1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $413.00
    اعلان ختم کریں

جون ایلیا کام مجھ سے کوئی ہوا ہی نہیں ( جون ایلیا)

ظفری نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 5, 2010

  1. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,533
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question
    کام مجھ سے کوئی ہوا ہی نہیں
    بات یہ ہے کہ میں تو تھا ہی نہیں

    مجھ سے بچھڑی جو موجِ نگہتِ یار
    پھر میں اس شہر میں رہا ہی نہیں

    کس طرح ترکِ مدعا کجیئے
    جب کوئی اپنا مدعا ہی نہیں

    کون ہوں میں جو رائیگاں ہی گیا
    کون تھا جو کبھی ملا ہی نہیں

    ہوں عجب آسائشِ غم کی حالت میں
    اب کسی سے کوئی گلہ ہی نہیں

    بات ہے راستے پر جانے کی
    اور جانے کا راستہ ہی نہیں

    ہے خدا ہی پہ منحصر ہر بات
    اور آفت یہ ہے ، خدا ہی نہیں

    دل کی دنیا کچھ اور ہی ہوتی ہے
    کیا کہیں اپنا بس چلا ہی نہیں

    اب تو مشکل ہے زندگی دل کی
    یعنی اب کوئی ماجرا ہی نہیں

    ہر طرف ایک حشر برپا ہے
    جون خود سے نکل کر جیا ہی نہیں ​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,552
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    واہ واہ! بہت عمدہ غزل ہے۔ شکریہ ظفری صاحب!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,740
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    بات یہ ہے کہ میں تو تھا ہی نہیں
    واہ واہ واہ بہت خوب ظفری بھائی!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر