’’سر نہیں ڈھانپ سکتی‘‘ بھارتی کھلاڑی ایران سے باہر

محمد عدنان اکبری نقیبی نے 'کھیل اور کھلاڑی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 14, 2018

  1. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    12,923
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    [​IMG]

    شطرنج کی بھارتی کھلاڑی سومیا سوامی ناتھ نے ایران میں ایک مقابلے میں شرکت سے اس لیے انکار کر دیا ہے کیوں کہ اسے سر ڈھانپنے کی شرط منظور نہیں ہے۔سومیا سوامی ناتھ جو کہ عالمی سطح پر سابقہ جونئیر چیمپئن بھی ہیں ان کا کہنا ہے کہ اگلے ماہ شروع ہونے والے ’ایشین نیشنز چیس کپ‘ کا ڈریس کوڈ ان کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔

    [​IMG]
    29 سالہ سوامی ناتھ کا کہنا ہے کہ ’’ اپنے سر کو ڈھاپنے کا ایرانی قانون میرے بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے کے علاوہ آزادیٔ اظہار، اپنے خیالات اور اپنے مذہبی آزادی کے خلاف ہے۔‘‘سوامی ناتھ کا مزید کہنا ہے کہ ’’ میں یہ بات سمجھتی ہوں کہ کھیل کے دوران ہمیں اپنے ممالک کا یونیفارم پہننا ہوتا ہے لیکن کھیل میں زبردستی کے ڈریس کوڈ کا کوئی جواز نہیں ہے۔‘‘

    [​IMG]
    یاد رہے کہ 1979ء کے اسلامی انقلاب کے بعد سے وہاں خواتین پر اپنا سر ڈھانپنے کا قانون نافذ ہے۔
    ربط
     
    • معلوماتی معلوماتی × 4
    • غمناک غمناک × 1
  2. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,021
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    ایرانی فٹبال ٹیم کو بھی ایک امریکن کمپنی نے جوتے دینے سے انکار کر دیا ہے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 3
    • متفق متفق × 1
  3. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    6,003
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    کس وجہ سے؟
     
  4. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    2,385
  5. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    2,385
    اس خبر کو اتنے بڑے بڑے اخباروں نے چھاپا ہے
    ویسے یہ جو ان خاتون نے کیا ان کا ذاتی مسئلہ ہے لیکن اس سے یہ بات بھی ظاہر ہوتی ہے کہ انہیں اپنے گیم سے کتنی محبت ہے
    اگر چند گھنٹے اسکارف پہن لیتی اور اپنے حقوق کی قربانی دے دیتی (جنہیں میں بھی مانتا ہوں) تو انڈیا کو ایک اور میڈل دلا دیتی
    فوجی تو اپنی جان دے دیتے ہیں ملک کا سر بلند کرنے کے لئے اور اپنے سب سے بڑے حق (زندہ رہنے) سے ہمیشہ کے لئے محروم ہو جاتے ہیں. اس طرح کی قربانیاں ملک کے لئے دے دینی چاہیئیں
    اس کے ساتھ ساتھ وہ اپنا احتجاج بھی ریکارڈ ضرور کرواتی میرے خیال میں اس سے اسے زیادہ بلندی ملتی
     
    • متفق متفق × 5
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  6. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,482
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    عنوان میں "بھارتی کھلاڑی ایران سے باہر" پڑھ کر تو ایسا لگ رہا ہے گویا اسے ایران سے نکال باہر کیا گیا ہو لیکن خبر پڑھنے پر پتا چلا کہ اس نے ایران جانے پر چار حرف بھیج کر وہاں جانے سے خود انکار کیا۔
    کیا گھٹیا صحافت ہے۔
     
    • متفق متفق × 5
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  7. مریم افتخار

    مریم افتخار مدیر

    مراسلے:
    4,250
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    اس کے خیال میں شاید وہ اس طرح ملک کا نام زیادہ روشن کر رہی ہو.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    12,923
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    سوامی کا انکار درحقیقت انڈیا کی سیاسی انتہا پسندی کا پرچار ہے ۔
     
