1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $450
    $368.00
    اعلان ختم کریں
  2. اردو محفل سالگرہ سیزدہم

    اردو محفل کی یوم تاسیس کی تیرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں
  3. دو ملین پیغامات کا کاؤنٹ ڈاؤن

    اردو محفل فورم پر دو ملین پیغامات مکمل ہونے میں صرف 1500 پیغامات باقی رہ گئے ہیں۔ مزید تفصیل ملاحظہ فرمائیے۔

    اعلان ختم کریں

آپ کیا پڑھ رہے ہیں؟

نبیل نے 'مطالعہ کتب' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 24, 2007

  1. کاشف اختر

    کاشف اختر لائبریرین

    مراسلے:
    705
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Goofy
    کتاب : امیر خسرو حیات، تعلیمات اور کلام
    مصنف: ریاض جعفری
    مترجم: مسعود مفتی
    ناشر : اریب پبلیکیشنز
    سن اشاعت: 2013
    قیمت: 150
     
    آخری تدوین: ‏جنوری 9, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  2. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    23,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    دراصل گولڈ لیف کا خوابوں کے ساتھ مسئلہ نہیں ہے، یہ تو ہر وقت ہر جگہ میسر ہیں۔ کتابیں خوابوں میں اس لیے آتی ہیں کہ اول تو مطالعے کے لیے وقت کم ملتا ہے دوم بہت سی کتابیں یا تو ملتی نہیں یا استطاعت سے باہر ہوتی ہیں، سو انہوں نے خوابوں میں جگہ بنا لی ہے! :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  3. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    23,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    اس کتاب سے دو واقعات جس میں مصنف نے انڈیا کے سابق آرمی چیف جنرل کرشنا سوامی سُندر جی پر کافی تنقید کی ہے۔

    1984ء میں مصنف میجر کے عہدے پر تھے اور انڈین آرمی ہیڈ کوارٹر دہلی میں ملٹری آپریشنز میں سٹاف آفیسر کے طور پر کام کر رہے تھے۔ مصنف نے آپریشن بلیو اسٹار، جس میں انڈین آرمی نے سکھوں کے گولڈن ٹیمپل میں کاروائی کی تھی، کھل کر تنقید کی ہے۔ بقول مصنف، یہ سراسر اندرا گاندھی کا پلان تھا اور اس وقت کے آرمی چیف اور ان کے ساتھ ایک اور جنرل (ڈائریکڑ جنرل ملٹری آپریشنز DGMO) اس آپریشن کے حق میں نہیں تھے لیکن اندرا گاندھی نے اپنے گھر میں اس سلسلے میں جو میٹنگ منعقد کی اس میں ان دو جنرلز کے ساتھ ایک تیسرے جنرل کو بھی مدعو کیا تھا جو انڈین آرمی کی ویسٹرن کمانڈ کے کمانڈر تھے، ان لیفٹنٹ جنرل، کرشنا سوامی سندر جی نے اندرا گاندھی کو یقین دلایا کہ یہ آپریشن کوئی مسئلہ ہی نہیں ہے۔ بقول مصنف، یہ چین آف کمانڈ سے انحراف تھا اور اسی وجہ سے اس آپریشن کی ساری پلاننگ آرمی ہیڈ کوارٹر کی بجائے ویسٹرن کمانڈ کے ہیڈ کوارٹر میں کی گئی۔

    انہی جنرل سندرجی کو بعد میں ترقی دے کر آرمی چیف بنا دیا گیا تھا۔ 1986 کے اختتام کے قریب انہوں نے آپریشن براسٹیکس پلان کیا تھا اور یہ اس وقت انڈیا کی سب سے بڑی فوجی مشقیں تھیں جو راجستھان میں کی گئیں۔ مصنف کے بقول ان مشقوں اور فوج کی نقل و حمل کی اطلاع پاکستان کو دے دی گئی تھی۔ لیکن عین مشقوں کے دوران جنرل سندر جی نے محسوس کیا کہ پنجاب کی سرحد غیر محفوظ ہو گئی ہے اور پاکستان ادھر کاروائی کر سکتا ہے سو ریزرو فوج کو پنجاب میں تعینات کیا گیا۔ اس تعیناتی نے پاکستان کو بھی مجبور کیا کہ وہ بھی اپنی فوجوں کی نقل و حرکت کرے اور جواب میں ایک ایسا سلسلہ شروع ہو گیا کہ جو قریب قریب فُل اسکیل جنگ کی طرف چلا گیا تھا اور بہت مشکل سے یہ سارا مسئلہ ٹھنڈا ہوا۔ مصنف کے بقول یہ سارا کھیل ایک غلط اطلاع پر مشتمل تھا جو کسی ملٹری انٹیلیجنس کے آفیسر نے ملٹری آپریشنز کے آفس بھیجنے کی بجائے اپنے نمبر بنانے کے لیے سیدھا آرمی چیف کو دے دی تھی اور آرمی چیف سندر جی نے اس غلط اطلاع پر ایک جنگ کی بنا ڈال دی تھی حالانکہ مصنف کے بقول ملٹری آپریشنز آفس نے اس اطلاع پر کئی بار غور کر کے یہی نتیجہ نکالا تھا کہ اطلاع بالکل غلط ہے۔

    مجھے بھی 1986ء/87ء کی یہ اکھاڑ پچھاڑ اچھی طرح یاد ہے، گاؤں کے گاؤں خالے کیے گئے تھے اور سرحدوں کے دیہاتی بیچارے اپنا سامان ٹریکٹر ٹرالیوں پر لادے ساری ساری رات سیالکوٹ میں سے گزر کر محفوظ مقامات کی طرف جاتے رہتے تھے۔ سردیوں کی راتیں اور سرحد کی دونوں جانب ہزاروں لوگوں کی اکھاڑ پچھاڑ محض ایک غلط اطلاع پر اور ایک آرمی چیف کی ہٹ دھرمی پر (بقول مصنف جو بعد میں خود انڈین آرمی کے چیف رہے)۔ پاکستان اور انڈیا کے تعلقات کا اللہ ہی حافظ ہے!
     
    • معلوماتی معلوماتی × 7
  4. ہادیہ

    ہادیہ محفلین

    مراسلے:
    4,116
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    یاز سرجی کیا عارف کریم کا اثر ہوگیا ہے جو ہر مراسلے پر "پرمزاح " کی ریٹنگ؟؟:p
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3
  5. یاز

    یاز مدیر

    مراسلے:
    17,474
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    بہت زور سے ہنسنے والی سمائیلی ۔۔۔ وغیرہ
    مراسلہ پرمزاح لگے گا تو پرمزاح کی ریٹنگ ہی دیں گے جی۔۔۔ "پرمغز" کی تو نہیں!!!
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. یاز

    یاز مدیر

    مراسلے:
    17,474
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    ڈین براؤن کا تازہ ترین ناول Origin ۔۔
    ہمارے خیال میں یہ ڈین براؤن کے ناولز میں شاندار ترین ہے۔ بس اختتام کچھ توقعات سے کم ہے، لیکن اتنا بھی نہیں۔
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  7. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    23,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    انڈیا اور چائنہ کی 1962ء میں ہونے والی جنگ پر کتاب پر بریگیڈیئر جان ڈالوی کی کتاب
    Himalayan Blunder
    بریگیڈیئر مذکور انڈین انفنٹری کی 7 بریگیڈ کے کمانڈر تھے اور یہ بریگیڈ انڈین آرمی کی بہترین بریگیڈ سمجھی جاتی تھی لیکن جنگ شروع ہونے کے بعد چند گھنٹوں کے اندر اندر چینی فوج نے اس بریگیڈ کو ختم کر دیا تھا۔ بریگیڈیئر صاحب جنگی قیدی بنے اور اس جنگ میں قید ہونے والے شاید سب سے بڑے رینک والے آفیسر تھے۔ قید سے چھوٹنے کے بعد انہوں نے مذکورہ کتاب لکھی اور چھپنے کے فوراً بعد یہ کتاب بحقِ سرکار ضبط ہو گئی، لیکن بعد میں اس کو چھاپنے کی اجازت دے دی گئی۔ مصنف موصوف نے بھارتی سیاست دانوں پر بالعموم اور نہرو پر بالخصوص سخت تنقید کی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ آرمی ٹاپ آفیسرز پر بھی کڑی تنقید کی ہے۔
    [​IMG]
     
    • معلوماتی معلوماتی × 4
  8. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    23,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    • معلوماتی معلوماتی × 4
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. اسامہ فاروق

    اسامہ فاروق محفلین

    مراسلے:
    70
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    محترم "جانباز" ہے آپکے پاس تو عنایت ہو۔
     
  10. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    23,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    کانگریسی رہنما، سابق انڈین وزیرِ خارجہ سلمان خورشید کی کتاب The Other Side of the Mountain۔ یہ کتاب خاص طور پر 2014ء کے انڈین انتخابات میں کانگریس کی شکست اور بی جے پی کی فتح کے متعلق ہے۔
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  11. عبید انصاری

    عبید انصاری محفلین

    مراسلے:
    1,778
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    وہ تو ہمارے پاس بھی ہے بھیا۔ لیکن اِک ذرا موبائل نیٹ کا پیکج محدود سا ہے، سو اپلوڈ نہیں کرسکتے۔ گوگل کریں تو بآسانی دستیاب ہو جائے گی۔
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 6, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. عبداللہ محمد

    عبداللہ محمد مدیر

    مراسلے:
    7,367
    جھنڈا:
    Pakistan
    کوئی مزید آٹھ، دس سال کیا آپ اس کتاب کو خود سے جدا کرنے کا ارادہ وغیرہ رکھتے ہیں-
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 6, 2018
    • پر مزاح پر مزاح × 3
  13. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    23,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شاید، کیونکہ اب مجھے لگتا ہے کہ شاعری افسانے وغیرہ کی کوئی کتاب خریدنا بس ایک "بچگانہ حرکت" ہی ہے! :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
    • غمناک غمناک × 1
  14. عبداللہ محمد

    عبداللہ محمد مدیر

    مراسلے:
    7,367
    جھنڈا:
    Pakistan
    لیکن شاعری کی تو نہیں بلکہ افسانوں کی کتاب ہے- وغیرہ


     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    23,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    جی پہلے میں سمجھا کہ یہ "کلیات فراز" کی بات ہو رہی ہے کہ وہ بھی مجھے کچھ اتنے ہی عرصے بعد واپس ملی تھی بعد میں احساس ہوا کہ آپ افسانوں کی بات کر رہے ہیں۔ :)

    ویسے بر سبیل تذکرہ کہ یہ شاعری اور افسانوں کی کتابیں خریدنا تو دور کی بات میں نے ان کو کچھ سالوں سے پڑھنا بھی چھوڑ رکھا ہے۔ کئی سالوں سے سیاسیات، تاریخ اور بعض کچھ اسی قسم کے نان فکشن موضوعات زیرِ مطالعہ ہیں! :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  16. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    کسی کو اپنے پیٹ پر لات لات محسوس ہوئی ؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3
  17. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    5,746
    جھنڈا:
    Pakistan
    افسانے پڑھنے کو ہمارا دل بھی نہیں چاہتا۔۔۔
    کیوں کہ پہلے سے ہی پتا ہوتا ہے کہ اپنے من کی گھڑی ہوئی باتیں ہیں!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    23,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    یہ شاید عمر کا تقاضہ ہے۔ آج سے بیس پچیس تیس سال پہلے میں انہی کتابوں کے پیچھے دیوانہ ہوا پھرتا تھا، اب دیکھنے کو بھی دل نہیں کرتا۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1
  19. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    23,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    پڑھنے کو دل نہ کرنا دوسری چیز ہے، میرا بھی نہیں کرتا۔

    لیکن صنف 'افسانہ' ہی کی تو تنقیص نہ کر دیں سر۔ جسے آپ من گھڑت کہہ رہے ہیں وہی تخیل آفرینی ہے۔ افسانہ نگار بھی ہمارے ہی معاشرے سے ادھر ادھر سے اپنی کہانی لیتا ہے اور پھر اپنے فن اور تخیل سے اسے ادب کی ایک صنف بنا دیتا ہے۔
     
    • متفق متفق × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اس عمر تک پہنچتے پہنچتے بندہ دنیا کی حقیقت بھی دیکھ لیتا ہے اور افسانوں وغیرہ کی کشش زائل ہوجاتی ہے ۔ :)
     
    • متفق متفق × 2

اس صفحے کی تشہیر