پاکستان کو ہم نے کیا دیا۔۔۔

سیدہ شگفتہ نے 'اپنا اپنا دیس' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 10, 2007

  1. تفسیر

    تفسیر محفلین

    مراسلے:
    3,088
    [​IMG] خبر بعد میں لیں ۔ پہلے یہ بتائیں کہ آپ نے اب تک یہ ٹاپیک کیوں نہیں پڑھا۔:confused:
    خُود کُش حملے: ایک اور سوال
     
  2. زرقا مفتی

    زرقا مفتی محفلین

    مراسلے:
    3,591
    جھنڈا:
    Pakistan
    شگفتہ جی
    بہت اچھی پوسٹ ہے۔
    مجھے ہر گزرتے دن کے ساتھ اپنی بے عملی اور کم ہمتی پر افسوس ہوتا ہے کہ میں اب تک پاکستان کے لئے کچھ بھی نہیں کر سکی۔
    سوائے اس کےکہ کچھ غریب بچوں کی کی فیس ادا کردی اور اور کچھ غریب بچیوں کی شادیاں کروادی اور ایک دو غریب لوگوں کو اپنا گھر بنانے مین مدد کی۔
    مگر مجھے بہت افسوس ہے کہ میں کوئی منظم کوشش نہیں کر سکی ۔البتہ کچھ منظم کام کرنے کا جذبہ ابھی زندہ ہے
    میں یتیم بچوں کے لئے ایک سکول بنانا چاھتی ہوں
    کچھ ذہین بچے غربت کی وجہ سے سکول کے بعد اپنی تعلیم جاری نہیں رکھ پاتے ایسے بچوں کی اعلیٰ تعلیم کے لئے ایک فنڈ قائم کرنا چاہتی ہوں۔
    میں چاھتی ہوں کہ ایک ایسا اسلامی بنک زکٰوۃ فنڈ سے قائم کیا جائے جو غریب لوگوں بالخصوص عورتوں کروزگار کے لئے قرضَِ حسنہ فراہم کرے ۔
    پسماندہ علاقوں میں ہنر سکھانے کے لئے ورکشاپس قائم کرنا چاہتی ہوں
    مجھے معلوم ہے کہ میرے جیسے بہت سے پاکستانی ہیں جو اپنی اپنی حیثیت کے مطابق کسی کے دکھ درد میں شامل ہوتے ہیں۔مگر اجتماعی کوشش میں جو برکت ہوتی ہے وہ انفرادی کام میں نہیں ہوتی
    مجھے فرحت کیانی کی پوسٹ پڑھ کر بہت خوشی ہوئی
    ان کے لئے دُعا گو ہوں
    والسلام
    زرقامفتی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. محب علوی

    محب علوی لائبریرین

    مراسلے:
    11,262
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    بہت اچھا دھاگہ شروع کیا گیا ہے اور اس سے بہت سے لوگوں کے جذبہ حب الوطنی کا اور ان کی نیک خواہشات کا پتہ چلا ہے۔ جو لوگ کچھ کام کر چکے یا کرنا چاہتے ہیں انہیں بھی اس سے بہت تحریک ملے گی اور شاید کچھ خیالات جو کسی کا خواب ہی ہیں اب تک انہیں کوئی پڑھ کر مستقبل قریب میں تعبیر دے سکے۔

    دینے کے حوالے سے تو چیزیں بہت کم ہیں لینے کے مقابلے میں مگر اتنا ضرور ہے کہ جو لیا اس پر احسان مند ہوں اور اپنے ملک پر فخر ہے اور گردن جھکی ہوئی نہیں۔ ملک کا ذکر جب بھی چھڑا محبت سے ہی چھڑا اور ہر محاذ پر پرزور دفاع کیا اور پاکستان کے مثبت پہلوؤں کا اجاگر کیا اور معذرت خواہانہ رویہ اختیار کرنے والوں سے کھل کر اختلاف کیا۔ اگر کسی نے ملک کی برائیاں ہی بتلائیں تو اسے ملک کی اچھائیوں کی طرف بھی نظر ڈالنے کو کہا اور جس کے برتے پر برائیاں گنوائی اس کے منفی پہلوؤں کو اجاگر کرکے سمجھانے کی کوشش کی کہ اچھائیاں برائیاں ہر جگہ ہیں تو آپ جانبداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے میرے ملک کی صرف برائیاں اور دوسرے ممالک کی صرف اچھائیاں ہی کیسے گنوا سکتے ہیں۔

    زیادہ کام زبان سے ملک و قوم کے تشخص اور تصور کا بہتر طور پر اجاگر کرنے کا ہی کیا ہے جہاں پوری دنیا اور بہت سے نادان ہم وطن پاکستان کی برائیاں کرنے میں ہی مصروف نظر آتے ہیں وہاں انہیں پاکستان کی خوبیاں گنوانے میں کبھی ہچکچاہٹ اور تامل محسوس نہیں کیا اور اس معاملے میں اپنے پرائے کی بھی کبھی تمیز نہیں رکھی۔

    ایک عمومی رویہ جس سے میں شاکی رہا ہوں اور تا عمر رہوں گا وہ یہ ہے کہ کچھ لوگ بیرون ملک جا کر یا باہر سے آنے والوں کے زیر اثر آ کر پاکستان میں ہر وقت کیڑے تلاش کرتے رہتے ہیں اور ان کی زبان تھکتی نہیں پاکستان پر تنقید کرتے اور باقی ممالک کی تعریفیں کرتے۔ ایسے لوگوں سے میں ہمیشہ الجھ پڑتا ہوں ، میرے چچا ، میرے کچھ کزن ، دوست جو بھی اس رویے کا مرتکب ہوا اس سے میں نے تعلق کی پرواہ نہیں کی اور خاموشی سے پاکستان پر تنقید نہیں سنی بلکہ انہیں ان کی تصوراتی جنت سے نکال کر حقیقی دنیا میں لانے کا کام ضرور کیا۔ بہت سے لوگ یہ دلیل دیتے ہیں کہ آپ نے باہر کی دنیا نہیں دیکھی اس لیے یہ بات کر رہے ہیں مگر ایک سال میں باہر بھی رہ آیا اور میں اپنے تجربے کی حد تک یہ کہہ سکتا ہوں کہ اگر زندگی عمارتوں ، ٹیکنالوجی ، سسٹم کا نام ہے تو وہ مغرب میں ہے مگر اگر زندگی رویوں ، اخلاص ، محبت اور تہذیب کا نام ہے تو پاکستان میں زندگی رواں دواں ہے ، میری اس بات سے زندگی کو مادیت سے ہٹ کر محسوس کرنے والے وہ دوست جو بیرون ملک زندگیاں گزار رہے ہیں ضرور تائید کریں گے۔

    سب سے بڑھ کر اپنی شناخت پر شرمندہ ہونے کی بجائے اسے من و عن قبول کریں اور دنیا کو بتائیں کہ ہم اچھے لوگ ہیں چند لوگوں کی برائی پر آپ ساری قوم کو برا مت سمجھیں۔ ایک واقعہ اور مجھے یاد آ رہا ہے مگر بات اور طرف چلی جائے گی ویسے بھی موضوع سے ہٹ کر کافی باتیں کر دی ہیں میں نے ، شاید پاکستان کو حقیقی طور پر کچھ نہ دینے کا احساس ہے جو شرمندہ کیے ہوئے ہیں مگر مجھے خوشی ہے کہ کم از کم مجھے یہ احساس تو ہے کہ میں مقروض ہوں اور مجھے اس مٹی کے بہت سے قرض اتارنے ہیں اپنے بہت سارے ہم وطنوں کے ساتھ مل کر۔

    ایک سوال اور جو لوگوں کو پریشان رکھتا ہے وہ یہ ہے کہ وہ پاکستان کو کچھ دینا چاہیں تو کس طرح اور کیا کرکے وہ پاکستان کو کچھ لوٹا سکتے ہیں۔ یہ سوال بہت اہم ہے کیونکہ ہر شخص مالی مدد نہیں کر سکتا ہر شخص کوئی تنظیم نہیں بنا سکتا ہر شخص کفالت نہیں کر سکتا ہر شخص پڑھا بھی نہیں سکتا مگر ہر شخص زبان اور تحریر سے پاکستان کا مثبت اور روشن تصور ضرور پھیلا سکتا ہے اور قائم کر سکتا ہے۔ نبیل نے بہت سے لوگوں کی مشکل یہ فورم قائم کرکے ختم کر دی ہے اور لوگ یہاں اظہار کرکے اپنے جذبات رقم کرکے کم از کم اپنے خوابوں کا اظہار اور اپنی غلطیوں کا اعتراف ضرور کر سکتے ہیں اور اردو کی ترقی و ترویج کرکے ملک کی صحیح معنوں میں خدمت کر سکتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  4. فیصل عظیم فیصل

    فیصل عظیم فیصل محفلین

    مراسلے:
    3,623
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    پاکستان ایک نظریاتی مملکت ہے ۔ اس کے محافظین کا کام اسکی سرحدوں کی حفاظت ہے ۔ چاہے وہ سرحدیں نظریاتی ہوں یا پھر جغرافیائی ۔ جب سیاست کو کاروبار بنالیا جائے اور مذھب کو کسی ایک نقطہ نظر کے مطابق ہی تصور کر لیا جائے تو قومیں انتشار کا شکار ہوا ہی کرتی ہیں ۔ بدقسمتی سے ہمارے مذہبی رہ نما اپنا معاشرے میں موجود مقام جان کر خوش نہیں ہیں اور وہ سیاسی میدان میں آکر سیاستدانوں کی برابری کرنا چاہتے ہیں جبکہ وہ ان سے کہیں افضل ہیں ۔ فوج جو کرتی ہے درست کرتی ہے یا غلط اس سے پہلے ہمیں یہ ماننا پرے گا کہ فوج ہم میں سے ہے ہم فوج میں سے نہیں ۔ ایک پرویز مشرف کی غلط پالیسی کو پوری فوج کی غلط پالیسی نہیں کہ سکتے ۔ پرویز مشرف نے مولویوں کے خلاف کاروائی کی اس پر کئی آراء ہو سکتی ہے ۔ کچھ اسے غلط کہیں گے تو کچھ اسے درست بھی کہ سکتے ہیں انکے دلائل یہ ہونگے کہ اپنے لوگوں پر گولیاں چلائی تو انکے دلائل یہ ہونگے کہ انہی اپنے لوگوں نے پہلے فوج کے ایک سپاہی کو مارا ۔ پھر کئی سپاہیوں پر گولیاں چلائی اور کئی کو زخمی کیا کئی سپاہیوں کو قتل کیا ۔ قانون کو ہاتھ میں لیا ۔ مسجدوں میں اسلحہ لے کر آئے ۔ اسلامی ملک میں مسلمان حکومت کے خلاف علم بغاوت بلند کیا ۔ اللہ تعالی کے اس فرمان کی نفی کی جس میں اپنے حاکم کی اطاعت کرنے کا حکم دیا گیا ہے ۔ زمین پر فساد پھیلانے والوں کے متعلق اللہ تعالی کا یہ فرمان ہے کہ جب ان سے کہا جاتا ہے زمین پر فساد مت پھیلاؤ تو کہتے ہیں کہ ہم فساد کہاں پھیلاتے ہیں ہم تو اصلاح کرنے والے ہیں ۔ وغیرہ وغیرہ بے شک ایسی بحثیں لامتناہی ہوا کرتی ہیں اور انکے نتیجے میں صرف بحث برائے بحث ہوا کرتی ہے کیا خیال ہے کہ اگر ہم اس کی بجائے کہ فوج کا کردار کیا ہے اور مولویوں کا کردار کیا ہے اور سیاستدان کیسے لوٹ کر ملک و قوم کو کھا رہے ہیں اس بات پر بحث کریں کہ کیوں نہ ہم مل جل کر اپنی اپنی سطح پر اپنے آپ میں ایسی مثبت تبدیلیاں لائیں کہ ہم میں سے ہر ایک اپنی سطح پر ایک صحتمند اور مثبت پاکستان کا نمائیندہ ہو یقین جانیں رات لمبی ضرور ہے مگر سحر کو آنے سے کوئی نہیں روک سکتا ۔ ۔ ۔انشاء اللہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. نبیل

    نبیل محفلین

    مراسلے:
    16,624
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Depressed
    محب، ہر شخص انفرادی حیثیت میں بھی بہت کچھ کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ ہمارے معاشرے میں برائی نمایاں ہو گئی ہے۔ لیکن حقیقت یہ ہے کہ معاشرہ قائم ہے اور اس کے استحکام کی وجہ معاشرے کا درد رکھنے والے نیک لوگ ہیں۔

    اس تھریڈ میں انفرادی اور اجتماعی کاوشوں کے فرق پر روشنی ڈالی گئی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق پاکستان میں ہر سال لوگ خیرات اور زکوۃ کی مد میں مجموعی طور پر ستر ارب روپے کے قریب خرچ کرتے ہیں۔ لیکن یہ معاشرے میں تبدیلی لانے کا باعث نہیں بنتا کیونکہ یہ زیادہ تر انفرادی سطح پر کیا جانے والا عمل ہے۔
     
  6. اجمل

    اجمل محفلین

    مراسلے:
    138
    پاکستان کو ہم نے کیا دیا

    محترمات و محترمین ۔ السلام علیکم
    میری بُری عادت ہے کہ جو بات دل میں آ جائے کہہ دیتا ہوں لیکن محفل میں نیا ہونے کی وجہ سے دُبکا بیٹھا تھا ۔ اُوپر کی تحاریر پڑھ کر مجھے لکھنے کا حوصلہ ہوا ۔ میں اُن بچے کھُچے لوگوں میں سے ہوں جنہوں نے تحریکِ پاکستان اپنی آنکھوں سے دیکھی اور جو غدر دشمنوں نے مچایا اس کی جھلک بھی دیکھی ۔ اتنی محنت اور قربانیوں کے بعد اللہ سُبحانُہُ و تعالٰی کی خاص مہربانی سے یہ عظیم ملک حاصل ہوا جس کی نظیر دنیا میں کہیں نہیں ملتی ۔ دنیا کے بلند ترین پہاڑ ۔ گلیشیئر ۔ سرسز پہاڑ ۔ چٹِیّل پہاڑ ۔ سطح مرتفع ۔ ہرے بھرے میدان ۔ صحرا ۔ دریا ۔ سمندر ۔ سرد ترین سے لے کر گرم ترین موسم ۔ ہر قسم کے اور بہترین پھل ۔ ہر قسم کی اور بہترین سبزیاں ۔ دنیا کی بہترین گندم اور بہترین چاول ۔ دھاتی نمک ۔ قیمتی پتھر ۔ قیمتی جڑی بوٹیاں بشمول کھُمب اور گُچھیاں ۔ عمدہ کپاس اور گنا ۔ دنیا میں کونسا اور ملک ہے جس میں یہ سب کچھ ہے ؟

    کونسی نعمت ہے جو اللہ سُبحانُہُ و تعالٰی نے ہمیں اس ملک میں عطا نہیں کی ؟ اور ہم ہیں تو بولیں گے تو پاکستان کے خلاف ۔ کام کریں گے تو پاکستان کے خلاف ۔ ہم نے اللہ کی نعمتوں کا شکر ادا کرنے کی بجائے ان کی توہین کی ۔ میں ملک سے باہر جہاں بھی گیا کسی ہموطن کے منہ سے اپنے وطن کی تعریف نہ سُنی ۔ میرا پھر اُن سے یہی سوال ہوتا تھا "آپ کا پاکستان نے کیا بگاڑا ہے اور آج تک آپ نے پاکستان کی کیا خدمت کی ہے ؟" اس پر وہ آئیں بائیں شائیں کرنے لگتے ۔

    کسی بھائی یا بہن نے اُوپر لکھا کہ چھوٹے چھوٹے کام بھی ہوتے ہیں ۔ بالکل یہ چھوٹے چھوٹے کام ہی اصل کام ہوتے ہیں کہ قومیں اور ملک بنتے ہی انہی سے ہیں ۔ اپنے گھر کے ارد گرد کا علاقہ صاف رکھیں ۔ کسی مستحق غریب بچے کو پڑھا دیں ۔ کسی غریب نے بچی کی شادی کرنا ہے اس کی مدد کر دیں ۔ کوئی لاچار یا لاغر شخص سڑک پار کرنا چاہتا ہے تو ٹریفک روک کر سڑک پار کرا دیں ۔ کھانا زیادہ پکا کر ضائع نہ کریں بلکہ جب خود کھائیں تو کسی ایسے شخص کا خیال کریں جو بھوکا ہو ۔ ایسے بہت سے چھوٹے چھوٹے عمل ہیں جو مل کر ملک کو ترقی کی تیز رفتار ٹرین پر چڑھا دیتے ہیں ۔ ابھی بھی وقت ہے سنبھل جا اے پاکستانی ۔ ذرا سوچو تو ۔ ایک اکیلا ہوتا ۔ اس کے ساتھ ایک اور کھڑا ہو جائے تو گیارہ کے برابر ہوتے ہیں ۔ غور کیجئے
    1
    1 1
    1 1 1
    1 1 1 1
    1 1 1 1 1
    1 1 1 1 1 1
    1 1 1 1 1 1 1
    سات پرخلوص اور باہمت اکٹھے کھڑے ہو جائیں تو گیارہ لاکھ گیارہ ہزار ایک سو گیارہ کے برابر ہو جاتے ہیں ۔ آزمائش شرط ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  7. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    29,392
    ماوراء

    آپ نے کچھ نہ کچھ ضرور کیا ہے پاکستان کے لئے اور کرنا چاہا ہوگا تو مختصر ہی سہی ضرور لکھیں۔۔۔ اور امی سے جو سنا میرا دل ہے کہ اس میں بھی ضرور شریک کریں ہم سب کو۔
     
  8. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    29,392
    السلام علیکم

    تفسیر بھائی بہت شاندار !

    آپ سے بھی مزید بات کرنا ہے اب جلدی سے ٹھیک ہوکے آ جائیں ۔

    مجھے معلوم ہے آپ کم کبھی نہیں کیا کرتے !
     
  9. محب علوی

    محب علوی لائبریرین

    مراسلے:
    11,262
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    میں اتفاق کرتا ہوں اس بات سے کہ انفرادی سطح پر کیا جانے والا عمل اجتماعی سطح پر کیے جانے والے عمل سے بہت کم نتیجہ خیز ثابت ہوتا ہے اس لیے جماعت کے ساتھ کام کرنے اور رہنے کا کہا بھی گیا ہے۔ اگر ہم مل کر کام کریں تو اس کا زیادہ اثر اور دور رس نتائج برآمد ہوتے ہیں۔ مجھے امید ہے کہ اس پلیٹ فارم سے ہم کئی اور اجتماعی کام کر سکیں گے۔
     
  10. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    29,392
    السلام علیکم

    اگر ممکن ہو تو کوئی رکن اس کے بول یہاں لکھ دیں ۔

    شکریہ
     
  11. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    ابھی تو میں‌ سلو کنکشن پر ہوں‌۔ اگر کسی اور رکن نے نہ ترجمہ کیا اور مجھے پیر کے دن تیز کنکشن ملا تو میں انشاء‌اللہ بول لکھ دوں‌گا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    29,392
    السلام علیکم زرقا

    دلی خوشی ہوئی آپ کی تحریر یہاں دیکھ کر !

    آپ کی اب تک کی کوششیں اور مزید کرنے کا جذبہ قابلِ ستایش ہے ۔ زرقا یہ تو ہر ایک جداگانہ پراجیکٹ ہے اور انفرادی حیثیت میں ایک سے بڑھ کر ایک !
    آپ ترجیحاً اپنی فہرست کس طرح ترتیب دیں گی ؟

    آپ اپنے حصے کی شمعیں ضرور روشن کیجیے گا پھر ان شمعوں کو روشن رکھنا اللہ کی ذمہ داری !

    آپ کی کامیابی کے لئے بہت سی دعائیں !
     
  13. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    وعلیکم السلام شگفتہ۔۔ بہت شکریہ حوصلہ افزائی اور دعا کے لئے۔۔
    کیوں نہیں مجھے خوشی ہوگی اگر ہم اس موضوع پر مزید بات کر سکیں تو۔۔۔ مجھے یقین ہے کئی نئے آئیڈیاز بھی ملیں گے اس دھاگے پر ہونے والی گفتگو سے۔۔ :)
     
  14. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    السلام علیکم سر
    "میں نے یہ جانا کہ گویا یہ بھی میرے دل میں ہے۔" ۔۔۔ ہم لوگوں میں جذبے کی کمی نہیں ہے صرف راستہ دکھانے والے ہاتھ چاہئیں۔۔ کاروان خودبخود بنتا جائے گا۔۔۔ مجھے یقین ہے کہ جب تک آپ جیسے بزرگ رہنمائی کے لئے موجود ہیں۔۔۔ہم اپنے لوگوں کے لئے انفرادی اور اجتماعی ہر دو سطحوں پر بہت کچھ کر سکتے ہیں۔۔
     
  15. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    السلام علیکم زرقا جی!
    کیسی ہیں آپ؟؟
    بہت ساراشکریہ آ پ کی دعاؤں کے لئے اور ایک بات۔۔۔ آپ بہت اچھا اور بہت زیادہ کام کر رہی ہیں۔۔ میرے خیال میں انفرادی طور پر اتنا کچھ کرنا بہت بڑا کام ہے۔۔ کاش میں بھی اجتماعی کوششوں کے ساتھ ساتھ انفرادی طور پر بھی اتنا بہت کچھ کر سکتی۔۔
    اور جو جو کام آپ کے ذہن میں ہیں کہ آپ کریں گی ان کے بارے میں جان کر دل سے آپ کے لئے دعا نکلتی ہے کہ آپ اپنے ارادوں میں کامیاب ہوں(آمین) اور انشاءاللہ ایسا ہی ہوگا۔۔
     
  16. محب علوی

    محب علوی لائبریرین

    مراسلے:
    11,262
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    فرحت اس تنطیم کا تعارف ضرور لکھیں اور ہو سکے تو اس کے چند ممبران کو یہاں پر ضرور لائیں تاکہ سب کو پتہ ہو اور مزید کام بھی کیا جا سکے۔
     
  17. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    29,392
    فرحت مجھے بھی یہ کہنا ہے آپ سے ۔
     
  18. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    29,392
    بہت اچھا بیان کیا ۔ اس جانب بہت کم توجہ جاتی ہے ۔ اور پھر ان میں سے بھی بہت کم افراد ایسا کر پاتے ہیں عملی طور پر ۔ اچھی بات یہی ہے کہ احساس باقی رہے کچھ نہ کچھ کرنے کا تو پھر یقیناً بہت کچھ کیا جا سکتا ہے ، سوچ سے بھی بڑھ کر ۔
     
  19. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    غلط سلط بول یہ رہے

    میرے یار میرے دوست میری کائنات مدہو
    سب کھو گئے ہیں کہاں میرے دوست
    میرے یار میرے دوست
    میرا ڈھونڈتا دل بیہوش
    سب سو گئے ہیں کہاں
    میرے دوست میرے یار
    میرے دوست میری آرزو
    خاموش کیوں بھول گئے سب میرے دوست
    پر جو آج ہے کل نہ ہو
    چاہے دل نہ ہو میرا آج جو بھی ہے کل نہ ہو
    بھولو نا بھولو نا میرے یار
    ایک بار ہے ستار
    تم بدلو بدلے دل بدلنے لوگ
    میرے یار میرے دوست
    میری بندگی کے ہیرو
    کب جاگ اٹھیں گے سب میرے دوست
    میرے یار میرے دوست
    اب دوں میں کس کو دوش
    کیوں بھول گئے سب میرے نام
    جو آج ہے کل نہ ہو
    چاہے یہ دل نہ میرا
    جو آج جو بھی ہے کل نہ ہو
    بھولو نہ بھولو نہ میرے یار
    ایک بار ہے اس بار تم بدلو
    بدلے دل بدلے لوگ
    جو آج ہے کل نہ ہو
    چاہے یہ دل نہ ہو
    آج جو بھی ہے کل نہ ہو
    بھولو نہ بھولو نہ میرے یار
    ایک بار ہے اس پار
    تم بدلو بدلے دل بدلے لوگ
     
  20. عمار ابن ضیا

    عمار ابن ضیا محفلین

    مراسلے:
    6,794
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    واااؤؤؤؤ۔۔۔۔۔ قیصرانی بھائی نے میرے پسندیدہ گانے کے بول لکھے ہیں۔۔۔ شکریہ۔۔۔۔
     

اس صفحے کی تشہیر