نانگا پربت؟

زیک نے 'ادبیات و لسانیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏فروری 5, 2018

  1. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,894
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    اس بار جب گرمی میں آپ وہاں جائیں گے تب یہ بھی پتہ کر لینا کہ مقامی لوگ کیا بولتے ہیں ننگا یا نانگا
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  2. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,812
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    یہ بھی ٹھیک ہے کہ آخر اسی وجہ سے ہی تجسس ہوا

    گلگت بلتستان کے سفر کا پلان
     
    آخری تدوین: ‏فروری 5, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  3. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,894
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    یہ لڑی میں نے شروع تا آخر پڑھ رکھی ہے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  4. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,812
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    علما کی خاطر ربط دیا تھا۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3
  5. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    25,583
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    میرے خیال میں غیر ملکی سیاحوں کے تلفظ کی وجہ سے نانگا مشہور ہو گیا ہے۔ اس کی ایک وجہ یہ ہے کہ مقامی افراد وہیں تک محدود ہیں۔ ملکی سیاحوں کی تعداد اب کچھ بڑھی ہے، ورنہ زیادہ تر سیاح یورپی ممالک سے ہی آتے رہے ہیں۔ اس لیے جیسے وہ بولتے تھے اسی طرح مشہور ہو گیا۔

    کوئی تحقیق نہیں ہے، ایک اندازہ ہے۔ :)
     
    • متفق متفق × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    3,554
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy

    اس طرح کے سوالوں کی اصل اور نستعلیق صورت کچھ یوں ہوتی ہے : کیا فرماتے ہیں علمائے کرام بیچ اس مسئلے کے ۔ :):):)
    چونکہ آپ نے اس طرح احتراما نہیں پوچھا تو عین ممکن ہے کہ علماء اس لڑی کی طرف نہ آئیں ۔ سو فی الحال مجھ جیسے غیرعلماء کی رائے پر ہی اکتفا کرنا ہوگا ۔

    میرے خیال میں اس سوال کا تعلق لسانیاتی تاریخ سے ہے کہ جسے انگریزی میں historical linguistics کہئے ۔ استعمال کے ساتھ ساتھ الفاظ اپنی صورت بدلتے رہتے ہیں ۔ کوئی لفظ جب ایک علاقے یا قوم سے سے دوسرے علاقے یا قوم میں پہنچتا ہے تو بولی کے فرق کی وجہ سے اس کی ادائیگی میں کچھ تغیر آسکتا ہے ۔ اردو تو ایسی مثالوں سے بھری پڑی ہے ۔ کتنے ہی عربی ، فارسی اور ہندی کے الفاظ ہیں جو ہم ان کے اصل تلفظ سے ہٹ کر ادا کرتے ہیں ۔ اس کی ایک دلچسپ مثال لفظ آئینہ ہے ۔ اس لفظ کی ابتدائی اور اصل صورت آہنہ تھی ۔ پہلے پہلے لوہے کو مصقل کرکے ( یعنی پالش کرکے) آئینہ بنایا جاتا تھا ۔ اسی لئے اس کا نام آہنہ پڑا ۔ جو بعد میں استعمال ہوتے ہوتے آئنہ بنا اور پھر آئینہ بن گیا ۔
    ننگا کب اور کیسے پاجامہ پہن کر نانگا بنا میں اس بارے میں تو کچھ نہیں کہہ سکتا لیکن قیاس کہتا ہے کہ اس بارے میں تابش صدیقی کی بات درست ہے ۔ اسی طرح کی ایک مثال موئن جو داڑو کی ہے ۔ مقامی یعنی سندھی لوگ اسے صدیوں سے اپنی زبان میں مئن جو دڑو ( میم مضموم ، ہمزہ مفتوح اور ڑ پر ہلکی سی تشدید) کہتے آئے ہیں ۔ سندھی میں اس کا مطلب ہوا مرے ہوؤں کا ٹیلہ ۔ لیکن اردو بولنے والے اسے موئن جو داڑو کہتے ہیں ۔ میری اس بارے میں سندھی دوستوں سے کئی دفعہ بات ہوئی اورہمارا متفقہ خیال تھا کہ مئن جو دڑو کو موئن جو داڑو بنانے میں انگریزی کا بڑا دخل ہے ۔ شاید ۱۹۲۱ میں انگریز ماہرین آثارِ قدیمہ نے پہلی دفعہ اس ٹیلے پر کھدائی شروع کی (اور رفتہ رفتہ بہت کچھ آثارنکال کر برطانیہ لے گئے) ۔ انہوں نے اس کا نام انگریزی میں ٹرانسلٹریشن کے بعد Mohenjo Daro رکھا اور بقیہ ہندوستان کو اس سے متعارف کروایا ۔۔ اور پھر وہیں سے یہ اردو میں داخل ہوا ۔ بہت سارے اردو بولنے والے ابھی تک اسے موہن جو ڈارو بھی کہتے اور لکھتے ہیں ۔ لیکن اصل سندھی نام کے اثر کی وجہ سے موہن جو داڑو اور موئن جو داڑو زیادہ مقبول اور معروف ہوگئے ہیں۔ واللہ اعلم بالصواب
     
    آخری تدوین: ‏فروری 5, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 3
    • زبردست زبردست × 2
    • متفق متفق × 1
  7. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    3,554
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    سید صاحب اب یہ مت کہیئے گا کہ فتاویٰ عالمگیری آپ کی نظر سے نہیں گزری ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • زبردست زبردست × 1
  8. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    3,554
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    بالکل ننگا پیر دیکھنے کا تو کبھی اتفاق نہیں ہوا لیکن نیم ننگے پیر تو سندھ میں بھی بہت ہوتے ہیں ۔ اس کے علاوہ کراچی کا منگھا پیر بھی ہم نے دیکھا ہوا ہے ۔ :):):)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. محمد امین

    محمد امین لائبریرین

    مراسلے:
    9,454
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Flirty
    مستنصر حسین تارڑ صاحب کی ایک کتاب کا نام نانگا پربت ہے۔
     
    • متفق متفق × 2
  10. عبید انصاری

    عبید انصاری محفلین

    مراسلے:
    2,682
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    زبردست معلوماتی وغیرہ
     
    • متفق متفق × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  11. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,568
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    آپ کی اس بات پر کہ یہ لفظ 'نانگا' اردو لغات میں موجود نہیں ہے پر میں نے بھی اردو لغات دیکھیں۔ فرہنگِ آصفیہ میں موجود نہیں ہے لیکن دیگر لغات یعنی نور اللغات، فیروز اللغات اور علمی اردو لغت میں اس لفظ کو موجود پایا۔ ان میں سے نور اللغات اور علمی اردو لغت مستند ہیں۔ ان لغات کے مطابق یہ لفظ سنسکرت یا ہندی کا ہے۔ نور اللغات میں اس لفظ کی سند کے طور پر امیر مینائی کا شعر بھی موجود ہے۔

    اگر ان لغات کے یہ اندارج درست ہیں تو ثابت ہوتا ہے کہ یہ لفظ برصغیر کا مقامی ہے اور کہیں باہر سے 'ننگا' کا تلفظ بگڑ کر در آمد نہیں ہوا۔


    [​IMG]

    [​IMG]

    [​IMG]
     
    • معلوماتی معلوماتی × 6
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 4
    • متفق متفق × 1
  12. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,812
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    زبردست وارث۔

    میں نے یونیورسٹی آف شکاگو کی جنوبی ایشیائی لغات میں تلاش کیا تھا۔

    آپ کی اس تلاش سے یہ بھی ثابت ہوا کہ آپ کا پہلا مراسلہ کتنا آن پوائنٹ تھا کہ نانگا ننگے مجذوب اور سادھو ہی کے لئے زیادہ مستعمل لگتا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • متفق متفق × 2
    • زبردست زبردست × 1
  13. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    3,554
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    خدا کا شکرہے کہ یہ ننگا مقامی نکلا ۔ غیر ملکی ننگوں پر تو اپنے ہاں پابندی ہے ۔ :):)

    لیکن یہ بنیادی سوال اپنی جگہ قائم ہے کہ پہلے اسے ننگا پربت کہا جاتا تھا تو اب نانگا کیوں ؟! یا پھر شروع ہی سے دونوں نام مستعمل ہیں ؟! مجھے یاد ہے کہ بچپن میں ہمیشہ اخباروں اور کتابوں میں اسے ننگا پربت ہی لکھا دیکھتے تھے ۔ سن اکیانوے بیانوے کے دور کی ایک یاد ذہن میں آتی ہے کہ انور مقصود نے اپنے ایک ٹی وی پروگرام میں پی آئی اے کے ایک پائلٹ کا صوتی انٹرویو کیا تھا ۔ اس میں پائلٹ نے دورانِ فلائٹ اپنے کاک پٹ کی کھڑکی سے ننگا پربت اور دیگر پہاڑوں کی ویڈیو دکھائی تھی اور ساتھ ساتھ چوٹیوں کے نام بھی بتاتا جارہا تھا ۔ اُس نے بھی اسے ننگا پربت کہا تھا ۔ اور ویڈیو ختم ہونے کے بعد انور مقصود نے یہ جملہ کہا تھا کہ ناظرین پاکستان ٹی وی بہت ایڈوانس ہو گیا ہے ، ٹی وی پر ننگا دکھادیا ۔ :):):)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  14. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,812
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    اگر کسی پرانے اردو اخبار یا کتاب تک رسائی ہو تو کنفرم ہو کہ پہلے "ننگا" پہاڑ تھا یا "نانگا" یا دونوں طرح لکھا جاتا تھا۔

    ویسے آکسفورڈ انگلش ڈکشنری اور مریم ویبسٹر ڈکشنری دونوں میں اس کا تلفظ "ننگا" ہی لکھا ہے۔

    Nanga Parbat | Definition of Nanga Parbat in English by Oxford Dictionaries

    Definition of NANGA PARBAT
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  15. سعادت

    سعادت محفلین

    مراسلے:
    1,123
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Sleepy
    مجھے اس بات کا تجسس ہے کہ فیروزاللغات کے مستند نہ ہونے کی کیا وجہ ہے۔ مڈل سکول کی نصابی کتب میں تو یہی شامل تھی۔
     
    • متفق متفق × 1
  16. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,720
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    لغت بھی نصاب میں شامل ہوتی ہےکیا؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  17. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,568
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    فیروز اللغات اردو کو عام طور پر پہلی لغات کا چربہ سمجھا جاتا ہے اور مزید یہ کہ اس میں شاید کچھ اغلاط بھی ہیں، اس لیے اس کی ادبی سندی وقعت شاید اس طرح کی نہیں ہے جس طرح فرہنگِ آصفیہ، نور اللغات، علمی اردو لغت وغیرہ کی ہے۔ ہاں فیروز اللغات فارسی اردو ایک شاہکار ہے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • متفق متفق × 2
  18. سعادت

    سعادت محفلین

    مراسلے:
    1,123
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Sleepy
    شاید نہیں، :) کہ لغت کا شمار تو حوالہ کتب میں ہوتا ہے۔ کہنے کا مطلب یہ تھا کہ ہمارے سکول میں ہر طالبعلم کے پاس اردو کی نصابی کتاب کے ساتھ ’فیروزاللغات اردو جدید‘ کا ہونا بھی لازمی تھا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1
  19. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,720
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    فیروز اللغات اردو تو بہت پہلے کہیں نظر سے گزری تھی اور بادی النظر میں بلا مبالغہ ایسا محسوس ہوا تھا کہ واقعی کوئی گئی گزری لغت ہے مضحکہ خیز حد تک بیکار ۔۔۔یہ اس وقت کے تاثرا ت ہیں ۔۔۔
    البتہ والد صاحب کے پاس فیروز اللغات فارسی کا بوسیدہ سانسخہ تھا (اب میرےپاس ہے) وہ واقعی اردو کے لیے شاندار اثاثہ ہے جیسا کہ وارث بھائی نے کہا ۔
    ایک نیا نسخہ بھی کراچی سے لایا ہوں مگر شایدٹائپ شدہ فونٹ میں ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  20. ابو ہاشم

    ابو ہاشم محفلین

    مراسلے:
    876
    فیروز اللغات کے جدید ایڈیشن میں تمام الفاظ کا تلفظ دیا گیا ہے جبکہ پرانے ایڈیشن میں بہت سارے الفاظ کا تلفظ نہیں دیا گیا تھا
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر