نماز جمعہ اور نماز تراویح کا باجماعت اہتمام ہوگا

فاروق سرور خان نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 16, 2020

ٹیگ:
  1. محمد سعد

    محمد سعد محفلین

    مراسلے:
    2,720
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    مساجد میں تین سے پانچ افراد کی ڈیوٹی لگانے اور باقیوں کے نماز گھروں پر ادا کرنے میں آخر کیا مسئلہ ہے؟ مساجد بھی آباد رہیں گی، مرض کا پھیلاؤ بھی رک جائے گا۔
     
    • متفق متفق × 3
    • زبردست زبردست × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  2. عبید انصاری

    عبید انصاری محفلین

    مراسلے:
    2,609
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    جب کوئی نئی صورتحال پیش آتی ہے تو اصول شرع کی روشنی میں اجتہاد کیا جاتا ہے۔ عذر کی صورت میں احکامِ شرع میں تخفیف ہونا ایک مسلمہ اصول ہے۔ ذیل میں چند احادیث نقل کر رہا ہوں جن میں عذر کی صورت میں اصل حکم شرعی میں رخصت دی گئی ہے۔ ان احادیث اور اس جیسی دوسری احادیث کی روشنی میں یہ اجتہاد کیا گیا ہے۔ میں یہاں ان پر تفصیلی کلام نہ کرسکوں گا البتہ آپ کی دلچسپی کی وجہ سے نقل کر رہا ہوں۔
    السنن الكبرى للنسائي (1/ 448) عن هشام بن عروة، عن أبيه، أن عبد الله بن أرقم، كان يؤم أصحابه فحضرت الصلاة يوما فذهب لحاجته، ثم رجع، فقال: سمعت رسول الله صلى الله عليه وسلم، يقول: «إذا وجد أحدكم الغائط فليبدأ به قبل الصلاة»

    صحيح ابن خزيمة (3/ 76) ثنا سفيان، نا الزهري، أنه سمع أنس بن مالك يحدث عن النبي صلى الله عليه وسلم أنه قال: «إذا حضر العشاء وأقيمت الصلاة فابدءوا بالعشاء

    صحيح ابن حبان - محققا (5/ 417) ذكر العذر الأول وهو المرض الذي لا يقدر المرء معه أن يأتي الجماعات:

    2065 - أخبرنا أبو يعلى قال: حدثنا جعفر بن مهران السباك قال: حدثنا عبد الوارث بن سعيد قال: حدثنا عبد العزيز بن صهيب، عن أنس قال لم يخرج إلينا رسول الله صلى الله عليه وسلم ثلاثا فأقيمت الصلاة فذهب أبو بكر يتقدم وقال رسول الله صلى الله عليه وسلم بالحجاب فرفعه فلما وضح لنا بياض وجه النبي صلى الله عليه وسلم ما نظرنا منظرا قط أعجب إلينا من وجه نبي الله صلى الله عليه وسلم حين وضح لنا قال فأومأ نبي الله صلى الله عليه وسلم بيده إلى أبي بكر أن تقدم

    اور اس کے بعد دس اعذار کا تفصیلی بیان

    سنن الترمذي ت شاكر (4/ 191) عن البراء بن عازب، أن رسول الله صلى الله عليه وسلم قال: «ائتوني بالكتف، أو اللوح»، فكتب: {لا يستوي القاعدون من المؤمنين} [النساء: 95]، وعمرو ابن أم مكتوم خلف ظهره، فقال: هل لي من رخصة؟ فنزلت: {غير أولي الضرر} [النساء: 95]. وفي الباب عن ابن عباس، وجابر، وزيد بن ثابت. وهذا حديث حسن صحيح غريب من حديث سليمان التيمي، عن أبي إسحاق وقد روى شعبة، والثوري، عن أبي إسحاق هذا الحديث


    مستخرج أبي عوانة (1/ 419) عن ابن جريج قال: أخبرني عثمان بن أبي سليمان، أن أبا سلمة بن عبد الرحمن أخبره، أن عائشة أخبرته، أن النبي صلى الله عليه وسلم «لم يمت حتى كان كثيرا من صلاته وهو جالس»
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • غمناک غمناک × 1
  3. خالد محمود چوہدری

    خالد محمود چوہدری محفلین

    مراسلے:
    12,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    اجتہاد واضع احکامات کے خلاف نہیں ہوسکتا
     
    • متفق متفق × 1
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  4. عبید انصاری

    عبید انصاری محفلین

    مراسلے:
    2,609
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    احادیث کی روشنی میں ایک نئی صورتحال سے متعلق اجتہاد کرنا واضح احکامات کے خلاف کیسے ہے؟ جبکہ میں احادیث بھی نقل کرچکا ہوں۔
    نیز یہ کہ "ایسی صورت حال" میں شریعت کے وہ کون سے "واضح احکامات" ہیں جن کی مخالفت کی جارہی ہے؟
     
    • غمناک غمناک × 1
  5. خالد محمود چوہدری

    خالد محمود چوہدری محفلین

    مراسلے:
    12,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    یہ نئی صورتحال نہیں ہے۔ اس میں دو چیزیں ہیں۔ ۱یک یہ کہ گھروں میں باجماعت نماز بھی ہوئی ہے یہاں تک کہ اذان میں گھروں میں نماز ادا کرنے الفاظ شامل کئے گئے۔ دوم یہ کہ حضرت محمدﷺ کے ارشادِ گرامی کا یہ مفہوم کہ وبائی مریض اپنے گھر یا گاؤں سے کہیں نا جائے اور نا ہی لوگ اس گھر یا گاؤں میں جائیں جہاں ایسا مرض پھیلا ہوا ہو۔
     
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  6. خالد محمود چوہدری

    خالد محمود چوہدری محفلین

    مراسلے:
    12,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
     
    • متفق متفق × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  7. عبید انصاری

    عبید انصاری محفلین

    مراسلے:
    2,609
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    "ابلاغ" کا مسئلہ عام طور پر اشعار میں ہوا کرتا ہے لیکن میں تو نثر لکھ رہا ہوں۔ ایسا کرتے ہیں کہ دونوں کچھ دیر توقف کرتے ہیں۔ تب تک آپ میری ذکر کردہ باتوں پر غور کرلیں اور میں اس پر کہ ابلاغ کس طرح کرنا ہے۔
     
    • غمناک غمناک × 1
  8. خالد محمود چوہدری

    خالد محمود چوہدری محفلین

    مراسلے:
    12,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
     
    • متفق متفق × 1
  9. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,589
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    پاکستان کے علما نے جو ماڈل پیش کیا ہے اس سے حکومت متفق ہے اور اسی پر عمل در آمد ہوگا۔ البتہ اس تھریڈ میں جو لوگ علماء پر تنقید کر کے اپنا 'مرزا' راضی کر رہے ہیں ان کی اس روش سے مجھے سخت اختلاف ہے کہ ایک آرگنائزڈ طریقے سے مخصوص لوگ علما ئے کرام کی ٹرولنگ کرتے ہیں کبھی تو مجھے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ علماء پر بے جا تنقید اردو محفل کی پالیسی کا حصہ ہو لیکن پھر حسن ظن کا سہارا لینا پڑتا ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏اپریل 18, 2020
    • مضحکہ خیز مضحکہ خیز × 4
    • متفق متفق × 1
  10. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,589
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    تو بھیا کیا میں نے آپ پر یہ لیبل لگائے؟ جس سے اختلاف ہے اس سے شکوہ کیجیے نا۔
    جہاں تک آصف اثر اور آپ کے "مباحثے" کا تعلق ہے تو اس حوالے سے میرا کردار ایک ذاتی مکالمے میں دیکھا جا سکتا ہے۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 2
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  11. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,269
    ایسے ٹھیک ہے؟

    رمضان المبارک میں احتیاطی تدابیر سے متعلق 20 نکاتی تجاوز پیش، مدارس اور امام بارگاہوں میں قالین اور دریاں نہیں بچھائی جائیں گی، کلورین سے صاف کیے گئے فرش پر نماز ہو گی، 50 سال سے زائد عمر کے افراد، بچے ، زکام ، کھانسی کے مریضوں کا مساجد میں داخلہ ممنوع ہوگا، صف بندی کے دوران نمازیوں میں 6 فٹ کا فاصلہ رکھا جائے گا، مساجد میں سحری اور افطاری کا اہتمام نہیں ہوگا، رمضان میں احتیاطی تدابیر پر عمل نہ ہونے پر حکومت فیصلے پر نظر ثانی کرے گی ۔
    صدر مملکت اور علماء کے اجلاس میں مساجد کے احاطے میں نماز تراویح کی ادائیگی پر اتفاق
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • مضحکہ خیز مضحکہ خیز × 1
  12. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,269
    سید عمران نے آپ کو نہیں بتایا؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  13. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,269
    اب شیطانی کرنے کیلئے کسی شیطان کی ضرورت نہیں رہی۔ :)
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  14. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,269
    باجماعت نماز کا بنیادی مقصد ایک دوسرے کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر ادا کرنا ہے۔ یہاں آپ نے سابق صدر ممنون حسین والی گنجائش نکالی ہے :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,269
    مسئلہ وہی ہے کہ اس طرح چندہ اکٹھا نہیں ہو سکتا۔ :sneaky:
     
  16. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,269
    یہ کوئی نئی صورتحال نہیں ہے۔ ماضی میں بھی وبا کے دوران خانہ کعبہ کا طواف و مسجد الحرام مکمل بند رہی ہے۔ اگر کوئی نئی صورتحال ہے تو وہ اس ملک کے علامہ کرام کا وبا کے دنوں میں بھی زور زبردستی مساجد اور مدرسے کھلوانے پر اصرار ہے۔
     
    • متفق متفق × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. محمد سعد

    محمد سعد محفلین

    مراسلے:
    2,720
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    اس کا بھی مسئلہ نہیں۔ بغیر رش لگائے بھی مسجد کو عطیات پہنچائے جا سکتے ہیں۔ اور اگر لوگوں کو معلوم ہو کہ وہاں رہنے والے طلباء کو کسی طرح کی پریشانی ہے تو دل کھول کر ان کے لیے ضروریات زندگی کا بندوبست کریں گے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  18. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,269
    ایک دوست نے معلومات میں اضافہ کیا کہ رمضان میں تراویح پڑھانے کے اچھے خاصے پیسے ملتے ہیں ۔ اس سے محرومی گوارا نہیں مولویوں کو۔ :)
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  19. اے خان

    اے خان محفلین

    مراسلے:
    4,503
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    ملتے ہیں میرے خیال میں اس میں کوئی قباحت نہیں وہ پیسے کروڑوں میں نہیں ہوتے اتنے ہوتے ہیں کہ بس عید اچھی گزر جاتی ہے.
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  20. محمد سعد

    محمد سعد محفلین

    مراسلے:
    2,720
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    کندھے کے ساتھ کندھا ملانے کو اس کا بنیادی مقصد نہیں کہہ سکتے۔ بنیادی مقصد اجتماعیت ہے۔ ایسے میں دور کھڑے ہونے کی گنجائش تو نکل سکتی ہے۔ مسئلہ یہ ہے کہ بالکل کندھا ملا کر نہ بھی کھڑے ہوں، تو بھی صرف غیر ضروری طور پر ایک مشترکہ کمرے میں اکٹھا ہونا ہی اپنی جگہ ایک خطرناک عمل ہے۔ ایسے بھی اشارے مل رہے ہیں کہ ممکنہ طور پر بلند آواز سے گفتگو کے دوران منہ سے اڑنے والے خردبینی ذرات بھی انفیکشن کو پھیلانے کا سبب بن سکتے ہیں۔ کمرے میں ہوا کا اچھی طرح گزر نہ ہونا مسئلے کو مزید گمبھیر بناتا ہے۔

     
    • متفق متفق × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر