پیروڈی: اس کے ابا سے معافی کی گزارش نہیں کی

عاطف ملک نے 'مزاحیہ شاعری' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 27, 2019

  1. عاطف ملک

    عاطف ملک محفلین

    مراسلے:
    1,092
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    احمد فرازؔ مرحوم کی ایک غزل کے ساتھ کی جانے والی واردات محفلین کی خدمت میں:

    اس کے ابا سے معافی کی گزارش نہیں کی
    بھاگ جانے کی بھی ہرگز کوئی کوشش نہیں کی

    اِس پہ اُس نے بھی مری کوئی سفارش نہیں کی
    الغرض باپ نے اس کے، مری بخشش نہیں کی

    دو کزن، چار عدد بھائی اور ابا اس کے
    سب نے پیٹا ہمیں اور ہم نے بھی جنبش نہیں کی

    پیار سے سب کو ہی کہہ دیتا ہوں "بچے! " اکثر
    شکر ہے آپ کو یوں کہنے کی لغزش نہیں کی

    مل گیا ہم سے بریک اپ کا بہانہ اس کو
    ہم نے جب بارہ بجے سالگرہ وِش نہیں کی

    چغلیاں کھاتی ہے تیری یہ نکلتی ہوئی توند
    تو نے اے دوست، کئی سال سے ورزش نہیں کی

    دو برس میں بنے اٹھارہ سکینڈل اپنے
    پھر بھی سسرال نے ہم سے کوئی پرسش نہیں کی

    پِٹ کے بیوی سے بھی گھر سے نہیں نکلے عاطفؔ
    "ہم نے بازار میں زخموں کی نمائش نہیں کی"

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  2. La Alma

    La Alma محفلین

    مراسلے:
    1,848
    خوب۔:)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. عاطف ملک

    عاطف ملک محفلین

    مراسلے:
    1,092
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    شکریہ:)
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر