1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

خوبصورت نظمیں

ظفری نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 29, 2006

  1. عیشل

    عیشل محفلین

    مراسلے:
    1,685
    میرے چارہ گر!
    میرے درد کی تجھے کیا خبر
    تو میرے سفر کا شریک ہے
    نہیں ہم سفر؟
    میرے چارہ گر،میری چارہ گر
    میرے ہاتھ سے تیرے ہاتھ تک
    وہ جو ہاتھ بھر کا تھا فاصلہ
    کئی موسموں میں بدل گیا
    اسے ناپتے اسے کاٹتے
    میرا سارا وقت نکل گیا
    نہیں جس پہ کوئی نشانِ پا
    میرے سامنے ہی وہ رہ گذر
    میرے چارہ گر
    میرے درد کی تجھے کیا خبر؟؟؟؟؟؟÷
     
  2. علمدار

    علمدار محفلین

    مراسلے:
    364
    ایسی بستی میں لے چلو کہ جہاں
    ایسی بستی میں لے چلو کہ جہاں
    شب دریچوں سے پیار کرتی ہو
    روشنی روشنی پہ مرتی ہو
    در بدر خاک ہو خزاؤں کی
    ہر طرف بات ہو بہاروں کی
    ایسی بستی میں لے چلو کہ جہاں
    پھول چہرہ، کتاب آنکھیں ہوں
    رقص کرتی شراب آنکھیں ہوں
    آگہی بھول جائے زخموں کو
    نغمگی راس آئے نغموں کو
    ایسی بستی میں لے چلو کہ جہاں
    حکمرانوں کے قول پکے ہوں
    کاہنوں کے حساب سچے ہوں
    دیوتا سجدہ ریز ہوتے ہوں
    سر اٹھا کر غلام چلتے ہوں
    ایسی بستی میں لے چلو کہ جہاں
    علم کو فکر سے ہدایت ہو
    خار کو پھول کی حمایت ہو
    شاعروں پر عذاب جاری ہو
    محفلوں پر خمار طاری ہو
    ایسی بستی میں لے چلو کہ جہاں
    چاند کرنیں شمار کرتا ہو
    زر دیانت سے گھر بدلتا ہو
    محنتیں اجرتوں کا محور ہوں
    عزتیں آبرو کا تیور ہوں
    ایسی بستی میں لے چلو کہ جہاں
    دل کو تیرا خیال آجائے
    رقص کو بھی دھمال آجائے
    مرغزاروں میں پھول کِھلتے ہوں
    رنگ اور نور سے لپٹتے ہوں
    ایسی بستی میں لے چلو کہ جہاں
    سہیل احمد
     
  3. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    بہت خوب علمدار۔
     
  4. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    کھلونا تو نہیں ہوں میں
    کہ تم چاہو کہ ہم
    ایک دوسرے کو چھو سکیں
    محسوس بھی کر لیں
    پھر اپنے آپ کو دریافت کر لیں ہم
    جہاں موقع ملے تم کو
    عقابوں کی طرح تم کو
    جھپٹ پڑنے کی عادت ہے
    گریزاں تم سے گر ہوتی ہوں میں
    ایسے طلاطم میں
    تو تم ناراض ہو جاتے ہو
    آخر خود کبھی سوچو
    کھلونا تو نہیں ہوں میںّّّّّّّّ ۔ ۔ ۔
     
  5. علمدار

    علمدار محفلین

    مراسلے:
    364
    شکریہ ضبط بھائی!
    سہیل صاحب کی ایک اور نظم تلاش کر رہا ہوں وہ بھی بہت عمدہ ہے-
     
  6. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    ضرور شئیر کریں۔
     
  7. علمدار

    علمدار محفلین

    مراسلے:
    364
    مجھے ناکام لوگوں میں سرفہرست رہنے دو

    میرے دل کی زمین پر اب بہاریں غیر لگتی ہیں
    سحر انگیز آنکھوں کی صدائیں غیر لگتی ہیں
    جنوں ماتم نہیں کرتا وفائیں زہر لگتی ہیں
    نگہبانِ چمن کی آرزوئیں قہر لگتی ہیں
    یہ دل دریائے وحشت ہے یہ کب اعجاز کرتا ہے
    خزاں کی حکمرانی ہے اُسی پر ناز کرتا ہے
    مجھے برباد ہونے تک ذرا سرشار رہنے دو
    مجھے ناکام لوگوں میں سرفہرست رہنے دو
    یہ جن ہاتھوں کو قدرت ہے
    فنا کے استعارے ہیں
    رواں خوشبو کا موسم ہے
    ستارے ہی ستارے ہیں
    ابھی سورج نہیں نکلا ابھی فریاد مت کرنا
    ابھی زخموں کو مت چھونا ستم کو یاد مت کرنا
    ابھی اک عمر جاری ہے
    ذرا وحشت سی طاری ہے
    ذرا وحشت کے ڈھلنے تک
    مجھے وحشت میں رہنے دو
    مجھے ناکام لوگوں میں سرفہرست رہنے دو
    مری حاکم معیشت ہے
    جسے مغرب نے پالا ہے
    سروں پر تاج ان کے ہے
    مرے سکوں کی مالا ہے
    زباں جب ذکر کرتی ہے
    ان ہی کا ورد کرتی ہے
    مرے بازار کے آقا
    مرے پندار کے آقا

    کسی خواہش کے پتھر سے مجسمے مسمار کرتے ہیں
    ستمگر چارہ گر بن کر مری بستی میں پھرتے ہیں
    مجھے مسمار ہونے تک اسی بستی میں رہنے دو
    مجھے ناکام لوگوں میں سرفہرست رہنے دو
    یہ جنت بھی علامت ہے
    بشارت کی کرامت ہے
    گماں کے تیر چلتے ہیں
    بہشتی پیر چلتے ہیں
    انا کے آستانے پر گماں کو قتل کرتے ہیں
    زبان کو قتل کرتے ہیں
    مجھے مقتول ہونے تک اسی مقتل میں رہنے دو
    مجھے ناکام لوگوں میں سرفہرست رہنے دو
    مرے اجداد غافل تھے میری خوشیوں کے قاتل تھے
    وراثت کی غلامی نے مجھے آزاد رکھا ہے
    وطن میں جو مسافر ہے کہاں آباد رکھا ہے
    میں ان کھیتوں کی رونق ہوں
    جہاں فصلیں مجھ ہی سے دام لیتی ہیں غریبی تھام لیتی ہیں
    قلم کے کارخانے میں میری محنت کا ایندھن ہے
    مگر میں لکھ نہیں سکتا
    مرے بازار اپنے ہیں
    مگر میں بِک نہیں سکتا
    مرے ماحول نے مجھ کو مری قامت پہ ٹوکا ہے
    مرے احباب نے مجھ کو بڑی حکمت سے رکھا ہے
    مرا اسباب لٹنے دو مرے احباب رہنے دو
    مجھے ناکام لوگوں میں سرفہرست رہنے دو
     
  8. ماوراء

    ماوراء محفلین

    مراسلے:
    16,399
    بہت خوب علمدار!
     
  9. علمدار

    علمدار محفلین

    مراسلے:
    364
    پسندیدگی کا شکریہ ماوراء
     
  10. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    بہت خوب علمدار۔
     
  11. عیشل

    عیشل محفلین

    مراسلے:
    1,685
    پوچھنے والے تجھے کیسے بتائیں آخر
    دکھ عبارت تو نہیں ہے،جو تجھے لکھ کر دے دیں۔
    یہ کہانی بھی نہیں ہے کہ سنائیں تجھ کو
    نہ کوئی بات ہی ایسی کہ بتائیں تجھ کو
    زخم ہو تو تیرے ناخن کے حوالے کر دیں
    آئینہ بھی تو نہیں ہے کہ دکھائیں تجھ کو
    یہ کوئی راز نہیں جس کو چھپائیں تو وہ راز
    کبھی چہرے کبھی آنکھوں سے چھلک جاتا ہے
    جیسے آنچل کو سنبھالے کوئی اور تیز ہوا
    جب بھی چلتی ہے تو شانوں سے ڈھلک جاتا ہے
    اب تجھے کیسے بتائیں ہمیں کیا دکھ ہے!!!!!!!!!!!!!!!!!
     
  12. سارہ خان

    سارہ خان محفلین

    مراسلے:
    15,819
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اَن سُنے لفظ

    کسی ریگزار کی دھوپ میں وہ جو قافلے تھے بہار کے
    وہ جو اَن کھلے سے گلاب تھے
    وہ جو خواب تھے میری آنکھ میں
    جو سحاب تھے تیری آنکھ میں
    وہ بکھر گئے، کہیں راستوں میں غبار کے !
    وہ جو لفظ تھے دمِ واپسیں
    میرے ہونٹ پر
    تیرے ہونٹ پر
    انہیں کوئی بھی نہیں سُن سکا
    وہ جو رنگ تھے سرِ شاخِ جاں
    تیرے نام کے
    میرے نام کے
    انہیں کوئی بھی نہیں چُن سکا۔

    (امجد اسلام امجد)
     
  13. عیشل

    عیشل محفلین

    مراسلے:
    1,685
    کوئی چاند چہرہ کُشا ہوا
    وہ جو دھند تھی بکھر گئی
    وہ جو حبس تھا ہوا ہُوا
    کوئی چاند چہرہ کُشا ہوا
    تو سمٹ گئی
    وہ جو تیرگی تھی چہار سو
    وہ جو برف ٹھہری تھی روبرو
    وہ جو بے دلی تھی صدف صدف
    وہ جو خاک اُڑتی تھی ہر طرف
    مگر اِک نگاہ سے جل اُٹھے
    جو چراغ تھے بجھے ہوئے
    مگر اِک سخن سے مہک اُٹھے
    مرے گلستاں،مرے آئینے
    کسی خوش نظر کے حصار میں
    کسی خوش قدم کے جوار میں
    کوئی چاند چہرہ کُشا ہوا
    مِرا سارا باغ ھرا ہوا!!!!!
     
  14. سارہ خان

    سارہ خان محفلین

    مراسلے:
    15,819
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    بہت خوب ۔۔۔۔
     
  15. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    بہت خوب سارہ اور عیشل۔ ہو سکے تو شاعر کا نام بھی لکھ دیا کریں۔
     
  16. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    نئی آنکھ کا پُرانا خواب
    آتش دان کے پاس
    گُلابی حّدت کے ہالے میں سمٹ کر
    تجھ سے باتیں کرتے ہوئے
    کبھی کبھی تو ایسا لگا ہے
    جیسے اُوس میں بھیگی گھاس پہ
    اُس کے بازو تھامے ہوئے
    میں پھر نیند میں چلنے لگی ہوں !

    پروین شاکر
     
  17. سارہ خان

    سارہ خان محفلین

    مراسلے:
    15,819
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    میں نے تو شاعر کا نام لکھا ہے ۔۔۔ :)
     
  18. علمدار

    علمدار محفلین

    مراسلے:
    364
    تنبیہ

    اے ننھی معصوم لڑکیو.... تم
    کبھی کسی سے بھی دُکھ نہ کہنا
    ان آنچلوں سے
    کھنکتی رنگیں چوڑیوں سے
    بدن کی اپنی ہی خوش بوﺅں سے
    پلک کے اُٹھنے پلک کے جھپکنے
    کی ساعتوں سے
    چھتوں کے کونوں میں چھپ کے بےٹھی
    وہ شوخ وشنگ اور ناز پرورسی چاندنی سے
    دیوں کی لَو سے
    یا اُن کتب سے کہ جن میں پھولوں کے تتلیوں کے حسین دکھ ہوں
    پلنگ پہ سلوٹوں بھری صاف چادروں سے
    گداز تکیوں سے جن میں زلفوں کی خوشبوئیں رقص کر رہی ہوں
    تم آئینوں اور جگنوﺅں سے
    سہیلیوں اور دوستوں سے
    کبھی بھی معصوم لڑکیو.... تم....!
    وہ دکھ نہ کہنا
    سیاہ راتوں میں جس کو اپنی
    اداس آنکھوں سے
    اپنے ہی دل میں کی دھڑکنوں سے
    چھپا چھپا کر بکھر رہی تھیں
    کبھی بھی دیکھو وہ دکھ نہ کہنا
    کبھی بھی اے لڑکیو....!
    وگرنہ....!....!....!

    وصی شاہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  19. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    جنھوں نے نہیں لکھا انہیں کہا ہے۔
     
  20. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    بہت خوب۔
     

اس صفحے کی تشہیر