لفظ "افعی" کا درست تلفظ کیا ہے۔

Fraz siddique نے 'ادبیات و لسانیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 27, 2020

  1. Fraz siddique

    Fraz siddique محفلین

    مراسلے:
    1
    برائے کرم رہنمائی فرما دیں کہ لفظ " افعی" کا درست تلفظ کیا ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,260
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    تلفظ افعا
    معنی سانپ
    جمع افاعی
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  3. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,835
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    دہر میں نقش وفا وجہ تسلی نہ ہوا
    ہے یہ وہ لفظ کی شرمندۂ معنی نہ ہو

    سبزۂ خط سے ترا کاکل سرکش نہ دبا
    یہ زمرد بھی حریف دم افعی نہ ہوا
     
  4. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,260
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    فہد بھائی ۔ اس غزل میں قافیہ تقوی بھی ہے۔ یہ معاملہ کچھ پیچیدہ ہے۔
     
    • متفق متفق × 1
  5. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,835
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    اور عیسی بھی :)
     
    • متفق متفق × 1
  6. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,260
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    یہ قوافی سماعی نہیں بصری اورکتابی نوعیت کے ہیں-
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  7. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,260
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    میرے خیال میں اب یہ قابل قبول نہیں رہے- پچھلے وقتوں شاید کسی قدر رائج رہے ہوں گے-
     
    • متفق متفق × 1
  8. ابو ہاشم

    ابو ہاشم محفلین

    مراسلے:
    875
    اس طرح کے الفاظ کی آخری ی پر کھڑا زبر ضرور لگانا چاہیے:
    افعیٰ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. رضوان راز

    رضوان راز محفلین

    مراسلے:
    22
    جھنڈا:
    Pakistan
    بہ صد ادب گزارش ہے کہ افعی کا تلفظ افعا نہیں ہے
    اَفْعی ( الف مفتوح، ف ساکن)
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1
  10. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,260
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  11. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,260
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    میرے خیال میں اردو کتابت میں یہ ہونا چاہیئے ۔
    عربی میں ی کو دو نقطوں کے ساتھ لکھا جاتا ہے علي بن ابی طالب ۔اور جس ی میں نقطے نہ ہوں وہ الف مقصورہ ہوتا ہے ، جیسے اعلی ادنی وغیرہ ۔۔ واللہ اعلم۔
    عربی میں اگر تلفظ افعی لکھا جائے تو افعي لکھا جائے گا اور اگر افعی عربی میں لکھیں تو افعا پڑھا جائے گا۔ واللہ اعلم ۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  12. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,835
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    اور ابی کا تلفظ ابی ہوگا یا ابا؟
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  13. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,835
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    علمی اردو لغت۔
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  14. سید عاطف علی

    سید عاطف علی لائبریرین

    مراسلے:
    10,260
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    اگر یہ عربی لفظ أبي ۔ ہو تو ابی پڑھا جائے گا ۔ جو اسم ہے ۔ یہ چھ خاص اسماء میں سے ہے جس کے لیے عربی زبان میں خصوصی قواعد ہیں ۔ اسی لیے یہ ابو ابی اور ابا کی مختلف حالتوں میں استعمال ہوتا ہے ۔ اس قسم کے دیگر اسماء میں ذو ذي اور ذا ۔ أخو اخي اور أخا ۔ وغیرہ ہیں ۔
    اگر عربی میں أبی لکھا جائے تو ابا پڑھا جائے گا جو فعل ہے ۔ جیسے ۔
    وإذ قلنا للملائكة اسجدوا لآدم فسجدوا إلا إبليس أبى واستكبر ۔۔۔۔
    ا
    پنی عربی کی استعداد بس اتنی ہی ہے بھئی ۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  15. ابو ہاشم

    ابو ہاشم محفلین

    مراسلے:
    875
    اِسی طرح تسلیٰ تسلی ہو گیا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  16. ابو ہاشم

    ابو ہاشم محفلین

    مراسلے:
    875
    میرے خیال میں یہ بہت حد تک درست ہے لیکن اس اصولِ کتابت کی خلاف ورزی بھی نظر آتی ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. عبید انصاری

    عبید انصاری محفلین

    مراسلے:
    2,680
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    افعیٰ اگر افعِی بن جائے تو ہمیں اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ ہمارے جذبات کو ٹھیس تو اس وقت پہنچتی ہے جب ان چکروں میں ہماری لیلیٰ "لیلِی" بن جاتی ہے:
    گفت اي مجنون شيدا ، چيست اين؟
    می نویسی نامه ، بهر کيست اين؟
    گفت مشق نام ليلي ميکنم
    خاطر خود را تسلي ميکنم

    :):)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  18. رضوان راز

    رضوان راز محفلین

    مراسلے:
    22
    جھنڈا:
    Pakistan
    خاکسار دستِ ادب جوڑے عرض پرداز ہے کہ
    آپ نے جو حوالہ مرحمت فرمایا وہ عربی زبان کے لفظ کا تلفظ ہے جب کہ یہاں اردو زبان میں تلفظ کے متعلق استفسار کیا گیاہے
    یہ درست ہے کہ آپ کے فرمان کے بہ موجب عربی میں تلفظ أَفْعَى (الف مفتوح، ف ساکن، ع مفتوح) ہی ہے لیکن فارسی اور اردو میں اَفْعِی (الف مفتوح، ف ساکن، ع مکسور) ہے۔
    عربی اور اردو میں ایک ہی لفظ کے تلفظ میں اختلاف کوئی اچنبھے کی بات نہیں۔
    مثلاً اردو کا لفظ تَجَلّی عربی زبان میں تَجَلّٰی ہے۔
    اردو کی بیگَم ترکی میں بیگُم (گ مضموم) ہے۔ حالاں کہ بیگم ترکی زبان سے اردو میں آیا ہے لیکن ہمیں اسے بیگَم ( گ مفتوح) ہی پڑھتے اور بولتے ہیں۔

    فرہنگِ آصفیہ، فرہنگِ عامریہ اور اردو لغت بورڈ ایسی مستند اور معتبر لغات میں بھی یہ ہی تلفظ مذکور ہے۔
     
  19. رضوان راز

    رضوان راز محفلین

    مراسلے:
    22
    جھنڈا:
    Pakistan
    بجا ارشاد
    یہ سب فارسی شعراء کا کیا دھرا ہے۔
    اردو زبان میں عیسی یا تقوی کے صوتی اثرات اتنے ہی نامانوس اور ناقابلِ قبول ہیں جس قدر تسلّیٰ سننا ناگوار ہے۔ یعنی عربی الفاظ ہوں یا ترکی یا فارسی اردو زبان انہیں اپنے صوتی مزاج سے ہم آہنگ کر لیتی ہے اور ایک نوع کی انفرادیت کی جانب گامزن ہے۔
    یہ معاملہ اس جانب بھی رہنمائی کرتا ہے کہ زبان کیوں کر ترقی کرتی ہے اور کیسے اپنی انفرادیت قائم کرتی ہے۔
     
  20. رضوان راز

    رضوان راز محفلین

    مراسلے:
    22
    جھنڈا:
    Pakistan
    اس معاملے میں جناب طباطبائی کی رائے نقل کرنے کی سعادت حاصل کرتا ہوں۔ شرحِ دیوانِ غالب میں اسی غزل کی شرح کرتے ہوئے رقم طراز ہیں۔

    "قافیہ تقویٰ میں فارسی والوں کا اتباع کیا ہے کہ وہ لوگ عربی کے جس جس کلمہ میں ی دیکھتے ہیں اُس کو کبھی ’ الف ‘ اور کبھی ’ ی ‘ کے ساتھ نظم کرتے ہیں ۔ ’’ تمنی و تمنا ، تجلی و تجلیٰ وتسلی و تسلیٰ و ہیولی و ہیولیٰ و دینی و دُنیا ‘‘ بکثرت اُن کے کلام میں موجود ہے۔"
     
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر