تیرہویں سالگرہ محترم سید عمران صاحب سے گفتگو

نور سعدیہ شیخ نے 'محفل کی سالگرہ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 21, 2018

  1. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    اچھا یاد دلایا...
    الیکشن اور روداد کے چکر میں اچھے گھن چکر بن گئے تھے...
    ان شاء اللہ صبح !!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  2. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    سرورق پر انٹرویو ہی انٹرویو کی بہار اور جمعہ بازار!!!
     
    • پر مزاح پر مزاح × 6
  3. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    فارسی اشعار کی تلاش میں اکثر اردو محفل کا لنک سامنے آتا اور سائیڈ پر لگی محمد وارث بھائی کی ہنستی مسکراتی تصویر۔۔۔
    جب بہت بار ایسا ہوا تو ان سے ایک طرح کا غائبانہ تعارف حاصل ہوگیا۔۔۔
    ایک مرتبہ کسی فارسی شعر کے بارے میں جاننے کے لیے اردو محفل پر کچھ لکھنا چاہا تو سائن ان کی شرط آئی۔۔۔
    اکاؤنٹ بنایا اور اس دنیا میں داخل ہوگئے۔۔۔
    دیگر سوشل میڈیا کے برعکس یہاں کی انتظامیہ نے ماحول کو بہت بہتر بنایا ہوا ہے۔۔۔
    عریانی، فحاشی، گالم گلوچ، بدتمیزی اور ایک دوسرے کو ذلیل کرنے جیسی آلائشوں سے یہ جگہ بہت حد تک پاک ہے۔۔۔
    ہمارے مختلف سوشل میڈیا پر اکاؤنٹ تھے، مگر سمجھ میں نہیں آتا تھا کہ ان کا ایسا کیا استعمال کیا جائے جو دنیا یا آخرت کے لیے مفید ہو۔۔۔
    آج یہ اکاؤنٹ مدتوں سے استعمال نہ ہونے کے باعث بند پڑے ہیں۔۔۔
    اب تو یاد بھی نہیں کہ کس نام اور پاس ورڈ سے یہ اکاؤنٹ تھے۔۔۔
    فی الحال سوشل میڈیا کے نام پر اردو محفل یا واٹس ایپ سے رابطہ ہے۔۔۔
    واٹس ایپ بھی تنگ آکر اکثر ان انسٹال کردیتے ہیں۔۔۔
    پھر کسی کا میسج آتا ہے کہ ضروری فائل یا ڈاکومنٹ شئیر کرنی ہے تو دوبارہ انسٹال کرلیا۔۔۔
    آج کل ان انسٹال ہے، دیکھیں کب تک اس توبہ پر قائم رہتے ہیں۔۔۔
    بہرحال بات چل رہی تھی اردو محفل پر زندگی کے اثرات کی تو زندگی پر تو کوئی خاص اثرات نہیں پڑے، البتہ اس میڈیا کی حد تک بہت سارے اچھے لوگوں سے رابطے ہوئے، ان سے بہت سی معلومات حاصل ہوئیں، بہت سی اچھی باتیں سیکھیں، ان سے ہنسے بولے بھی اور بے کار باتیں بھی کیں، لیکن بے کار کا مقصد بھی دل و دماغ پر طاری کام کے بوجھ کو ہلکا کرنا ہوتا ہے یا بقول شخصے یہ بوجھ دوسروں کے دل و دماغ پر منتقل کرنا!!!
     
    آخری تدوین: ‏جولائی 28, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 9
    • زبردست زبردست × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  4. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    ۱) آپ کا اپنا دماغ اور ۔۔۔
    ۲) دوسروں کا آپ کو حوصلہ دینا ۔۔۔

    ۱) جب تک آپ ایسے حاکمِ مطلق نہیں بن جاتے جو دماغ کو کمفرٹ زون سے نکالنے کا سختی سے حکم نہ دے، آپ کچھ نہیں کرسکتے۔۔۔
    اگر آپ دماغ کی سستی اور کاہلی والے پیغامات پر عمل کرتے رہے تو یہ آپ کی ہمت کا گراف مسلسل نیچے سے نیچے کی طرف لے جائیں گے۔۔۔
    آپ خود کو اپنے دماغ کے کمفرٹ زون سے نکالنے میں کس حد تک کامیاب جارہے ہیں اس کا لٹمس پیپر اللہ تعالیٰ نے آپ کو دیا ہوا ہے۔۔۔
    یہ جو پانچوں وقت کی نماز پڑھی جاتی ہے اس کی کسوٹی پر اپنے آپ کو پرکھ سکتے ہیں کہ آپ کمفرٹ زون سے باہر نکلنے میں کتنا کامیاب ہورہے ہیں۔۔۔
    اگر اذان ہوتے ہی آپ ایک دم ایکٹو ہوگئے، جلدی سے نماز کی تیاری مکمل کرلی اور جماعت کھڑی ہونے سے پہلے ہی مسجد میں جاکر بیٹھ گئے تو سمجھیں آپ خود کو دماغ کے کمفرٹ زون سے نکالنے میں کامیاب ہورہے ہیں، وقت آنے سے پہلے اس کی تیاری کی یہ مشق آہستہ آہستہ آپ کی زندگی کے ہر شعبے پر محیط ہوتی چلی جائے گی۔۔۔
    یہاں یہ نہ سمجھیں کہ پہلے سے مسجد میں جاکر کیوں بیٹھیں، عین جماعت کھڑی ہونے پر کیوں نہ جائیں؟ تو اللہ تعالیٰ نے اس سلسلے میں ہماری بہت مدد کی ہے، ایک روایت یہ ہے کہ جب تک بندہ نماز کے لیے منتظر بیٹھا رہتا ہے تو وہ حالت نماز ہی میں ہے، یعنی اس کو نماز پڑھے بغیر نماز کا ثواب مل رہا ہے، دوسری روایت یہ کہ اذان سے لے کر جماعت کھڑی ہونے تک کا درمیانی وقت دعاؤں کی قبولیت کا ہے۔ آپ کو اس محنت کے صلے میں دو لاجواب تحفے نقد مل رہے ہیں، اگر خاموش بیٹھے ہیں تو نماز کا ثواب مل رہا ہے اور اگر دعائیں بھی مانگنے لگے تو سونے پہ سہاگہ کا کام ہورہا ہے۔۔۔
    اس کے برعکس اگر آپ نے اذان پر توجہ دینے کے بجائے گھڑی پر نظر رکھی کہ جب جماعت کا وقت ہوگا اس کے لحاظ سے تیاری کروں گا، پھر بھاگم بھاگ، مارے باندھے نماز پڑھنے گئے، کبھی تکبیر اولیٰ فوت ہوئی تو کبھی رکعات نکلیں اور کبھی تو جماعت ہی نکل گئی۔ یہ بے ترتیبی غمّاز ہے کہ ابھی آپ اپنے دماغ کے حاکم نہیں ہیں ، اس کی غلامی کے تحت زندگی بسر کررہے ہیں۔۔۔

    ۲) دوسروں کا آپ کو حوصلہ دینا اتنا بڑا ٹانک ہے، زندگی کی اتنی بڑی ضرورت ہے کہ اللہ تعالیٰ نے تعزیت اور عیادت کرنے کو عبادت بنا دیا ہے اور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے مسکرا کر دیکھنے کو صدقہ فرمادیا۔۔۔
    جب آپ غم و صدمے کے بوجھ سے نڈھال ہورہے ہوں تو کسی کا کندھا آپ کا غم ختم تو نہیں کرتا لیکن اس کی شدت توڑ ڈالتا ہے، اس کے حوصلے اور تسلی کے بول آپ کے زمین سے لگے مورال کا گراف ہمالیہ کی چوٹیوں تک پہنچادیتے ہیں۔۔۔
    آپ ناکامیوں کا بوجھ لیے منہ بسورے بیٹھے ہوتے ہیں کہ امنگوں بھری ایک بھرپور مسکراہٹ آپ کو ماضی کی ناکامیوں کا بوجھ اتار کر کامیابیوں کی محنت کے لئے ایک دم اپنے پاؤں پر کھڑا کردیتی ہے۔۔۔
    اور آپ ساری زندگی اس ایک مسکراہٹ، تسلی بھرے اس ایک بول کو بُھلا نہیں پاتے!!!
     
    • زبردست زبردست × 8
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  5. نایاب

    نایاب لائبریرین

    مراسلے:
    13,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Goofy
    زبردست متفق بہت خوبصورت پیرائے میں اک اچھا پیغام
    بہت دعائیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • دوستانہ دوستانہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  6. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    ان محفلین سے ملاقات ہوگئی ہے۔۔۔
    یہاں دیکھیے!!!
    کسی اور سے ملاقات کی خواہش تو نہیں۔۔۔
    لیکن اگر موقع مل جائے تو اسے مِس بھی نہیں کریں گے!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 2
  7. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    کچھ کا اختیار اللہ تعالیٰ نے آپ کو دیا ہے۔۔۔
    مثلاً نیکیاں اور گناہ کرنا۔۔۔
    اور کچھ کا اختیار قطعاً اپنے پاس رکھا ہے جیسے زندگی، موت، اولاد، صحت، بیماری، رزق وغیرہ۔۔۔
    لیکن انسان کو محنت کرنے کا اختیار دے کر کہہ دیا کہ ہم محنت کرنے والے کی محنت کو ضائع نہیں کریں گے ۔۔۔
    اگر وہ برائی کی طرف جانے کی محنت کرے گا تو اس کے لیے برائی کے راستے کھل جاتے ہیں۔۔۔
    اگر کوئی نیکیوں کے لیے محنت کرے تو اس پر خیر کے راستے کھلتے جاتے ہیں!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 3
  8. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    جی بالکل یقین رکھتے ہیں۔۔۔
    یہ تو معاشرہ کا حصہ ہے۔۔۔
    اسے آپ نظر انداز کیسے کرسکتے ہیں۔۔۔
    البتہ اگر آپ کا مطلب کسی کو حقیر سمجھنے سے ہے تو مسلمان تو کیا خدا کی کسی بھی مخلوق کو حقارت کی نظر سے دیکھنا حرام ہے!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 2
  9. مقدس

    مقدس لائبریرین

    مراسلے:
    28,415
    جھنڈا:
    England
    موڈ:
    Tired
    such inspiring words
     
    • متفق متفق × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  10. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    تعلیم و تربیت سے اور معاشی خوش حالی سے۔۔۔
    تعلیم تو پہلے کی بنسبت بہت عام ہوچکی ہے البتہ تربیت اسی نسبت سے کم ہورہی ہے۔۔۔
    نہ بڑوں سے بات کرنے کا شعور، نہ چھوٹوں سے بات کرنے کی تمیز نہ ہم عمروں سے بات کرنے کا لحاظ۔۔۔
    معاشرے میں دوسرے انسانوں کے ساتھ کیسے رہنا ہے، اس تربیت کا آغاز ماں کی گود سے ہوتا ہے۔۔
    ماں ہی نہ جانتی ہو کہ تربیت کس چڑیا کا نام ہے تو اولاد کو کیا سِکھائے گی۔۔۔
    محض بچے پیدا کرکے گلیوں یا اسکولوں کے حوالے کردینے سے ذمہ داری ادا نہیں ہوجاتی۔۔۔
    وہ جو پہلے مثل مشہور تھی کہ کھلاؤ سونے کا نوالہ، رکھو شیر کی نگاہ۔۔۔
    یہ عملی تربیت کے لیے بہترین مثال ہے۔۔۔
    معاشرے میں بڑھتے ہوئے جرائم اور کرپشن تربیت کی کمی نہیں تو اور کیا ہے؟؟؟
    اور معاشی خوشحالی اسی وقت ملے گی جب آپ اولاد کی ذہن سازی ملازمت کی بجائے تجارت
    کے لیے کریں گے۔۔۔
    تجارت کا مطلب عموماً یہ لیا جاتا ہے کہ لاکھوں روپے ہونے ضروری ہیں۔۔۔
    حالاں کہ اس کے لیے شوق اور بہترین منصوبہ بندی کی ضرورت ہے۔۔۔
    اور منصوبہ بندی تجربے سے حاصل ہوگی چاہے خود کریں یا دوسروں کے ساتھ کچھ عرصہ کام کرکے کریں۔۔۔
    تجارت ایک درجن سموسے اور برگر سے بھی شروع کی جاسکتی ہے۔۔۔
    اب اس کو آگے کہاں تک پھیلانا ہے اس وژن کی اہمیت تجارت کو کہاں سے کہاں لے جاسکتی ہے۔۔۔
    آپ معاشرے کو تعلیم و تربیت اور معاشی خوشحالی دیں ترقی کے زینے خود طے ہوجائیں گے!!!
     
    • زبردست زبردست × 8
  11. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    ادب بہت لطیف شے ہے۔۔۔
    اسی لیے اس سے لطف اٹھایا جاتا ہے۔۔۔
    ہمارے یہاں خالصتاً ادبی کام کرنا بھوکوں مرنے کے مترادف ہے۔۔۔
    اس کی ایک وجہ کاپی رائٹ ایکٹ پر عمل درآمد نہ ہونا، پبلشرز کا صاحب تصنیف کو اس کا جائز حصہ نہ دینا وغیرہ ہیں۔۔۔
    مختصر یہ کہ جب تک آپ تخلیقی ذہن کے حامل افراد کو اس کے کچن کی فکر سے فراغت نہیں دلائیں گے وہ ادب کے لیے فراغت حاصل نہیں کرپائے گا۔۔۔
    یونہی شغلاً یا شوقاً جگالی کرتا رہے گا۔۔۔
    ایک بھرپور ادبی ماحول اسی وقت وجود پذیر ہوگا جب ادبی لوگوں کی پذیرائی ہوگی۔۔۔
    ورنہ ادب کے اوراق میں سموسہ بکتا رہے گا!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 3
  12. ہادیہ

    ہادیہ محفلین

    مراسلے:
    4,729
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    سبحان اللہ۔۔۔ سبحان اللہ۔۔۔ کیا عمدہ جواب دیا۔۔ عمدہ الفاظ ۔۔ سبحان اللہ۔۔ ایک عمدہ پیغام۔۔ اعلی ترکیب ۔۔ ہم جیسے نکموں کے لیے۔۔ اللہ سب کو ہدایت سے نوازے۔۔ آمین
    سچ میں مزا آگیا۔۔ ان الفاظ کو پڑھ کر۔۔جزاک اللہ خیرا
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1
  13. ہادیہ

    ہادیہ محفلین

    مراسلے:
    4,729
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    اکثر لوگ زمین پہ کام کرنے والوں کو "کمی" کہتے ہیں ۔۔ اس کا مطلب ہے انہیں کمتر سمجھا جاتا ہے۔۔ اس سوچ کو کیسے بدل سکتے ہیں؟ محنت مزدوری کرنے والا کمتر کیسے ہوگیا؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    اس سوچ کو ذہن سازی سے ہی بدلا جاسکتا ہے۔۔۔
    حجۃ الوداع کا خطبہ کہ کسی گورے کو کالے پر فوقیت ہے نہ عربی کو عجمی پر۔۔۔
    اگر انسان کی کوئی قیمت ہے تو وہ نیک اعمال اور تقویٰ سے ہے۔۔۔
    انسان کی یہ قیمت قیامت کے دن لگے گی، جسے خدا خود لگائے گا۔۔۔
    خدا کے سوا کسی کو کسی کی قیمت بڑھانے یا گرانے کا اختیار نہیں۔۔۔
    جب بندہ کسی کو حقارت کی نگاہ سے دیکھتا ہے تو وہ خدا کی نظر میں حقیر ہوجاتا ہے۔۔۔
    حدیث پاک ہے ،الکاسب حبیب اللہ۔۔۔
    یعنی رزقِ حلال کے لیے محنت کرنے والا خدا کا محبوب ہوتا ہے۔۔۔
    تو خدا کا پیارا حقیر کیسے ہوسکتا ہے؟؟؟
     
    آخری تدوین: ‏اگست 9, 2018
    • زبردست زبردست × 6
  15. ہادیہ

    ہادیہ محفلین

    مراسلے:
    4,729
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    متفق۔۔۔زبردست۔۔۔جزاک اللہ خیرا
     
    • متفق متفق × 1
  16. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,549
    جھنڈا:
    Pakistan
    ہم تو اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ بھانت بھانت کے لوگوں کی بھانت بھانت کی بولیاں سننے سے بہتر ہے کہ خاموش رہا جائے یا اپنی مثبت رائے کا اظہار کرکے ایک طرف ہوجایا جائے۔۔۔
    ویسے بھی ہر جنگ نہیں لڑنی چاہیے، نہ ہر اوکھلی میں سر دینا چاہیے۔۔۔
    سوشل میڈیا ہو یا حقیقی دنیا آپ کو اچھے اخلاق اور بہترین رویوں کا ہر جگہ مظاہرہ کرنا چاہیے!!!
     
    • زبردست زبردست × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  17. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    9,973
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    بہت خوب!
     
  18. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    9,973
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سبحان اللہ!
    ماشاءاللہ۔
     
  19. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    9,973
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    بہترین انٹرویو۔
    بہت کچھ سیکھنے کو ملا۔
    جزاک اللہ خیرا کثیرا۔
    بہت اچھی اور مثبت شخصیت سے ملاقات ہوئی۔
    ملاقات کرانے والوں کا بھی شکریہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  20. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    1,391
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بہترین
    لیکن شاید ابھی گفتگو جاری ہے
     

اس صفحے کی تشہیر