شاعری ، اپنی پسند کی ،

تیشہ نے 'اشعار اور گانوں کے کھیل' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏فروری 10, 2006

لڑی کی کیفیت:
مزید جوابات کے لیے دستیاب نہیں
  1. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,521
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question

    کر لیا خود کو جو تنہا میں نے
    یہ ہنر کِس کو دکھایا میں نے

    وہ جو تھا اس کو مِلا کیا مجھ سے
    اس کو تو خواب ہی سمجھا میں نے

    دل جلانا کوئی حاصل تو نہ تھا
    آخرِ کار کیا کیا میں نے

    دیکھ کر اس کو ہُوا مست ایسا
    پھر کبھی اسکو نہ دیکھا میں نے

    شوقِ منزل تھا بُلاتا مجھ کو
    راستہ تک نہیں ڈھونڈا میں نے

    اک پلک تجھ سے گزر کر ، تاعمر
    خود ترا وقت گزارا میں نے

    اب کھڑا سوچ رہا ہوں لوگو!
    کیوں کیا تم کو اِکھٹا میں نے​
     
  2. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,521
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question

    لگتا نہیں ہے دل میرا اُجڑے دیار میں
    کس کی بنی ہے عالمِ ناپائیدار میں

    کہہ دوان حسرتوں سے کہیں اور جا بسیں
    اتنی جگہ کہاں‌ ہے دلِ داغدار میں

    عمرِ دراز مانگ کے لائے تھے چار دن
    دو آرزو میں کٹ گئے دو انتظار میں

    اتنا ہے بدنصیب ظفر دفن کے لیئے
    دو گز زمیں بھی نہ ملی کوئے یار میں ​
     
  3. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,521
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question

    خامشی اچھی نہیں ، انکار ہونا چاہیئے
    اور یہ تماشہ اب سرِ بازار ہونا چاہیئے

    خواب کی تعبیر پر اصرار ہے جن کو ابھی
    پہلے اُنہیں خواب سے بیدار ہونا چاہیئے

    اب وہی کرنے لگے دیدار سے آگے کی بات
    جو کبھی کہتے تھے بس دیدار ہونا چاہیئے

    بات پوری ہے اُدھوری چاہیئے اے جانِ جاناں
    کام آساں ہے اسے دشوار ہونا چاہیئے

    دوستی کے نام پر کیجیئے نہ کیونکر دشمنی
    کچھ نہ کچھ آخر طریقہ کار ہونا چاہیئے

    جھوٹ بولا ہے تو قائم بھی رہو اُس پر ظفر
    آدمی کو صاحب ِ کردار ہونا چاہیئے ​
     
  4. محب علوی

    محب علوی لائبریرین

    مراسلے:
    11,253
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    کوہ یار میں کہاں سے بنا لائے ہو ظفری :wink:

    کاش آج بہادر شاہ ظفر زندہ ہوتے تو تمہیں اپنے جاہ و جلال سے آشنا کرتے
     
  5. محب علوی

    محب علوی لائبریرین

    مراسلے:
    11,253
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm

    جھوٹ بولا ہے تو قائم بھی رہو اُس پر ظفر
    آدمی کو صاحب ِ کردار ہونا چاہیئے

    واہ کیا خوب شعر ہے ظفری ، کیا آپ اپنی تصویر ہے یہ شعر :wink:
     
  6. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,521
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question
    اب کیا کون بادشاہ ہے اور کون اب فقیر ۔۔۔۔ جب غم ہو تو کوئی وہ نہیں رہتا جو ہوتا ہے ۔۔ ویسے غلطی کی طرف توجہ کے لیئے شکریہ ادا کرتا ہوں ۔ میں نے مدون کر دیا ہے ۔ :wink:
     
  7. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,521
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question
    بس اس شعر نے بہتوں کے مسئلے حل کر دیئے ہیں ۔ :wink:
     
  8. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    وہ خواب تھا بکھر گیا خیال تھا ملا نہیں
    مگر اس دل کو کیا ہوا کیوں بجھ گیا پتہ نہیں

    ہر اک دن اداس دن تمام شب اداسیاں
    کس سے کیا بچھڑ گیا کہ جیسے کچھ بچا نہیں
     
  9. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    وہ لب کہ جیسے ساغر و صہبا دیکھائی دے
    جنبش جو ہو تو جام چھلکتا دیکھائی دے

    دریا میں یوں تو ہوتے ہیں قطرے ہی قطرے سب
    قطرہ وہی ہے جس میں کہ دریا دیکھائی دے
     
  10. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ی۔ادی۔ں چ۔ل۔ی۔ں، خیال چ۔لا، اش۔کِ ت۔۔۔ر چ۔ل۔ے
    ل۔ی۔ک۔۔۔۔ر پ۔ی۔۔۔امِ ش۔۔۔۔۔وق ک۔ئ۔۔۔۔۔ی ن۔ام۔ہ بر چلے

    دل کو س۔ن۔ب۔ھ۔ال۔ت۔ے رہ۔ے ہ۔۔۔۔ر ح۔ادث۔ے پ۔۔۔ہ ہم
    اب کیا کریں کہ خود تیرے گیسو بکھر چلے
    (ہوش ترمذی)
     
  11. تیشہ

    تیشہ محفلین

    مراسلے:
    21,892
    حسین راتیں بھی مہکیں تمھاری یادوں سے
    کڑے دنوں میں بھی پل پل تیرا خیال رہے

    سمے سمے خلش میں تیرا ملال رہے
    جدائیوں میں بھی پورے عالم ِ وصال رہے ۔
     
  12. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    پہلے تو اپنے دل کی رضا جان جائیے
    پھر جو نگاہِ یار کہے مان جائیے

    پہلے مزاجِ رہگزر جان جائیے
    پھر گردِ راہ جو بھی کہے مان جائیے

    کچھ کہہ رہی ہیں آپ کے سینے کی دھڑکنیں
    میری سنیں تو دل کا کہا مان جائیے

    اک دھوپ سی جمی ہے نگاہوں کے آس پاس
    یہ آپ ہیں تو آپ کے قربان جائیے

    شاید حضور سے کوئی نسبت ہمیں بھی ہو
    آنکھوں میں جھانک کر ہمیں پہچان جائیے
     
  13. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    یہ ہے دامن یہ گریباں آؤ کوئی کام کریں
    موسم کا منہ تکتے رہنا کام نہیں دیوانوں کا
     
  14. ماوراء

    ماوراء محفلین

    مراسلے:
    16,399
    کبھی کبھی میرے دل میں خیال آتا ہے
    کہ زندگی تیری زلفوں کی نرم چھاؤں میں گزرنے پاتی
    تو شاداب ہو بھی سکتی تھی
    یہ رنج و غم کی سیاہی جو دل پہ چھائی ہے
    تیری نظر کی شعاعوں میں کھو بھی سکتی تھی
    مگر یہ ہو نہ سکا
    مگر یہ ہو نہ سکا، اور اب یہ عالم ہے
    کہ تو نہیں، تیرا غم تیری جستجو بھی نہیں۔
    گزر رہی ہے کچھ اس طرح زندگی جیسے
    اِسے کسی کے سہارے کی آرزو بھی نہیں
    نہ کوئی راہ نہ منزل نہ روشنی کا سراغ
    مچل رہی ہے اندھیروں میں زندگی بھی
    انہی اندھیروں میں رہ جاؤں گا کبھی کھو کر
    میں جانتا ہوں میرے ہم نفس
    مگر یوں ہی
    کبھی کبھی میرے دل میں خیال آتا ہے۔ ​
     
  15. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ماوراء ایک بات تو بتاؤ، آخر تمہیں ان پھیکے رنگوں سے کیوں دلچسپی ہے نانی اماں۔
     
  16. ماوراء

    ماوراء محفلین

    مراسلے:
    16,399
    اتنا خوب صورت رنگ تو ہے۔اور آپ کو پھیکا لگ رہا ہے۔ پتہ نہیں مجھے کیوں لگ رہا ہے جیسے آپ کی نظر پھیکی ہو گئی ہے۔ :p
     
  17. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    میری نظریں بڑی شوخ ہیں اسی لیے تو یہ پھیکے رنگ ان میں جچ نہیں رہے۔ ابھی سے تمارا یہ حال ہے تو آگے کیا ہو گا؟؟؟؟؟؟؟
     
  18. ماوراء

    ماوراء محفلین

    مراسلے:
    16,399
    شوخ نظریں۔۔۔ :lol:
    جی بالکل۔ لیکن میں کیا کروں، مجھے تو آج کل یہی رنگ اچھا لگ رہا ہے۔ :?
     
  19. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    200,087
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    اللہ تمہارے دماغ پر رحم کرئے۔ آمین۔
     
  20. تفسیر

    تفسیر محفلین

    مراسلے:
    3,088

    دل بھی کرتا ہے یاد چھپ چھپ کے تجھے
    نام لیتی نہیں زباں تیرا
    کس سے پوچھوں گا خبر تیری
    کون بتلائے کا نشاں تیرا
    جانے کیوں تجھ کو یاد کرتا ہوں
    جب تیرے شہر سے گزرتا ہوں۔
    تو مجھے چھوڑ کر چلی بھی گی
    خیر قسمت نصیب میرے
    اب میں کیوں تجھ کو یاد کرتا ہوں
    جب تیرے شہر سے گزرتا ہوں۔​
     
لڑی کی کیفیت:
مزید جوابات کے لیے دستیاب نہیں

اس صفحے کی تشہیر