محسن نقوی شاید اُسے ملے گی لبِ بام چاندنی

محمد بلال اعظم نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 26, 2012

  1. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,230
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    شاید اُسے ملے گی لبِ بام چاندنی​
    اُتری ہے شہر میں جو سرِ شام چاندنی​
    مجھ سے اُلجھ پڑے نہ کڑی دوپہر کہیں؟​
    میں نے رکھا غزل میں ترا نام "چاندنی"​
    میں مثلِ نقشِ پا، مرا آغاز دُھول دُھول​
    تُو چاند کی طرح، ترا انجام۔۔۔ چاندنی​
    جن وادیوں کے لوگ لُٹے، گھر اُجڑ چُکے​
    اُن وادیوں میں کیا ہے ترا کام چاندنی؟​
    اُن کے لئے تھی صورتِ اعزاز ہر کرن​
    اپنے لیے ہے باعثِ الزام چاندنی​
    چنتی ہیں میرے اشک رُتوں کی بھکارنیں​
    محسنؔ لُٹا رہا ہوں سرِ عام چاندنی​
    (محسن نقوی)
    (عذابِ دید، ص 734)
     
    • زبردست زبردست × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. مفتی عزیزالرحمان

    مفتی عزیزالرحمان محفلین

    مراسلے:
    8
  3. ہارون اعجاز

    ہارون اعجاز محفلین

    مراسلے:
    183
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
  4. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    18,018
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    کیا کہنے منے۔۔۔ بہت اعلیٰ
     

اس صفحے کی تشہیر