فرخ منظور کی تک بندیاں

فرخ منظور نے 'آپ کی شاعری (پابندِ بحور شاعری)' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 29, 2016

  1. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت عنایت۔ سلامت رہیے!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  2. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    ایک دوست کے شعر کے جواب میں
    اصل شعر:
    کوئی تو اپنا بھی ہو راز داں محبت میں
    مزا تو ہم کو بھی آئے کبھی زیارت میں
    (زیارت علی)
    جواباً شعر:
    نہ سمجھا اپنا کبھی آپ نے محبت سے
    نہ ہم نے لطف اٹھایا کبھی زیارت سے
    (فرخ منظور)


     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  3. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    رہ جائے گا انبوہِ جنوں خاک اڑاتا
    مجھ ایسا جب اس خاک پہ مجنوں نہ رہے گا
    (فرخ منظور)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 2
  4. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,717
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    اچھا ہے فرخ بھائی !
    اک ذرا انبوہِ جنوں کو دیکھ لیجئے گا ۔ انبوہ عددی صفت ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    شکریہ ظہیر بھائی۔ انبوہ، ہنگامہ اور فراوانی کے معنوں میں بھی مستعمل ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  6. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,717
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    فرخ بھائی ، انبوہ کے معنی ہنگامہ تو قطعی نہیں ۔ فراوانی ، ہجوم ، بھیڑ ، کثرت وغیرہ کے معانی میں مستعمل ہے ۔ لیکن ترکیبِ اضافی مین صرف انہی اشیا کے ساتھ استعمال ہوتا ہے کہ جو قابلِ شمار ہوں ۔ یعنی انبوہِ عاشقاں تو درست لیکن انبوہِ عشق خلافِ محاورہ ہوگا ۔ خیر ، یہ موشگافی والی بات ہے ۔ شعر آپ کا اچھا ہے ۔ کبھی پوری غزل کی کوشش بھی کیجئے ۔ بہت اشتیاق ہے ہمیں ۔ :):):)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  7. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,607
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    زہرا نگاہ کی ایک نظم کا عنوان ہے ’تن نحیف سے انبوہ جبر ہار گیا‘ کیا یہ ترکیب صحیح ہے؟
     
    آخری تدوین: ‏دسمبر 19, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  8. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,717
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    جی ہاں ۔ انبوہِ جبر ، انبوہِ غم وغیرہ درست تراکیب ہیں ۔ جبر اور غم دونوں قابلِ شمار ہیں ۔ دونوں کی واحد اور جمع مستعمل ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  9. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    شکریہ ظہیر بھائی۔ غزل مکمل کہنے کی کوشش کرتا ہوں مگر بہت مشکل کام ہے۔ بہرحال آپ دو حوالے دیکھیے۔
    ایک آن لائن لغت کا
    دوسرا فرہنگ آصفیہ کا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. کاشف اختر

    کاشف اختر لائبریرین

    مراسلے:
    714
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Goofy
  11. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,717
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    فرخ بھائی ، یہ ایک دلچسپ بحث ہے اور مجھے ان موضوعات پر بات کرنا پسند بھی ہے ۔ جی تو چاہتا ہے کہ تفصیلا لکھوں لیکن وہی پرانا مسئلہ وقت کی قلت کا درپیش ہے ۔ مختصرا عرض کروں گا کہ لغت ایک طرح سے بولی اور لکھی جانے والی زبان کا تحریری ریکارڈ ہوتا ہے ۔ کسی بھی لفظ کے ذیل میں وہ تمام معانی درج کردیئے جاتے ہیں کہ جو کسی بھی دور ، کسی بھی علاقے اور کسی بھی موقع پر اہلِ زبان میں مستعمل رہے ہوں ۔ چونکہ زبان جیتی جاگتی زندہ شے ہے اس لئے اس میں تغیرات کا پیدا ہونا ایک فطری سی بات ہے۔ یہ تو ہم جانتے ہی ہیں کہ الفاظ کا استعمال وقت کے ساتھ ساتھ متروک بھی ہوجاتا ہے ۔ اسی طرح الفاظ کے معنی بھی متروک ہوسکتے ہیں ، بدل سکتے ہیں اور ان کے نئے معنی بھی پیدا ہوسکتے ہیں ۔ مثلا ایک لفظ مذاق کو لے لیجئے ۔ یہ لفظ جس معنی میں آج کل عام استعمال ہوتا ہے آج سے اسی نوے سال پہلے تک نہیں ہوتا تھا بلکہ اس کے کچھ اور ہی معنی ہوتے تھے ۔ کہنے کا مقصد یہ ہے کہ لغت میں کسی بھی لفظ کے ذیل میں دیئے گئے تمام کے تمام معانی مستعمل نہیں ہوتے ۔ لفظوں کے استعمال کی سند عموما اساتذہ زبان (شعراء و ادباء) سے لی جاتی ہے ۔ ایسا ممکن ہے کہ انبوہ کو کبھی کسی نے کسی دور میں بمعنی ہنگامہ استعمال کیا ہو ۔ اسی لئے سید دہلوی نے اسے فرہنگ میں لکھ دیا ۔ فرہنگ اردو کی قدیم ترین لغات میں سے ہے ۔ جبکہ مولوی صاحب نورالحسن نے اپنی لغت میں اس کے یہ معنی نہیں دیئے ہیں ۔ دیگر لغات میں بھی بمعنی ہنگامہ درج نہیں ۔ میں نے جہاں تک پڑھا ہے انبوہ اسی معنی میں مستعمل ہے کہ جو اوپر کے مراسلوں میں ذکر کیا ۔ واللہ اعلم بالصواب ۔
    دوسری بات یہ کہ آپ کے شعر میں محل بھیڑ اور مجمع ہی کا ہے ، ہنگامے کا نہیں ۔

    ویسے آپ کی غزل کا انتظار ہے ۔ فرخ بھائی ، اگر آپ کہیں تو ہم مصرع طرح دیئے دیتے ہیں شاید اسی طرح طبیعت رواں ہوجائے ۔:):):)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  12. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    شکریہ ظہیر بھائی۔ آپ اس شعر کو ایسے پڑھ لیں۔
    رہ جائے گا ہنگامِ جنوں خاک اڑاتا
    مجھ ایسا جب اس خاک پہ مجنوں نہ رہے گا
    (فرخ منظور)
    رہ گئی غزل کی بات تو یہ کارِ گراں بھی کسی دن کر گزروں گا۔ آپ اگر کوئی مصرع طرح دینا چاہتے ہیں تو ضرور دیں۔ کوشش کرتا ہوں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  13. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,717
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    فرخ بھائی ، یہ چند مصرع اس وقت ذہن میں آرہے ہیں ۔ چونکہ آپ اکثر بحرِ خفیف میں لکھتے ہیں اس لئے اگر کبھی طبیعت مائل ہو تو ان میں سے ایک آدھ پر ضرور فکر کریں ۔

    ۔ کوئی صورت نظر نہیں آتی
    ۔ دلِ ناداں تجھے ہوا کیا ہے
    ۔ رنج راحت فزا نہیں ہوتا

    فرخ بھائی ، ضروری نہیں کہ آپ انہی مصرعوں کو دیکھیں اور خود کو پابند کریں ۔ میدان تو بہت وسیع ہے ۔ کو شش شرط ہے ۔ :):):)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  14. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    نقش ہوں یا کہ اِک تصوّر ہوں
    عکس ہوں کس کی نا رسائی کا
    (فرخ منظور)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  15. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    تری نگاہ کا جب بھی کبھی اشارہ ہوا
    زماں دو لخت ہوا اور مکاں کنارہ ہوا
    (فرخ منظور)​
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 25, 2019
    • زبردست زبردست × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  16. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    زلف لہرا کے وہ فتنوں کو ہوا دیتے ہیں
    مسکراتے ہیں کہ وہ حکمِ قضا دیتے ہیں
    (فرخ منظور)
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 31, 2019
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    لیے جاتی ہے آخر کس طرف یہ ہجر کی وحشت
    بجز دیوانگی اب اس کا حاصل اور کیا ہو گا
    (فرخ منظور)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  18. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    سر و سامانِ وجودم شررِ عشق بسوخت
    زیرِ خاکسترِ دل سوزِ نہانم باقیست
    شاہ نیاز احمد بریلوی
    میرے سارے وجود کا ساماں عشق نے تیرے جلا دیا
    لیکن خاکستر سے دل میں سوزِ نہاں سا باقی ہے

    ترجمہ: فرخ منظور
     
    آخری تدوین: ‏اپریل 5, 2019
  19. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    تم مجھ کو شاید مٹا ڈالو گے اپنی جھوٹی اناؤں سے
    لیکن میں ابھروں گا پھر بھی بن کے راکھ فضاؤں سے
    (فرخ منظور)
     
  20. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    آزاد منظوم ترجمہ کافی شاہ حسین از فرخ منظور

    سجن نے پکڑی بانہہ ہماری
    کیسے کہہ دوں چھوڑ رے یارا
    رات اندھیری، بادل بارش
    بعد وکیلوں ہو گئی مشکل
    مشکل ہو گیا اب تو بلاوا
    عشق محبت وہی ہیں جانیں
    جن کے اوپر بیتی ساری
    جوہڑ پیدا کریں ہیں کلّر
    دھان کو ریت میں
    بو نہ یارا
    کیوں تو مارے بڑی چھلانگیں
    اک دن سب کچھ چھوڑ کے جانا
    کہے حسین فقیر اک رب کا
    نین میں نیناں گاڑ دے یارا

    کافی: شاہ حسین
    سجن دے ہتھ بانہہ اساڈی،کیونکر آکھاں چھڈ وے اڑیا
    رات اندھیری،بدل کنیاں،باجھ وکیلاں مُشکل بنیاں
    ڈاہڈے کیتا سڈ وے اڑیا
    عشق محبت سو ای جانن،پئی جنہاں دے ہڈ وے اڑیا
    کلر کھٹّن کھوہڑی، چینا ریت نہ گڈ وے اڑیا
    نِت بھرناں چھُٹیاں، اک دن جا سیں چھڈ وے اڑیا
    کہے حسین فقیر نمانا نین نیناں نال گڈ وے اڑیا

     
    آخری تدوین: ‏مئی 24, 2019

اس صفحے کی تشہیر