آپ کیا پڑھ رہے ہیں؟

نبیل نے 'مطالعہ کتب' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 24, 2007

  1. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    2,683
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Cool
    اطہر پرویز کی کتاب ”علی گڑھ سے علی گڑھ تک“ مزہ دے رہی ہے
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  2. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    28,662
    ۔
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  3. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    28,662
    کچھ اقتباس یا اقتباسات اگر شیئر کر سکیں تو کیجیے گا فہد بھائی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  4. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    2,683
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Cool
    جی انشاء اللہ
     
  5. محمد داؤد

    محمد داؤد محفلین

    مراسلے:
    45
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    عنایت اللہ کی "ایوبی،غزنوی اور محمد بن قاسم پاکستان میں" ابھی کل ہی ختم کی ہے۔ دلچسپ ہے۔اِس میں یہ تینوں کردار جنت سے پاکستان میں آتے ہیں اور یہاں کے حالات دیکھتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  6. محمد داؤد

    محمد داؤد محفلین

    مراسلے:
    45
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    آج لائبریری میں کتابیں واپس کر رہاہوں تو سوچا کہ انہیں محفل پہ شئیر کروں ۔
    پچھلے کچھ عرصہ میں میں نے مندرجہ ذیل کتابیں پڑھیں۔
    1۔صلیبی جنگیں۔۔۔ٹیری جونز، الین اریرا۔۔۔۔ترجمہ: ڈاکٹر امان اللہ قریشی( مجھے یہ تاریخ بہت پسند ہے ،خاص طور پہ صلاح الدین ایوبی)
    2۔ایمرجنسی۔۔۔۔۔صدیق سالک( یہ مجھے بہت اچھی لگی)
    3۔اسٹیفن ہاکنگ۔۔۔مائکل وائیٹ،جان گریبن۔۔۔ترجمہ: شاکر عثمانی
    4۔نیوٹن۔ ۔۔۔۔۔۔۔کیری لوگن ہولی مین۔۔۔۔۔ترجمہ و اضافہ: محمد احسن
    5۔میری جدوجہد۔آپ بیتی۔۔۔ہرایڈ ولف ہٹلر۔۔۔۔۔ترجمہ: محمد بابر جاوید
    6۔حجاج بن یوسف۔۔۔۔الماس ایم اے( اچھی تحریر نہیں ہے۔ اسے تاریخ ہی نہیں لکھنی آتی)
    7۔جب ڈھاکہ جل رہا تھا۔۔۔اے حمید( بالکل اچھی نہیں)
    8۔پیرِ کامل۔۔۔عمیرہ احمد( بہت اچھی)
    9۔ مرا ۃُ العروس۔۔۔۔ڈپٹی نذیر احمد( اچھی ہے)
    10۔آئن سٹائن۔۔ترجمہ۔اوپی نامی
    11۔ہیری پوٹر اینڈ دا پرزنر آف ایزکابان۔۔۔جے کے رالنگ(انگریزی میں)
    12۔ رابنسن کروزو۔۔ڈینئل ڈیفو(انگریزی میں)
    ( حیرت ہے کہ انگریزی ٹائپ نہیں ہورہی،میں نے کئی بار انگریزی کی آپشن پہ کلک کر کے ٹائپ کرنے کی کوشش کی ہے لیکن کرسر کھڑا رہتا ہے،لکھتا نہیں۔)
     
    آخری تدوین: ‏اکتوبر 28, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  7. محمد داؤد

    محمد داؤد محفلین

    مراسلے:
    45
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    اس کی سمری بتائیے۔۔۔
     
  8. ربیع م

    ربیع م محفلین

    مراسلے:
    173
    متفق
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  9. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    3,302
    جھنڈا:
    Pakistan
    لائبریری والوں نے ایک ساتھ بارہ کتابیں کیسے ایشو کردیں!!!
     
  10. محمد داؤد

    محمد داؤد محفلین

    مراسلے:
    45
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    مختلف لوگوں کے نام پہ ایشو ہوئیں۔۔۔اور چند لوگوں کو استثنا بھی حاصل ہے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  11. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    20,620
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    سابق انڈین وزیرِ خارجہ، وزیرِ دفاع اور وزیرِ خزانہ، جسونت سنگھ کی خود نوشت
    A Call to Honour: In Service Of Emergent India

    جسونت سنگھ، بی جے پی کے ان معدودے چند سینیئر راہنماؤں میں سے تھے جن کا پس منظر راشٹریہ سوئم سیوک سَنگھ (آر ایس ایس) کا نہیں تھا اور وہ کبھی آر ایس ایس کے رکن نہیں رہے اور بی جے پی میں یہ واقعی ایک عجیب بات تھی۔ دوسرے وہ واجپائی کے ساتھ ساتھ بھاج پا میں ایک معتدل مزاج کے آدمی سمجھے جاتے تھے اور شاید یہی وجہ تھی کہ واجپائی نے اپنے چھ سالہ وزارتِ عظمیٰ کے دور (1998 تا 2004ء) میں جسونت سنگھ کو اپنے ساتھ ساتھ رکھا اور انتہائی اہم وزارتوں پر فائز کیا۔

    جسونت سنگھ راجپوتانہ (راجستھان) کے ایک ٹھاکر راٹھور راجپوت خاندان میں پیدا ہوئے اور صحرا میں پلے بڑھے، انڈین آرمی میں کمیشن لیا اور 1962ء اور 1965ء کی جنگوں میں حصہ لیا لیکن پھر استغفیٰ دے کر سیاست میں آ گئے۔ راجستھان کے بھاج پا کے بزرجمہر بیروں سنگھ شیکھاوت ان کے سیاسی گرو تھے اور وہی ان کو جَن سَنگھ میں لائے جو 1980ء میں بے جے پی بنی۔ بھاج پا کی سیاسی جد و جہد ایک لمبی تاریخ ہے لیکن بہرحال 1998ء میں بھاج پا مستقل اقتدار میں آ گئی تو جسونت سنگھ بھی واجپائی کے ماتحت چھ سال تک تین اہم وزارتوں پر فائز رہے۔

    2004ء کے انڈین الیکشنز انڈیا میں اس لحاظ سے منفرد تھے کہ بھاج پا نے اپنی سیاسی تاریخ میں پہلی بار فرقہ وارانہ مسائل اور مذہبی سیاست کی بجائے، چھ سال حکومت میں رہنے کے بعد، "انڈیا شائننگ" کے نعرے کے تحت یہ الیکشن لڑے اور بری طرح ہار گئے۔ اور اسی 2004ء کی ہار ہی سے بھاج پا کے کچھ سینیئر لیڈروں کا زوال شروع ہوا جن میں واجپائی، آڈوانی اور جسونت سنگھ شامل تھے۔ واجپائی ریٹائر ہو گئے۔ آڈوانی چونکہ سخت گیر تھے اور جماعت میں آر ایس ایس کے نمائندہ، سو چلتے رہے اور 2009ء کے الیکشنز انہی کی سربراہی میں لڑے گئے اور پھر ہار گئے۔ 2014ء میں مودی نے آڈوانی کی ایک نہ چلنے دی اور اب آڈوانی بھاج پا میں بس تاش کے شاہ جیسے ہی ہیں۔

    جسونت سنگھ بھی 2004ء کے بعد آر ایس ایس کے عتاب ہی میں رہے۔ آڈوانی نے 2005ء میں پاکستان کا دورہ کرتے ہوئے کراچی میں مزارِ قائد پر حاضری دی اور قائد اعظم کی 11 اگست 1947ء کو پاکستان کی آئین ساز اسمبلی سے خطاب کی تعریف کیا کر دی کہ انڈیا میں کہرام مچ گیا، ہنگامے پھوٹ پڑے، آڈوانی جیسا آدمی زیرِ عتاب آ گیا تو جسونت کس کھیت کی مولی تھے۔ جسونت سنگھ نے 2009ء میں قائد اعظم پر لکھی اپنی ایک کتاب میں بھی ان کی تعریف کر دی، بس وہ بھی زیرِ عتاب آ گئے اور پارٹی سے نکال دیئے گئے، کچھ عرصہ بعد آڈوانی کی مداخلت سے واپس آ گئے۔ گو جسونت، نہرو کے شدید ناقد بھی سمجھے جاتے ہیں خاص طور پر 1937ء کے الیکشنز میں یو پی میں نہرو کی مسلم لیگ سے وعدہ خلافی (جسونت ان الیکشنز اور نہرو کے اس رویے کو ہند کی تقسیم کی وجہ سمجھتے ہیں)، نہرو کی چائنہ پالیسی اور 1962ء کی جنگ میں چین کے ہاتھون عزیمت وغیرہ لیکن آر ایس ایس کو اصل دکھ قائد اعظم کی تعریف پر تھا (نہرو پر تنقید تو سَنگھ پریوار کا ہر رکن کرتا ہے) جیسا کہ آڈوانی کیس میں اس سے پہلے ہوا تھا۔

    2014ء کے الیکشنز میں پارٹی نے نہ جسونت کو ٹکٹ دیا نہ ان کے بیٹے کو، بلکہ ان کے آبائی حلقے میں ایک ایسے منحرف کانگریسی جاٹ کو ٹکٹ دے دیا جو پچھلی کئی دہائیوں سے یہاں سے کانگریس کے ٹکٹ پر بھاج پا کے خلاف لڑتا تھا۔ جسونت سنگھ نے اس فیصلے پر احتجاج کرتے ہوئے آزاد امیدوار کے طور پر الیکشن لڑنے کا اعلان کیا تو ایک بار پھر پارٹی سے نکال باہر کئے گئے اور پھر یہ الیکشن بھی ہار گئے۔ الیکشن کے کچھ عرصے بعد اپنے باتھ روم میں گر گئے تو سر میں شدید چوٹیں آئیں اور تب سے اب تک "کومے" کی حالت میں ہیں۔

    یہ کتاب 2006ء میں چھپی تھی، سو اس میں 2009ء اور 2014ء والا "ایکشن" نہیں ہے۔ طرزِ تحریر کسی حد تک فلسفیانہ، گنجلک اور پیچیدہ ہے لیکن بہرحال انڈین سیاسیات میں ایک اہم کتاب ہے۔

    [​IMG]
     
    آخری تدوین: ‏نومبر 2, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • معلوماتی معلوماتی × 3
  12. محمد داؤد

    محمد داؤد محفلین

    مراسلے:
    45
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    اسلامی جنگیں۔رفیق انجم، شفیقی عہدی پوری۔۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. جاسمن

    جاسمن لائبریرین

    مراسلے:
    5,558
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    برٹش راج میں انہوں نے کامیوں کی جو فہرست بنائی تھی۔۔۔مجھے اس حوالہ سے کوئی آرٹیکل یا کتاب کا نام چاہیے۔۔۔۔جس میں کامیوں کے بارے ذکر ہو۔
     
  14. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    2,683
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Cool
    کامیوں؟ اور انہوں کون؟
     
  15. محمد داؤد

    محمد داؤد محفلین

    مراسلے:
    45
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    کامی۔۔۔۔
    انگریزوں نے
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  16. Muhammad Qader Ali

    Muhammad Qader Ali محفلین

    مراسلے:
    890
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  17. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    27,978
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Aggressive
    چھٹیوں کے لئے کتابوں کی ایک بڑی تعداد لائبریری اور ایمزون سے لی ہے معلوم نہیں پڑھنے کا وقت ملتا ہے یا نہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    8,478
    موڈ:
    Cheerful
    امریکی خلاباز سکاٹ کیلی کی خود نوشت Endurance انشاللہ پڑھنے کا ارادہ ہے۔ کیلی نے تقریبا ایک سال بین الاقوامی خلائی سٹیشن میں گزارے۔ یہ کتاب ان کے اس عرصہ میں ہونے والے تجربات اور واقعات پر مبنی ہے۔
    اس کتاب کے کچھ دلچسپ اقتباسات نیشنل جیوگرافک میگزین کے اگست ۲۰۱۷ ٫ کے شمارے میں شائع ہوچکے ہیں۔
     
    آخری تدوین: ‏دسمبر 8, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  19. جاسمن

    جاسمن لائبریرین

    مراسلے:
    5,558
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    کتاب خریدیں گے؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    8,478
    موڈ:
    Cheerful
    جی ہاں ای بک مناسب قیمت پر دستیاب ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر