فارسی شاعری خوبصورت فارسی اشعار مع اردو ترجمہ

محمد وارث نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جنوری 7, 2008

  1. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    16,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    یا رب چرا که پردهٔ افلاک می‌نسوخت
    این قدر بی‌شراره نبوده نوایِ ما

    (مقصود جعفری)
    یا رب! افلاک کا پردہ کیوں نہیں جل رہا تھا؟۔۔۔ ہماری نوا اِس قدر [بھی] بے شرارہ نہ تھی!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    16,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    شد آشنا هر آن‌که مرا بود دوست‌دار
    بیگانه گشت هر که مرا بود آشنا
    (مسعود سعد سلمان لاهوری)

    جو بھی شخص میرا حبیب و مُحِب تھا، [اب] وہ [فقط] آشنا ہو [کر رہ] گیا [ہے]۔۔۔۔ [جبکہ] جو بھی شخص میرا آشنا تھا، وہ [اب] بیگانہ ہو گیا [ہے]۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  3. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    16,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    عشقت از دایرهٔ عقل بُرون کرد مرا
    داخلِ سلسلهٔ اهلِ جُنون کرد مرا
    (محمد فُضولی بغدادی)

    تمہارے عشق نے مجھ کو دائرۂ عقل سے بیرون کر دیا [اور] مجھ کو سِلسِلۂ اہلِ جُنون میں داخل کر دیا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 1
  4. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    16,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    جنابِ «مسعود سعد سلمان لاهوری» کے، قیدِ زندان میں لکھے ایک فارسی قصیدے کی ابتدائی چار ابیات:
    تیر و تیغ است بر دل و جِگرم
    غم و تیمارِ دُختر و پِسرم
    هم بدین‌سان گُدازَدم شب و روز
    غم و تیمارِ مادر و پدرم
    جِگرم پاره است و دل خسته
    از غم و دردِ آن دل و جِگرم
    نه خبر می‌رسد مرا زیشان
    نه بدیشان همی‌رسد خبرم

    (مسعود سعد سلمان لاهوری)
    میری دُختر و پِسر کا غم و اندوہ میرے دل و جِگر پر تیر و تیغ [کی مانند] ہے۔۔۔ اِسی طرح میری مادر و پدر کا غم و اندوہ بھی شب و روز مجھ کو پِگھلاتا ہے۔۔۔ میرے اُن دل و جگر کے غم و درد سے میرا جِگر پارہ اور میرا دل زخمی و آزُردہ ہے۔۔۔ نہ مجھ تک اُن کی خبر پہنچتی ہے اور نہ اُن تک میری خبر پہنچتی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  5. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    16,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    جنابِ «محمد فُضولی بغدادی» (رحمتِ بی‌پایان بر او باد!) کی ایک فارسی بیت سے معلوم ہوتا ہے کہ گویا اُن کی بیشتر زندگی «حضرتِ علی» کے مزار کے نزد گُذری تھی، یا اُن کا اُس مزار پر کثرت کے ساتھ آنا جانا رہتا تھا۔ وہ ایک فارسی قصیدے میں فرماتے ہیں:
    شُکرُ لِله زِابتدایِ عُمر تا غایت، مرا
    روضهٔ خاکِ درِ شاهِ ولایت منزِل است

    (محمد فضولی بغدادی)
    اللہ کا شُکر! کہ ابتدائے عُمر سے لے کر انتہا تک شاہِ وِلایت (حضرتِ علی) کے در کی خاک کا باغ میری منزِل و مسکن [رہا] ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏مئی 26, 2019
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  6. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    16,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    غزنَوی دَور کے فارسی شاعر جنابِ «مسعود سعد سلمان لاهوری» اپنی زبانِ فارسی کے علاوہ زبانِ عرَبی بھی بخوبی جانتے اور اُس پر تسلُّط رکھتے تھے۔ وہ اپنے ایک قطعے کی چند ابیات میں خود کی فارسی و عربی سُخن‌دانی پر لاف‌آمیز اِفتِخار کرتے ہوئے کہتے ہیں:
    منم کاندر عجم وندر عرب کس
    نبیند چون من از چیره‌زبانی
    گر اُفتد مُشکِلی در نظم و در نثر
    ز من خواهد زمانه ترجُمانی
    بدین هر دو زبان در هر دو میدان
    به گردونم رسیده کامرانی
    سُجود آرد به پیشِ خاطرِ من
    روانِ رودکی و ابنِ هانی
    (مسعود سعد سلمان لاهوری)

    میں وہ ہوں کہ دیارِ عجم و دیارِ‌عرب میں سُخن‌دانی و فصاحت و بلاغت کے لحاظ سے کسی شخص کو مجھ جیسا [کوئی دیگر شخص] دِکھائی نہیں دیتا۔۔۔ اگر زمانے کو نظم و نثر میں کوئی مُشکِل پیش آ جائے تو وہ مجھ سے اُس کی ترجُمانی و تفسیر کی خواہش کرتا ہے۔۔۔ اِن ہر دو زبانوں میں اور ہر دو میدانوں میں میری کامرانی و حُکمرانی فلک تک پہنچ گئی ہے۔۔۔ میری فکر و ذہن کے پیش میں «رُودَکی» اور «ابنِ ہانی» کی ارواح سجدہ کرتی ہیں۔۔۔

    × «رُودَکی» اور «ابنِ ہانی» بِالترتیب دو مشہور فارسی و عربی شاعروں کے نام ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  7. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    نیست در عالم ز هجران تلخ‌تر
    هرچ خواهی کن ولیکن آن مکن
    (مولوی رومی)

    دنیا میں ہجراں سے تلخ‌تر کچھ بھی نہیں ہے۔ جو کچھ تو چاہتا ہے، کر! لیکن وہ (ہجر) مت کر!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  8. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    16,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    حیرانم از خدَنگِ کمانِ رسایِ او
    هر جا دِلی‌ست، تیرِ غمش را نشانه است

    (نقیب خان طُغرل احراری)
    میں اُس کی کمانِ رسا کے تیر کے باعث حیران ہوں۔۔۔ جہاں بھی کوئی دل ہے، وہ اُس کے غم کے تیر کا نشانہ ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  9. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    16,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    ساقی شبِ عید است مَیِ کُهنه عطا کن
    ای دیدهٔ ساغر نِگهی جانبِ ما کن

    (رایج سیالکوتی)
    اے ساقی! شبِ عید ہے، شرابِ کُہنہ عطا کرو۔۔۔ اے چشمِ ساغر! اِک نگاہ ہماری جانب کرو۔
     
    آخری تدوین: ‏جون 6, 2019
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  10. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    بسته شد در هر رگم از خونِ فاسد صد گره
    زد به صحرایِ تنم صد خیمه سلطانِ بلا
    (فضولی بغدادی)

    خونِ فاسد سے میری ہر رگ میں صدہا گرہ بستہ ہوگئیں۔ سلطانِ بلا نے میرے جسم کے صحرا میں خیمہ لگادیا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  11. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    ضعف قوت یافت، قوت ضعف در ترکیبِ من
    دوریِ روح از بدن نزدیک شد، دور از شما
    (فضولی بغدادی)

    میرے (جسم کی ترکیب میں) کمزوری نے طاقت پکڑ لی ہے جبکہ طاقت ضعیف ہوگئی ہے۔ روح کی دوری میرے جسم سے نزدیک ہوگئی اور تجھ سے دور (یعنے تیرا فراق میرے لئے مرگ آور ہوگیا ہے)۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  12. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    در عمرِ خویش غیرِ ثنایِ علی و آل
    از هر چه کرده‌ایم بیان، توبه ربّنا
    (فضولی بغدادی)

    اپنی عمر میں حضرت علی اور ان کی آل کی ثنا کے بجز جو کچھ بھی ہم نے بیان کیا ہے خدایا! اس سب سے توبہ !
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  13. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    خوابی‌که به از دولتِ بيدار توان گفت
    خوابی‌است که در سايه‌ی ديوارِ تو باشد
    (صایب تبریزی)

    جو خواب طالعِ بیدار سے خوب تر کہی جاسکے، (درحقیقت) وہ خواب ہے جو تیرے دیوار کے سائے میں ہو۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  14. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    ز خنده‌روییِ گردون فریبِ رحم مخور
    که رخنه‌هایِ قفس رخنه‌ی رهایی نیست
    (صائب تبریزی)

    آسمان کی خندہ‌روئی سے فریبِ رحم مت کھاوٗ کہ زندان کے سوراخ رہائی کے سوراخ نہیں ہیں۔
     
    آخری تدوین: ‏مئی 30, 2019
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  15. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    به اهلِ دل چه کند حرفِ بادپیمایان؟
    نشانه را خطر از ناوکِ هوایی نیست
    (صائب تبریزی)

    بیہودہ‌گویوں کی باتیں اہلِ دل کو کیا کریں؟ نشانے کو ہوائی تیر سے کوئی خطرہ نہیں ہوتا ہے۔
    ( جس طرح اس بات کے امکانات نہ ہونے کے برابر ہے کہ ہوائی تیر کبھی نشانے پر لگ سکے ،ہمیں‌گونہ اہلِ دل کو بھی یاوہ گویوں کی باتوں سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔)
     
    آخری تدوین: ‏مئی 30, 2019
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  16. واسع اطہر

    واسع اطہر محفلین

    مراسلے:
    8
    بالکل ایسا ہی ہے۔ آپ کی نوازش
     
  17. واسع اطہر

    واسع اطہر محفلین

    مراسلے:
    8
    ای کریمی کہ اَز خزانہ غیب
    گبر و ترسا وظیفہ خور داری
    دوستاں را کجا کنی محروم
    تو کہ با دشمناں نظر داری
    سعدی، کلیات (گلستان) : 66
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    کسی‌که لافِ هنر زد هنر نخواهد داشت
    که از صداست تهی هر نی‌یی که پر‌شکر است
    (فضولی بغدادی)

    جو کوئی بھی اپنے ہنر کی بےجا ستائش کرتا ہے وہ ہنر نہیں رکھے گا(جیسے) کہ ہر وہ بانسری جو شَکَر سے پُر ہو، آواز سے خالی ہوتی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  19. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    گلستانِ سعدی سے ایک بیت:
    دشمن چو بينی ناتوان، لاف از بروتِ خود مزن
    مغزی‌ست در هر استخوان، مردی‌ست در هر پيرهن
    (سعدی شیرازی)

    جب دشمن کو ناتواں دیکھو تو خود کو توانا مت سمجھو۔ ہر استخوان (ہڈی) میں کوئی مغز ہوتا ہے، ہر لباس میں ایک مرد ہوتا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  20. سید عاطف علی

    سید عاطف علی محفلین

    مراسلے:
    6,857
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    محترم واسع اطہر صاحب جیسا کہ آپ نے ملاحظہ کیا ہوگا یہ سلسلہ با ترجمہ فارسی کلام پیش کر نے کے لیے مختص ہے ۔ سو یہاں ترجمے کے ساتھ پیش کیجیئے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3

اس صفحے کی تشہیر