تم اپنی زباں خالی کر کے اے نکتہ ورو پچھتاؤ گے - اختر مسلمی

کاشفی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 20, 2016

  1. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,393
    غزل
    (اختر مسلمی)
    تم اپنی زباں خالی کر کے اے نکتہ ورو پچھتاؤ گے
    میں خوب سمجھتا ہوں اس کو جو بات مجھے سمجھاؤ گے

    اک میں ہی نہیں ہوں تم جس کو جھوٹا کہہ کر بچ جاؤ گے
    دنیا تمہیں قاتل کہتی ہے کس کو کس کو جھٹلاؤ گے

    یا راحتِ دل بن کر آؤ یا آفتِ دل بن کر آؤ!
    پہچان ہی لوں گا میں تم کو جس بھیس میں بھی تم آؤ گے

    ہر بات بساطِ عالم میں مانند صدائے گنبد ہے
    اوروں کو برا کہنے والو تم خود بھی برے کہلاؤ گے

    پھر چین نہ پاؤ گے اختر اس درد کی ماری دنیا میں
    اس در سے اگر اُٹھ جاؤ گے، در در کی ٹھوکر کھاؤ گے
     
  2. نکتہ ور

    نکتہ ور محفلین

    مراسلے:
    713
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    :quiet: :silent3: :wasntme:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  3. نکتہ ور

    نکتہ ور محفلین

    مراسلے:
    713
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    :dontbother:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  4. سید لبید غزنوی

    سید لبید غزنوی محفلین

    مراسلے:
    3,541
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    واہ جی واہ ۔۔۔۔جس کا بیٹا اختر ہے یقین سے کہتا ہوں اس والدہ بھی کسی عظیم آدمی کی دختر ہے
    یہ شعر تو بشار کے لیے ہونا چاہیے ۔۔۔۔۔۔کیا خیال ہے ؟؟
    فیہ حکمۃ۔۔۔۔والحکمۃ ضالۃ المومن ۔۔۔۔کسی کو بھی برا مت جانو ۔۔۔

    کاشفی صا حب بہت اچھی غزل شئیر کی ہے ۔۔۔خوش رہیں ۔۔۔
     

اس صفحے کی تشہیر