ساغر نظامی پاس ہوتا ہے دور ہوتا ہے - ساغر نظامی

کاشفی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏فروری 22, 2014

  1. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,393
    غزل
    (ساغر نظامی)
    پاس ہوتا ہے دور ہوتا ہے
    وہ شبِ غم ضرور ہوتا ہے

    دل میں اُن کا ظہور ہوتا ہے
    میرا سینہ بھی طور ہوتا ہے

    کچھ حقیقت نہ ہو محبت کی
    نشہ سا اک ضرور ہوتا ہے

    سجدہ کرتا ہوں اُن کو مستی میں
    کتنا رنگیں قصور ہوتا ہے

    تیرا قشقہ ارے معاذ اللہ
    شامِ دارالسرور ہوتا ہے

    جتنا اُسکی طرف میں کھینچتا ہوں
    اور وہ مجھ سے دور ہوتا ہے

    تیری آنکھیں ارے معاذ اللہ
    بے پئے بھی سرور ہوتا ہے

    کیا حدیثِ نقاب و رُخ کہئے
    نور بالائے نور ہوتا ہے

    ہم بھی چاہیں جو غم سے تنگ آکر
    تو کہاں دل سے دور ہوتا ہے

    جب بھی آتا ہے بزم میں ساغر
    نشہ میں چُور چُور ہوتا ہے
     
    • زبردست زبردست × 2
  2. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,663
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm


    پاس ہوتا ہے دُور ہوتا ہے
    وہ شبِ غم ، ضرُور ہوتا ہے

    دل میں اُن کا ظہور ہوتا ہے
    میرا سینہ بھی طُور ہوتا ہے

    جتنا اُسکی طرف میں کھینچتا ہوں
    اور وہ مجھ سے دُور ہوتا ہے

    تیری آنکھیں ارے معاذ اللہ
    بے پئے بھی سرور ہوتا ہے

    کیا حدیثِ نقاب و رُخ کہئے
    نور بالائے نور ہوتا ہے
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    کیا کہنے صاحب !
    تشکّر شیئر کرنے پر
    بہت خوش رہیں :)


     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  3. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,393
    غزل کی پسندیدگی لیئے بیحد شکریہ۔ خوش و خرم رہیں طارق شاہ صاحب!
     

اس صفحے کی تشہیر