۔ اس کی عمر تو رائیگاں ہی جائے گی۔"
    یہی انداز ان کے اشعار سے جابجا چھلکتا نظر آتا ہے۔
    شہر غدار جان لے کہ تجھے​
    ایک امروہوی سے خطرہ ہے​
    اور​

    جون ہی تو ہے جون کے درپے​
    میر کو میر ہی سے خطرہ ہے​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,812
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    شکریہ سر :)
     
  8. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,384
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ان کے بڑے بھائی ریئس امروہی فلسفہ منطق نفسیات کے بہت بڑے عالم تھے مطالعہ ان کا بھی بہت وسیع تھا مگر وہ اس کی وسعت اور گہرائی کو پا گئے اور جون اس میں ڈوب گئے یہ ہی ان دونوں بھائیوں کی کہانی ہے اور دونوں میں فرق بھی یہ ہی ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1

اس صفحے کی تشہیر