1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

میر کیا کہیے کیا رکھے ہیں ہم تجھ سے یار خواہش ۔ میر تقی میر

فرخ منظور نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جنوری 8, 2013

  1. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,633
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    کیا کہیے کیا رکھے ہیں ہم تجھ سے یار خواہش
    یک جان و صد تمنّا، یک دل ہزار خواہش

    لے ہاتھ میں قفس ٹک، صیّاد چل چمن تک
    مدّت سے ہے ہمیں بھی سیرِ بہار خواہش

    نَے کچھ گنہ ہے دل کا نےَ جرمِ چشم اس میں
    رکھتی ہے ہم کو اتنا بے اختیار خواہش

    حالآنکہ عمر ساری مایوس گزری تس پر
    کیا کیا رکھیں ہیں اس کے امیدوار خواہش

    غیرت سے دوستی کی کس کس سے ہو جے دشمن
    رکھتا ہے یار ہی کی سارا دیار خواہش

    ہم مہرورز کیونکر خالی ہوں آرزو سے
    شیوہ یہی تمنّا فن و شعار خواہش

    اٹھتی ہے موج ہر اک آغوش ہی کی صورت
    دریا کو ہے یہ کس کا بوس و کنار خواہش

    صد رنگ جلوہ گر ہے ہر جا وہ غیرتِ گل
    عاشق کی ایک پاوے کیونکر قرار خواہش

    کرتے ہیں سب تمنا پر میر جی نہ اتنی
    رکھےگی مار تم کو پایانِ کار خواہش

    (میر تقی میر)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 1
  2. شیزان

    شیزان لائبریرین

    مراسلے:
    6,469
    موڈ:
    Cool
    ہمیشہ کی طرح اعلیٰ انتخاب فرخ صاحب
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,633
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت شکریہ شیزان صاحب!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر