پشتو اشعار مع اردو ترجمہ

ربیع م نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 17, 2017

  1. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    په راتلو درسره ‌‌‌‌‌‌ډېرې خوښۍ راوړه
    پر خوشال خټک دې قدر دی نوروزه

    (خوشحال خان خټک)
    ‏آتے ہوئے اپنے ساتھ ڈھیر ساری خوشیاں لانا۔۔۔ نوروز! تم خوشحال خٹک کے نزدیک بہت قابلِ قدر ہو۔
    (مترجم: محمد نعمان)

    × ایک کتاب میں بیت کا یہ متن نظر آیا ہے:
    په راتلهٔ ورلره ډیره خوښی راوړي
    په خوشحال باندې دې قدر دی نوروزه
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    د ګلونو په موسم کې خوار هغه دی
    چې يې نه پياله په لاس نه يې نګار شته

    (خوشحال خان خټک)
    ‎گُلوں کے موسم یعنی بہار میں خوار وہی ہے جس کے پاس نہ پیالہ ہے نہ ہی نگار.
    (مترجم: محمد نعمان)
     
  3. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    هغه باد چې کابل خېز دی
    په ما واړه عنبر بېز دی

    (خوشحال خان خټک)
    وہ باد جو کابُل کی جانب سے آتی ہے، میرے لیے تماماً عنبر بِکھیرنے والی ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏اپریل 3, 2018
  4. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    څوک چې یاد کاندي کابل
    په ګوګل مې شي غُلغُل

    (خوشحال خان خټک)
    جب کوئی کابُل کا ذکر کرتا ہے تو میرے سینے میں جوش پیدا ہوتا ہے۔
    (مترجم: نورالبصر امن)
     
  5. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    څوک چې یاد کا پېښور
    زما زړه شي منور

    (خوشحال خان خټک)
    جب کوئی پشاور کا ذکر کرتا ہے تو میرا دل مُنوّر ہو جاتا ہے۔
    (مترجم: نورالبصر امن)
     
  6. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    زما عمر په حساب تر شلو زیات دی
    د عشق غم به مې په دېرش کاله کښې زوړ کا

    (خوشحال خان خټک)
    میری عمر حساب کے مطابق تقریباً بیس سے زیادہ ہے۔۔۔ [لیکن] عشق کا غم مجھے تیس سال [کی عُمر] میں پِیر کر دے گا۔

    × مصرعِ ثانی کا یہ متن بھی نظر آیا ہے:
    د عشق غم به مې په لږ کاله کې زوړ کا
    [لیکن] عشق کا غم مجھے اندَک (تھوڑے) سالوں میں پِیر کر دے گا۔

    × فارغ بخاری اور رضا ہمدانی نے مندرجۂ بالا بیت کا منظوم اردو ترجمہ یوں کیا ہے:
    عُمر میری بیس سے زائد نہیں پر جلد ہی
    پِیر ہو جاؤں گا گر یہ عشق کے آلام ہیں
     
  7. انیس جان

    انیس جان محفلین

    مراسلے:
    407
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Psychedelic
    کہ دِ عشق شکرے تیرے تر گلو کڑے
    اگر تو عشق کا شکر کھالے
    نور لذت بہ لکہ زہر ہسے تو کڑے
    پھر باقی تمام لذت کو زہر کی طرح. ،تو،، کردے گا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. انیس جان

    انیس جان محفلین

    مراسلے:
    407
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Psychedelic
    کا دے وشی ملاقات د سروِ قد
    ،،،، اگر تیری ملاقات اس سرو قد سے ہوجائے
    د فاختے پہ سیر بہ چغے پہ کوکو کڑے
    پھر تو فاختے کی طرح شور مچاتا پھرے گا کہ،، کو کو،، کہاں ہے کہاں ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. انیس جان

    انیس جان محفلین

    مراسلے:
    407
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Psychedelic
    کا یو زلے تورے زلفے کے پریشانے
    اگر تو ایک بار اپنی کالی زلفوں کو پریشاں کردے
    خاکستر بہ پہ چمن کے کشمالو کڑے
    تو پھر چمن میں کشمالو( ایک کالے رنگ کا۔پھول) بھی خاکستر ہوجاے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. انیس جان

    انیس جان محفلین

    مراسلے:
    407
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Psychedelic
    کا سوزن د بنڑو راوڑے تار د زلفوں
    اگر تو ابرو کی سوئی اور زلف کی تار کا دھاگا لے آئے
    د رحمن د زڑگی زخم با رفو کڑے
    پھر کہیں جا کے تو رحمن کے چاک دل کی رفو کر پائے گا
    عبدالرحمن بابا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  11. انیس جان

    انیس جان محفلین

    مراسلے:
    407
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Psychedelic
    ایک دفعہ رحمان بابا کو مغل بادشاہ اورنگزیب نے کہا کہ کیا ملنگوں والی صورت بنائی ہوئی ہے میرے ساتھ چلو اور وہی شاہی محل میں رہا کرو
    تو رحمان بابا نے جواب میں کہا کہ

    اورنگ زیب کا د دہلی پہ تخت نازے گی

    اورنگزیب کو اگر اپنے تختِ دہلی پر ناز ہے تو

    ما رحمان تا خپل بہادر کلے دہلی دے

    مجھ رحمان کو اپنا ،،بہادر کلہ،، ہی دہلی ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    څه اثر به زما اوښکې په تا کاندي
    ﻻ تازه شي اور په اوښکو د کباب
    (رحمان بابا)

    میرے اشک تم پر کیا اثر کریں گے؟۔۔۔ کباب کے اشکوں سے آتش مزید شُعلہ‌ور ہو جاتی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. انیس جان

    انیس جان محفلین

    مراسلے:
    407
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Psychedelic
    بيښي لکه چه ڼه وې بل هڼر زما په لاس که
    بس هر سړه لېدل غواړي خڼجر زما په لاس که
     
  14. انیس جان

    انیس جان محفلین

    مراسلے:
    407
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Psychedelic
    د وصال شپه مه بدله په بيلتوڼ شوه الغياث
    دقيامت خوارې ره پيښه په ژوندون شوه الغياث

    رحمان بابا
     
  15. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    لُطفاً، اردو ترجمہ بھی کیجیے۔
     
  16. انیس جان

    انیس جان محفلین

    مراسلے:
    407
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Psychedelic
    ترجمہ
    میرے ہاتھ میں (یعنی میرےپاس) چاہے کوئی بھی ہنر نہ ہو
    ( مطیع رہنے کیلیے) بس ہر کوئی میرے ہاتھ مں خنجر دیکھنا چاہتا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. انیس جان

    انیس جان محفلین

    مراسلے:
    407
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Psychedelic
    میری وصل کی شب جدائی میں بدل گئی ہے دہائی ہے
    قیامت کا عذاب مجھے زندگی میں درپیش ہوگیا دہائی ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    لکه ونه مستقیم په خپل مکان یم
    که خزان راباندې راشي که بهار
    (رحمان بابا)


    خواہ مجھ پر خَزاں آئے یا خواہ بہار آئے، مَیں‌ [دونوں صُورتوں میں] درخت کی مانند اپنی جگہ پر اِستِقامت و راستی و اُستُواری کے ساتھ [کھڑا] ہوں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  19. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    د آفتاب په مخ کښې هره ورځ زوال دی
    ستا د حسن په آفتاب کښې زوال نشته
    (رحمان بابا)


    خورشید کے چہرے پر ہر روز زوال [آ جاتا] ہے، [لیکن، اے یار،] تمہارے حُسن کے خُورشید میں [کِسی بھی وقت] زوال نہیں ہے۔
     
  20. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,700
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    «رحمان بابا» کی ایک پشتو بَیت میں «کربلا» کا ذِکر:

    خوب خندا د بېلتانه په زمکه نشته
    څه آرام به په دا دشتِ کربلا کړم
    (رحمان بابا)


    فِراق و جُدائی کی زمین میں نیند اور خندہ (ہنسی) وُجود نہیں رکھتا
    میں اِس دشتِ کربلا میں کیا آرام کروں گا!
     

اس صفحے کی تشہیر