1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $418.00
    اعلان ختم کریں

جون ایلیا غزل-ہجر کی آنکھوں سے آنکھیں ملاتے جائیے -جون ایلیا

پیاسا صحرا نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 22, 2010

  1. پیاسا صحرا

    پیاسا صحرا محفلین

    مراسلے:
    704
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    غزل

    ہجر کی آنکھوں سے آنکھیں ملاتے جائیے
    ہجر میں کرنا ہے کیا یہ تو بتاتے جائیے

    بن کے خوشبو کی اداسی رہیے دل کے باغ میں
    دور ہوتے جائیے نزدیک آتے جائیے

    جاتے جاتے آپ اتنا کام تو کیجیے مرا
    یاد کا سر و ساماں جلاتے جائیے

    رہ گئی امید تو برباد ہو جاؤں گا میں
    جائیے تو پھر مجھے سچ مچ بھلاتے جائیے

    زندگی کی انجمن کا بس یہی دستور ہے
    بڑھ کے ملیے اور مل کر دور جاتے جائیے

    آخری رشتہ تو ہم میں اک خوشی اک غم کا تھا
    مسکراتے جائیے آنسو بہاتے جائیے

    وہ گلی ہے اک شرابی چشم کافر کی گلی
    اس گلی میں جائیے تو لرکھڑاتے جائیے

    آپ کو جب مجھ سے شکوا ہی نہیں کوئی تو پھر
    آگ ہی دل میں لگانی ہے لگاتے جائیے

    کوچ ہے خوابوں سے تعبیروں کی سمتوں میں تو پھر
    جائیے پر دم بہ دم برباد جاتے جائیے

    آپ کا مہمان ہوں میں آپ میرے میزبان
    سو مجھے زہرِ مروت تو پلاتے جائیے

    ہے سرِ شب اور مرے گھر میں نہیں کوئی چراغ
    آگ تو اس گھر میں جانا نہ لگاتے جائیے

    جون ایلیا​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  2. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,552
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    خوبصورت غزل پوسٹ کرنے کا شکریہ پیاسا صحرا۔ ہو سکے تو مقطع دیکھ لیجیے میرے خیال میں یہاں جاناناں ہونا چاہیے۔

    ہے سرِ شب اور مرے گھر میں نہیں کوئی چراغ
    آگ تو اس گھر میں جاناناں لگاتے جائیے


     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,610
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    زندگی کی انجمن کا بس یہی دستور ہے
    بڑھ کے ملیے اور مل کر دور جاتے جائیے

    بہت خوب!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,371
    بہت شکریہ جناب پیاسا صحرا بھائی۔بہت خوب انتخاب ہے۔۔۔
     

اس صفحے کی تشہیر