نظیر پردہ اٹھا کر رخ کو عیاں اس شوخ نے جس ہنگام کیا ۔ نظیر اکبر آبادی

فرخ منظور نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 29, 2010

  1. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,661
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    پردہ اٹھا کر رخ کو عیاں اس شوخ نے جس ہنگام کیا
    ہم تو رہے مشغول ادھر یاں عشق نے دل کا کام کیا

    آگئے جب صیاد کے بس میں سوچ کیے پھر حاصل کیا
    اب تو اسی کی ٹھہری مرضی جن نے اسیرِ دام کیا

    چشم نے چھینا پلکوں نے چھیدا، زلف نے باندھا دل کو آہ
    ابرو نے ایسی تیغ جڑی جو قصہ ہے سب اتمام کیا

    سخت خجل ہیں اور شرمندہ، رہ رہ کر پچھتاتے ہیں
    خواب میں اس سے رات لڑے ہم کیا ہی خیال خام کیا

    چھوڑ دیا جب ہم نے غنیم کے کوچے میں آنے جانے کو
    پھر تو ادھر اس شوخ نے ہم سے شکوہ بھرا پیغام کیا

    اور ادھر سے چاہت بھی یوں ہنس کر بولی واہ جی واہ
    اٹھیے چلیے یار سے ملیے اب تو بہت آرام کیا

    یار کی مے گوں چشم نے اپنی ایک نگہ سے ہم کو نظیر
    مست کیا، اوباش بنایا، رند کیا، بدنام کیا

    (نظیر اکبر آبادی)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  2. dehelvi

    dehelvi محفلین

    مراسلے:
    433
    واہ کیا پیشکش ہے!
    چشم نے چھینا پلکوں نے چھیدا، زلف نے باندھا دل کو آہ
    ابرو نے ایسی تیغ جڑی جو قصہ ہے سب اتمام کیا
    وجد آگیا!!!!!!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,661
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    پسند فرمانے کے لئے بہت شکریہ دہلوی صاحب!
     
  4. جیہ

    جیہ لائبریرین

    مراسلے:
    15,044
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Blah
    مجھے تو یہ شعر بہت پسند آیا۔

    آگئے جب صیاد کے بس میں سوچ کیے پھر حاصل کیا
    اب تو اسی کی ٹھہری مرضی جن نے اسیرِ دام کیا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,661
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت شکریہ جیہ، ملائکہ اور نیلم صاحبہ!
     
  6. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,371
    بہت خوب جناب سخنور صاحب!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,329
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    پردہ اٹھا کر رخ کو عیاں اس شوخ نے جس ہنگام کیا

    ہم تو رہے مشغول ادھر یاں عشق نے دل کا کام کیا

    آگئے جب صیاد کے بس میں سوچ کیے پھر حاصل کیا

    اب تو اسی کی ٹھہری مرضی جن نے اسیرِ دام کیا

    چشم نے چھینا پلکوں نے چھیدا، زلف نے باندھا دل کو آہ

    ابرو نے ایسی تیغ جڑی جو قصہ ہے سب اتمام کیا

    سخت خجل ہیں اور شرمندہ، رہ رہ کر پچھتاتے ہیں

    خواب میں اس سے رات لڑے ہم کیا ہی خیال خام کیا

    چھوڑ دیا جب ہم نے غنیم کے کوچے میں آنے جانے کو

    پھر تو ادھر اس شوخ نے ہم سے شکوہ بھرا پیغام کیا

    اور ادھر سے چاہت بھی یوں ہنس کر بولی واہ جی واہ

    اٹھیے چلیے یار سے ملیے اب تو بہت آرام کیا

    یار کی مے گوں چشم نے اپنی ایک نگہ سے ہم کو نظیر

    مست کیا، اوباش بنایا، رند کیا، بدنام کیا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 2
  8. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    اہاہاہا
    کیا خوبصورت انتخاب ہے۔
    زندہ باد
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  9. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,329
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    نوازش ہے جناب کی :)
    شاد رہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. سید زبیر

    سید زبیر محفلین

    مراسلے:
    4,362
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بہت خوب
    اور ادھر سے چاہت بھی یوں ہنس کر بولی واہ جی واہ
    اٹھیے چلیے یار سے ملیے اب تو بہت آرام کیا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,329
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    پسند کرنے کا شکریہ
    شاد و آباد رہیں
     
  12. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,661
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  13. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,329
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر