تنہائی

عمر شرجیل چوہدری نے 'آپ کی نثری شاعری بحور سے آزاد' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 9, 2021

  1. عمر شرجیل چوہدری

    عمر شرجیل چوہدری محفلین

    مراسلے:
    94
    اک طرف ہے شہر کی رونق
    اک طرف ہے دل کی تنہائی
    یاراں کی محفل میں خوب مستیاں
    اور اسی محفل میں ہے تنہائی
    رونق میلہ خوب ہے دنیا
    مگر جس کو لگ گئی ہو تنہائی؟
    ہر طرف ہے شوروغل ہمیشہ
    ہر طرف دیکھو تو تنہائی
    کہاں ہیں دوست احباب میرے
    جہاں بھی جاؤ بس تنہائی
    بچپن تنہا، جوانی تنہا، بڑھاپا تنہا
    اور گور میں بھی ہے تنہائی
    خون کے رشتے بھی ہیں لیکن
    رشتہ نبھاتی ہے تنہائی
    یہ کیا بات ہوئی بھلا
    باتیں بھی کروں کسی سے تو تنہائی
    ہر سوال کا جواب دیتے ہو
    بتاؤ تو کیا ہے تنہائی
    میرے کمرے میں رہتے ہیں دو ہی لوگ
    میں اور میری تنہائی
    سب مایا ہے بےوفا
    وفا شیوہ ہے تنہائی
    رنگ دنیا کے دیکھے ہیں تم نے
    دیکھو ذرا کبھی رنگ تنہائی
    تم کو عالم دنیا مبارک
    مجھ کو عالم تنہائی
     
  2. محمّد احسن سمیع :راحل:

    محمّد احسن سمیع :راحل: محفلین

    مراسلے:
    1,938
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    تنہائی لگتی بھی ہے؟؟؟ کیسے لگتی ہے؟؟؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  3. عمر شرجیل چوہدری

    عمر شرجیل چوہدری محفلین

    مراسلے:
    94
    لگتی ہے، بالکل لگتی ہے جیسے لوہے کو زنگ لگتا ہے جیسے دوسری بیماریاں لگتے ہیں تنہائی بھی تو ایک بیماری ہے جب آپ محفلوں میں بھی تنہا محسوس کر رہے ہوں
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1

اس صفحے کی تشہیر