1. اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں فراخدلانہ تعاون پر احباب کا بے حد شکریہ نیز ہدف کی تکمیل پر مبارکباد۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    $500.00
    اعلان ختم کریں

دیدارِ فئیری میڈوز و نانگا پربت کا احوال

عبداللہ محمد نے 'اراکین کے سفرنامے' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 25, 2018

  1. عبداللہ محمد

    عبداللہ محمد مدیر

    مراسلے:
    9,860
    جھنڈا:
    Pakistan
    اس سب کے دوران بھی نانگا پربت جی نے بادلوں کا گھونگٹ اوڑھے ہی رکھا-

    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • زبردست زبردست × 2
  2. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    یہ شاید رائیکوٹ پیک ہے، جس کی بلندی 7000 میٹر کے قریب قریب ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    نانگاپربت کی جانب پیٹھ ہی کرنی ہوتی تو اتنا "وخت" کاہے کو کیا۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3
  4. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    اسی مناسبت سے اس تصویر کو نانگا پربت کی پورٹریٹ قرار دیا جا سکتا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  5. سید ذیشان

    سید ذیشان محفلین

    مراسلے:
    6,781
    موڈ:
    Asleep
    ویسے اس پہاڑ کو نانگا پربت کہیں گے یا پھر ننگا پربت؟
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  6. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    روزمرہ میں تو نانگاپربت ہی کہا جاتا ہے۔
    ویسے اسی بابت پہلے بھی کہیں بات چیت ہوئی ہے شاید۔
     
    • متفق متفق × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. لاریب مرزا

    لاریب مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,643
    بہت خوب سفر نامہ اور تصاویر!! :applause:
    ہمیں کبھی موقع ملا تو ہم بھی ایسی کوئی ٹریکنگ ضرور کریں گے۔ ان شاء اللہ!!

    عبداللہ محمد آپ نے کے کے ایچ والے راستے کا انتخاب کیوں کیا؟؟ بابوسر والے راستے کا کیوں نہیں؟؟

    یاز بھائی، آپ کو اگر گلگت جانا ہو تو آپ کونسے راستے کا انتخاب کریں گے؟؟ نیز دونوں میں سے بہتر راستہ کونسا ہے اور کیوں؟؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  8. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    24,007
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    نانگا پربت
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. عبداللہ محمد

    عبداللہ محمد مدیر

    مراسلے:
    9,860
    جھنڈا:
    Pakistan
    میں نے اس لئے کیا تب بابوسر ٹاپ بند تھا-
    اور پرسںوں ہی کھلا ہے وہ بھی ہلکی ٹریفک کے لئے اور اب ممکنہ avelanche کے خدشے کے سبب پھر 2 دن کے لئے بند ہے-
    بابو سر ٹاپ عموماً جون کی پہلہ دہائی میں کھلتا ہے تو اگر اب جاؤں تو بابو سرٹاپ سے ہی جاؤں گا-
    اسکی کئی وجوہات میں سے اہم وجہ داسو سے چلاس تک کے روڈ سے بچ جاتے ہیں آپ;) وغیرہ وغیرہ
    دونوں میں سے بہتر رستہ یقیناً بابو سر ٹاپ ہی ہے-
     
    آخری تدوین: ‏جون 5, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  10. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    بہتر راستہ یقیناً بابوسر والا ہے، کہ پنڈی سے خنجراب تک تمام سڑک بہترین ہے۔ صرف بابوسر کی اترائی کا مسئلہ ہے، جس کی وجہ سے ناتجربہ کار ڈرائیور کو پرہیز کرنا چاہئے۔
    اور رہی میری ذاتی چوائس کی، تو اب میں ایک راستے سے جانا اور دوسرے سے آنا چاہوں گا۔ تاہم ضروری نہیں کہ اس خیال پہ عمل بھی ضرور ہی کروں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  11. لاریب مرزا

    لاریب مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,643
    بالکل درست، وہاں ناتجربہ کار ڈرائیورز بھی دیکھے۔ ان کو چڑھائی میں ہی مسئلہ ہو رہا تھا تو اترائی کا جانے کیا حال ہو گا۔ ویسے جاتے ہوئے سب سے زیادہ ڈر ہمیں اسی سانپ سڑک پہ لگا تھا۔ لیکن واپسی پہ تاثرات بدل چکے تھے اور ہم اس سڑک سے لطف اندوز ہوئے۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  12. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    چڑھائی تو پھر بھی نسبتاً آسان ہے، خصوصاََ اگر آٹومیٹک گیئر والی گاڑی ہو تو مزید آسان ہے۔ لیکن اترائی تو ظالم ہے۔بابوسر ٹاپ سے لے کر کے کے ایچ تک ایک فٹ بھی شاہد ہی ایسا آتا ہو جہاں سلوپ نہ ہو۔ ہماری تحقیق کے مطابق یہ دنیا کی عظیم ترین اترائیوں (یا چڑھائیوں) والی پکی سڑکوں میں سے ایک ہے، کہ جس میں 32 کلومیٹر میں تقریباً 3200 میٹر یا دس ہزار فٹ اترنا یا چڑھنا پڑتا ہے۔
    بابوسر سے بل کھاتی سڑک کا کچھ ایسا منظر دکھائی دیتا ہے۔ یہ ہمارے 2015 کے ٹرپ کی تصویر ہے۔
    [​IMG]

    ناران سائیڈ کا سین کچھ ایسا تھا۔
    [​IMG]
     
    • زبردست زبردست × 4
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  13. سید ذیشان

    سید ذیشان محفلین

    مراسلے:
    6,781
    موڈ:
    Asleep
    بالکل ایسی ہی اترائی/چڑھائی لواری ٹاپ پر بھی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  14. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    لواری کی بھی کافی چڑھائی اور اترائی ہے۔ خصوصاََ چترال سائیڈ والی اترائی پہ اسی طرح کے بے تحاشا ہیئرپن موڑ ہیں۔ تاہم وہ بابوسر کی اترائی سے عددی اعتبار سے کافی کم ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • متفق متفق × 1
  15. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,301
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    پکی بات ہے؟ اندازہ ہے کہ درے سے دریائے سندھ تک اترائی اڑھائی سے تین ہزار میٹر کے درمیان ہو گی
     
    آخری تدوین: ‏جون 5, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  16. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,301
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    پائکس پیک ہائیوے 30 کلومیٹر میں 2000 میٹر اوپر جاتی ہے۔ وہاں سے واپس آتے شدید دھند میں گاڑی چلاتے کچھ ڈر سا لگا تھا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • متفق متفق × 1
  17. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    جی بالکل۔ بابوسر پاس 4173 میٹر پہ ہے، جبکہ چلاس 1000 میٹر کے لگ بھگ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  18. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,301
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    زبردست!

    آپ موسم اور بادلوں کی وجہ سے کچھ دُکھی لگتے ہیں۔ پہاڑوں کے رسیا جانتے ہیں کہ اکثر پہاڑ بادلوں کے پیچھے ہی چھپے ملتے ہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  19. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    مجھے سرچ کے دوران کسی ایک آئی لینڈ پہ ایک سڑک ملی تھی۔ شاید ہوائی کے قرب و جوار کا تھا۔ اس میں سڑک سمندر کے کنارے سے شروع ہو کر پہاڑ کی ٹاپ تک جا رہی تھی۔ اس کی بلندی 3200 میٹر سے زائد تھی۔ دوبارہ ملی تو شیئر کروں گا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,301
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    انٹرنیٹ کے مطابق 1265 میٹر
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2

اس صفحے کی تشہیر