عدیم ہاشمی ایک صدمہ سا ہوا اشک جو اس بار گرے۔۔۔۔۔۔۔۔عدیم ہاشمی

بنگش نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 17, 2008

  1. بنگش

    بنگش محفلین

    مراسلے:
    72
    ایک صدمہ سا ہوا اشک جو اس بار گرے
    گھر کے آنسو تھے مگر بر سر بازار گرے

    ہم ہی آنہوں سے نہیں ہار کے ناچار گرے
    آندھیاں جب بھی چلی ہیں کئ اشجار گرے

    پھر وہی خواب ، وہی طوفاں وہی دو آوازیں
    جیسے در پہلے گرے بعد میں دیوار گرے

    ایسی آواز سے دل ٹوٹ کے سینے میں گرا
    جیسے منجد ھار میں بھونچال سے کہسار گرے

    جیسے نوبت ہی معالج کی نہیں آئے کوئ
    جیسے رستے میں ہی دم توڑ کے بیمار گرے

    صرف میں نے ہی تو گجرے نہیں بھیجےاس کو
    میرے آنگن میں بھی پھولوں کے کئ ہار گرے

    ایک تم ہی نہیں پھسلے ہو یہاں آکے عدیم
    بارش زر میں کئ صاحب کردار گرے

    دھوپ بارش میں اچانک جو نکل آئ عدیم
    زیر اشجار کئ سایہ ء اشجار گرے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 7
  2. ش زاد

    ش زاد محفلین

    مراسلے:
    491
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    HTML:
    [b]پھر وہی خواب ، وہی طوفاں وہی دو آوازیں
    جیسے در پہلے گرے بعد میں دیوار گرے
    
    دھوپ بارش میں اچانک جو نکل آئ عدیم
    زیر اشجار کئ سایہ ء اشجار گرے[/b]
    بہت خوبصورت کلام ہے
    واہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,873
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    خوبصورت غزل ہے - شکریہ بنگش!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    27,173
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ بنگش صاحب خوبصورت غزل شیئر کرنے کیلیئے!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    23,492
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت خوب بنگش صاحب

    اچھی غزل ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. جیا راؤ

    جیا راؤ محفلین

    مراسلے:
    1,888

    واہ واہ۔۔۔ ایک ایک شعر خوبصورت !!
    بہت ہی زبردست شئیرنگ ہے۔۔۔
    خوبصورت ترین۔۔ !!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2

اس صفحے کی تشہیر