رقصِ شرر۔۔ ع واحد

الف عین نے 'اردو شاعری' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 5, 2007

ٹیگ:
  1. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    لو آج سربزم یہ اقرار کیا ہے
    ہم نے کسی مہوش سے بہت پیار کیا ہے
    اس طرح محبت کا جو اقرار کیا ہے
    خود قلب و جگر در پۂ آزار کیا ہے
    بیباک نگاہوں سے کسی شوخ نظر نے
    بھرپور سا سفاک سا اک وار کیا ہے
    جیسے کہ مئے ناب کی بوچھار ہوئی ہو
    افسردہ ایام کو سرشار کیا ہے
    گر حسن پرستی ہے کوئی جرم تو اے دوست
    اک بار نہیں جرم یہ سو بار کیا ہے
    ہم کون سخن سنج و سخن ساز ہیں ایسے
    کب ہم نے کوئی دعویٔ پندار کیا ہے
    اے ہم نفسو زیست کا احوال نہ پوچھو
    اک آگ کا دریا تھا جسے پار کیا ہے
     
  2. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    اِمتزاج نیاز و ناز بھی ہے
    روشِ حسن ساز باز بھی ہے
    جادۂِ شوق میں نشیب بھی ہیں
    جادۂِ شوق میں فراز بھی ہے
    سادگی میں ہے رنگ افشانی
    راحتِ جان و دلنواز بھی ہے
    قاتلانہ تمام تیور ہیں
    یہ حقیقت بھی ہے مجاز بھی ہے
    اف نگاہِ کرم کی شعلہ زنی
    سوز بھرپور ہے گداز بھی ہے
    ایک یلغار ہے محبت کی
    جس کا شاعر رقمطراز بھی ہے
    نام اس شوخ کا ذرا یوں ہے
    کہ عیاں بھی ہے اور راز بھی ہے
     
  3. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    پھر عہدِ التفات کسی نازنین سے ہے
    اپنی بھی راہ و رسم کسی مہ جبیں سے ہے
    ہوتی ہے آسمان پہ گو کہکشاں سے بات
    رشتہ بہت قریب کا لیکن زمیں سے ہے
    پائی کہاں مراد کسی نے براہِ راست
    قرآن کا نزول بھی روح الامیں سے ہے
    ترتیب سنگ و خشت سے جاہ و حشم نہیں
    جو گھر بھی ذی وقار ہے گھر کے مکیں سے ہے
    ہے دورِ انحطاط میں بھی انبساطِ شوق
    رسمِ وفا و مہر کہ زندہ ہمیں سے ہے
     
  4. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    حسن کے سر پہ تاج رکھتے ہیں
    شاعرانہ مزاج رکھتے ہیں
    مے پرستانِ بزم شعر و سخن
    اپنے رسم و رواج رکھتے ہیں
    ان کی املاک ہے جنوں و خرد
    ایک حسیں امتزاج رکھتے ہیں
    وضعداری کا پاس بھی ہے خوب
    پنتھ رکھتے ہیں کاج رکھتے ہیں
    قیس و فرہاد سے جو تھی نسبت
    اِس روایت کی لاج رکھتے ہیں
     
  5. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    مے کدے سے جو نکلے تر بہ تر نظر آئے
    نقشِ آگہی اکثر سر بہ سر نظر آئے
    مہر و ماہ سے برتر کہکشاں سے بالاتر
    ہم کو کوئے دلبر کی رہ گذر نظر آئے
    نسخہائے دردِ دل آپ کیا بتائیں گے
    مبتلائے دردِ دل چارہ گر نظر آئے
    فرقِ گلشن و صحرا اک نظر کا دھوکہ ہے
    تیرے گھر سے اٹھ کر ہم در بہ در نظر آئے
    راہ پُرسکوں میں ہم بے نیاز منزل ہیں
    تیز تر ہمارے سب ہم سفر نظر آئے
     
  6. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    حقیقت سے گزرنا صدق سے منہ موڑنا ٹھہرا
    وفا کیسی کہاں کا عشق بس سر پھوڑنا ٹھہرا
    ذرا سی نیک خواہش کا کبھی اظہار کردینا
    کسی سوئے ہوئے عفریت کو جھنجھوڑنا ٹھہرا
    عروجِ آدمیّت کے لئے کچھ جستجو کرنا
    ہر ایک ذی روح سے اپنا تعلق توڑنا ٹھہرا
    کسی کو بھول کر ایک ہدیۂ تحسین دے دینا
    مصیبت ہائے لافانی سے رشتہ جوڑنا ٹھہرا
    کوئی احسان کرنا اس تلوّن خیز دنیا میں
    سروں پر اپنے رکھ کر پیر سرپٹ دوڑنا ٹھہرا
     
  7. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    غم اپنی جگہ پر ہے وفا اپنی جگہ پر
    صبر اپنی جگہ آہ و بکا اپنی جگہ پر
    شیطانیٔ ابلیس سے رنگینیٔ عالم
    ایثارِ دل اہلِ صفا اپنی جگہ پر
    ہے قلقلِ مینا سے بھی کچھ روح کو تسکین
    آتی ہے آذانوں کی صدا اپنی جگہ پر
    زاہد کا جو سجدے سے اٹھے سر تو بتائیں
    ہے خدمتِ مخلوق خدا اپنی جگہ پر
    ڈھونڈا کئے معبود کو ہم دیر و حرم میں
    دل اس کی جگہ تھی وہ ملا اپنی جگہ پر
     
  8. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    قطعہ
    وقت کے مصائب سے دل برا نہیں ہوتا
    نقش ریت پر کوئی دیر پا نہیں ہوتا
    مصلحت کے ہاتھوں کچھ ہوگئی ہو مجبوری
    ورنہ دوست تم جیسا بے وفا نہیں ہوتا
     
  9. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    غزل
    افکار کی اشعار کی اظہار کی قیمت
    ٹھہری ہے ہر اک جنس پہ بازار کی قیمت
    طے ہم نے کئے نرخ یہاں شعر و ادب کے
    تولی ہے ترازو پہ قلمکار کی قیمت
    نیلام ہی ہونا ہے تو پھر اس سے غرض کیا
    احباب کی بہتر ہو کہ اغیار کی قیمت
    کرتا ہے تجارت جو کوئی آب و ہوا کی
    مانگے ہے کوئی سایہ دیوار کی قیمت
    اس دور میں جتنی کہ روایات گراں ہیں
    اتنی ہی فلک بوس ہے اقدار کی قیمت
     
  10. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    پھر نظر ہم پہ ہوئی ہے جو محبت آمیز
    پھر ارادہ ہے کوئی ان کا شرارت آمیز
    ایک رشتہ کے عداوت ہی کی بنیاد پہ ہے
    رنج دیتا ہے مسلسل پہ مسرت آمیز
    جس پہ لیلیٰ نے بھی مجنوں کو فراموش کیا
    عشق بھی ہم نے کیا ایسا خیانت آمیز
    دشمنی ہو تو بہم حشر کا سامان تمام
    دوستی کیجیے ان سے تو قیامت آمیز
    مصلحت آپ نے شیوہ نہ بنایا ہوتا
    لب پہ ہوتا نہ سخن اپنے شکایت آمیز
    بن گیا ذہن میں احباب کے ایک وجہ شکوک
    وہ سلوک آپ کا لوگوں سے مروّت آمیز
    دورِ حاضر میں جو رکھتے ہو وفا کی امید
    بھائی واحدؔ یہ رویّہ ہے حماقت آمیز
     
  11. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    درد کم ہونے کو ہے باقی کسک رہ جائے گی
    پھول باسی ہوچکے ہیں پر مہک رہ جائے گی
    معصیت کے زنگ سے چھپتی ہے کب معصومیت
    عہدِ پیری میں بھی طفلانہ ہمک رہ جائے گی
    دورِ حاضر کے سرور افزا مناظر دیکھ کر
    چشمِ پُر آشوب میں گہری کھٹک رہ جائے گی
    ٹوٹ جائے گا چمن کا ہر سکوت دلفروز
    گونجتی کانوں میں غنچے کی چٹک رہ جائے گی
    راہروانِ شوق منزل تک پہونچ ہی جائیں گے
    ماتم و گریہ کناں تنہا سڑک رہ جائے گی
     
  12. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    قطعہ

    چشم جاناں کہ مدّت سے نمناک ہے
    صورتِ حال کافی غضبناک ہے
    دیکھئے وقت آگے دکھاتا ہے کیا
    ہے فضا سرد ماحول غمناک
     
  13. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    غزل

    لوگوں نے بدنام کیا ہے
    کتنا اچھا کام کیا ہے
    رازِ محبت ہمدردوں نے
    بزم میں طشت از بام کیا ہے
    سر پہ مسلط سب نے صاحب
    ایک خیالِ خام کیا ہے
    صلح کل اپنا مسلک ہے
    دشمن کو بھی رام کیا ہے
    اہل ہوس کو خود ہم نے ہی
    جھک جھک کر پرنام کیا ہے
    رات کو رو رو صبح کیا ہے
    صبح کو جوں توں شام کیا ہے
    میر صاحب نے ترک کیا ہے
    ہم نے قبول اسلام کیا ہے
     
  14. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    رہے تھے دشمنِ جاں بن کے جو سدا میرے
    زہے نصیب بنے ہیں غم آشنا میرے
    شکیب و صبر کے لبریز جام یوں چھلکے
    لبوں پہ آ ہی گیا حرفِ مدعا میرے
    مریضِ غم کا مسیحا کوئی علاج نہیں
    فضول لائے ہیں کیوں درد کی دوا میرے
    رہ حیات میں آئی ہے کیسی ویرانی
    رفیق جتنے تھے سب ہوگئے جدا میرے
    کہاں کہاں نہ گیا لے کے یہ جنون سفر
    کہاں کہاں سے مٹاؤگے نقشِ پا میرے
     
  15. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    لالہ و نرگس و گل سرو سمن کی تعریف
    ہم نے ہر رنگ میں کی پورے چمن کی تعریف
    کاکل و عارض ، لب و رخسار و چشم دہن کی تعریف
    بہر عنواں کسی شعلہ بدن کی تعریف
    ابر باراں کی کبھی نیّر تاباں کی ثنا
    ماہ و نجم کی کہیں چرخِ کہن کی تعریف
    موتیا حسن کی چمیلی کی حنا کی توصیف
    عنبر و عود کی اور مشک ختن کی تعریف
    خالقِ کل کی ہر ایک شے سے ہمارا ہے لگاؤ
    ہے یہی اہلِ قلم اہل سخن کی تعریف
     
  16. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    اے اہل خرد پنبہ بہ درگوش رہیں آپ
    بہتر ہے کہ اس دور میں خاموش رہیں آپ
    ہر فکر کو احساس کو دامن سے جھٹک دیں
    مے نوش کریں خوب سی مدہوش رہیں آپ
    ماحول سے مٹنے کی نہیں خنک مزاجی
    سرگرم رہیں آپ کہ پرجوش رہیں آپ
    کاشانہ ہستی میں کوئی دوست نہ دشمن
    بے فکر ہیں سب آپ سے سنتوش رہیں آپ
    سارے ہی گرفتاری کے سامان ہیں موجود
    اس مملکت حسن میں روپوش رہیں آپ
    دے خالقِ کل آپ کو وہ طاقتِ پرواز
    خود بامِ ثریا سے بھی ہم دوش رہیں آپ
    تنہائی تو ایک وصفِ خداوند ازل ہے
    تنہائی سے بس اپنی ہم آغوش رہیں آپ
     
  17. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    قطعہ اختتام

    کوئی دلچسپی نہ باقی اب کسی محفل میں ہے
    کاروانِ شوق کیا بتلاؤں کس منزل میں ہے
    خامشی ہے اور تنہائی میں بس محبوب کا
    ذکر سے بہتر تصور ہے جو میرے دل میں ہے
    ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ﴿٭٭٭٭﴾۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔
     
  18. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,970
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    ختم شد
    ÷÷÷÷÷÷÷÷÷÷÷
     

اس صفحے کی تشہیر