    • غیر متفق غیر متفق × 4
  9. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,021
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    ایران پر امریکہ کی پابندیوں کی وجہ سے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  10. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,482
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    اگر کل کلاں کو کوئی ملک یہ قانون بنا دے کہ یہاں صرف برہنہ ہو کر مقابلوں میں حصہ لیا جا سکے گا تو کیا تب بھی آپ یہی دلیل دیتے؟
    کیونکہ آپ کے تمام دلائل ثانوی صورت کو بھی اتنا ہی سپورٹ کرتے ہیں، کیا ہو جاتا اور فوجیوں کی قربانی وغیرہ وغیرہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • متفق متفق × 2
  11. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,021
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    ایک تو یہ کہ ایران اور انڈیا کے تعلقات بہت اچھے ہیں سو یہ کوئی سفارتی جنگ نہیں ہو سکتی۔

    دوسرے یہ کہ مذکورہ خاتون کا فیصلہ، اگر اسے درست لگتا ہے تو پھر، درست ہے۔ ایسی پابندیاں نہیں ہونی چاہیئں۔ جب طالبان نے پابندی لگائی تھی کہ مرد بھی نیکر پہن کر فٹبال نہیں کھیل سکتے اور پاکستانی فٹبال ٹیم کو وہاں نیکر پہن کر کھیلنے پر قید کیا گیا تھا اور انکے سر مونڈ کر چھوڑا گیا تھا وہ بھی ایسی ہی پابندی تھی جیسی ایران کی ہے!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  12. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,021
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  13. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    12,923
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    سوامی ناتھ کا موقف اس کے کلچر اور اس کے مذہبی اعتبار سے ٹھیک ہے اور ایران کے اپنے قوانین بھی ریاست چلانے کے لیے بنائے گئے ہیں مگر اس بات کو عالمی میڈیا پراچھلنا شاید مناسب نہیں ، مجھے یہ خبر حجاب کے خلاف چلائی گئی مہم کا حصہ لگا رہی ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • متفق متفق × 1
  14. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    لازمی طور پر سر ننگا رکھنا ہندو مذہب میں ضروری نہیں ہے، اگر اس کے مذہب میں سر ننگا رکھنا ضروری ہوتا تو کہا جاسکتا تھا کہ اس کے مذہبی حقوق کی خلاف ورزی ہو رہی ہے۔ نہ ہی اس کے کلچر میں سر ننگا رکھنا لازمی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  15. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    2,385
    آپ نے جو برہنہ ہونے والی مثال تھی اس پر افسوس ناک خ
    حیرت کا اظہار کرنا چاہوں گا
     
    • متفق متفق × 1
  16. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    2,385
    یہ مثال زیادہ مناسب ہے
    اس کے مقابلے میں وہ مثال دیکھیں جو ایک اور محفلین نے دی تھی
    ہم کب سیکھیں گے کہ کب کونسی بات کس جگہ مناسب ہے
    ان صاحبہ نے احتجاج کا ایک طریقہ اپنایا جو انہوں نے مناسب سمجھا
    بات اس پر ہوسکتی ہے کہ پردے کی پابندی کس طرح، انسانی، مذہبی حقوق سے متصادم ہے. اور یہ پہلو بھی نکلتا ہے کہ فردی حقوق اور اجتماعی حقوق میں کیا بیلینس ہونا چاہیے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  17. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    6,571
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
  18. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    34,705
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Cheeky
    یاد رہے کہ تمام خواتین پر پردے کی پابندی ایک ماڈرن اختراع ہے۔
     
    • متفق متفق × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  19. جان

    جان محفلین

    مراسلے:
    721
    اگر کوئی کہے کہ وہ برہنہ ہوئے بغیر مقابلے میں حصہ نہیں لے سکتا تو اس صورت میں بھی شخصی آزادی متاثر ہو گی؟ سوال یہ ہے کہ "شخصی آزادی کا معیار کیا ہے؟" کیونکہ تب بھی یہ بات اتنی ہی درست ہو گی جتنی اس محترمہ کی درست ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏جون 14, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  20. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,482
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    میں نے تو آپ کی دی ہوئی دلیلوں کے متعلق ہی پوچھا ہے کہ وہ جبراً سر ڈھانپنے کی طرح جبری برہنگی کی صورت میں بھی اتنی ہی زوردار ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2

اس صفحے کی تشہیر