کلامِ رضی اختر شوق

NAZRANA نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 10, 2005

  1. NAZRANA

    NAZRANA محفلین

    مراسلے:
    36
    عزیزانِ محترم،
    آداب و تسلیمات،
    جنابِ رضی اختر شوق کا کلام آپ دوستوں
    کی خدمت میں پیش کر رہا ہوں ۔
    امید ہے پسند فرمائینگے ۔



    یہ چاند کہتا تھا کوئی ستارہ زاد ہے یہ
    کہا گلاب نے میرے حسب نسب کا ہے
    کسی چراغِ سرِ رہِ گذار کی مانند
    کوئی بھی اسکا نہ تھا اور یار سب کا تھا
    جو وقت گزرے تو سینے پہ بوجھ بن جائے
    کچھ اسکا حال بھی اس قرضِ بے طلب کا تھا
    خود اسکے گھر کی ہی دیوار گر پڑی اس پر
    یہ دفن آج ہوا ہے، مرا تو کب کا تھا
    کلامِ رضی اختر شوق
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  2. قمر

    قمر محفلین

    مراسلے:
    107
  3. NAZRANA

    NAZRANA محفلین

    مراسلے:
    36
    شکریہ،
    پیشکش پسند فرمانے کیلئے آپکا ممنون ہوں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. طاہر اقبال

    طاہر اقبال محفلین

    مراسلے:
    14
    بہت خوب۔ کیا کہنے ہیں۔ واہ واہ۔۔۔
     
  5. NAZRANA

    NAZRANA محفلین

    مراسلے:
    36
    شکریہ،
    پیشکش پسند فرمانے کیلئے آپکا ممنون ہوں۔
     
  6. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بہت شکریہ بھئی واہ ۔
    مزید کلام کہاں‌سے ملے گا۔۔
     

اس صفحے کی تشہیر