1. اردو محفل سالگرہ شانزدہم

    اردو محفل کی سولہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

پشتو اشعار مع اردو ترجمہ

ربیع م نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 17, 2017

  1. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,932
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    د ښه مخ مینه مې نه درومي له دله
    که تل غوږ د ناصحانو په ویل کړم
    (خوشحال خان خټک)


    خواہ مَیں ہمیشہ ناصِحوں کی نصیحت پر کان دھروں اور اُن کی باتوں پر توجُّہ دوں، تو بھی میرے دِل سے خُوب‌صورت چہرے کی محبّت نہیں جاتی۔۔۔ (یعنی ناصِحان خواہ ہر وقت مجھ کو نصیحتیں سُناتے رہیں اور میں غَور سے سُنتا رہوں، تو بھی مجھ پر کوئی اثر نہیں ہوتا اور میرے دِل سے یارِ خُوب‌رُو اور اُس کے خُوب‌صورت چہرے کی محبّت ہرگز نہیں نِکلتی۔)
     
  2. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,932
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    «خوشحال خان خټک» کی ایک نصیحت‌آمیز رُباعی:

    چې بل خبر کړې د زړه له رایه
    هوښیار په څه یې و ما ته وایه
    هر چې هوښیار وي هنر یې دا دی
    خبره نه کا چا ته بې ځایه
    (خوشحال خان خټک)


    جب تم کسی دیگر و غَیر شخص کو اپنے دِل کی رائے اور دِل کے راز سے آگاہ کر دو، تو پھر مجھ کو بتاؤ کہ تم آخِر کِس چیز کا فہم و اِدراک رکھتے ہو اور تم ہوشیار کیسے ہو؟۔۔۔ کیونکہ جو بھی شخص ہوشیار ہو اُس کا ہُنَر یہ ہوتا ہے کہ وہ بےجا کسی سے بات نہیں کہتا، اور بےمَوقع و بےمَحَل کِسی کو اپنے راز سے آگاہ نہیں کرتا۔۔۔
     
  3. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,932
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    راغې بیا په قصد د ګلو ګلفروشه
    چې هېڅ مرغ د چمن نه دی بې خروشه
    (کاظم خان شَیدا)


    اے گُل‌فُروش! [شاید] تم دوبارہ گُلوں کو چُننے کے قصد سے چمن میں آ گئے، کیونکہ چمن کا کوئی بھی پرندہ ایسا نہیں ہے جو بانگ و فریاد نہ کر رہا ہو۔۔۔
     
  4. Anees jan

    Anees jan محفلین

    مراسلے:
    32
    خوشحال خان خٹک کی صنعتِ "ردالعجز علی الصدر" میں ایک غزل
    مطلع اور شعر
    ښايسته نه دی بلا دي آشنايې يې ده له غمه
    آشنايې یه ده له غمه , زه نارې وهم عالمه


    حسین لوگ فتنہ اور بلا ہیں آشنائی ان کی غم ہی غم ہے
    ،،آشنائی ان کی غم ہے اور میں چیخ چیخ کر یہ کہہ رہا ہوں اے لوگو

    زه نارې وهم عالمه , عشق يو يم ده په موجونه
    عشق يو يم ده په موجونه, الحذر له هسې يمه


    میں چیخ کر یہ کہہ رہا ہوں اے لوگو!!،، عشق ایک موجیں مارتا ہوا سمندر ہے
    عشق ایک موجیں مارتا ہوا سمندر ہے، اللہ کی پناہ ایسے سمندر سے
     
  5. Anees jan

    Anees jan محفلین

    مراسلے:
    32
    هغه شان له خپله ياره , بي وکيله بي ريباره
    زه خوشحال چه يګانه وم, يګانه يم له تر اوسه


    میرا معاملہ آج بھی اسی طرح یار کے ساتھ بے وکیل اور بے ریبار (قاصد) کے ہے
    میں خوشحال پہلے بھی سب سے یگانہ تھا اور آج تک یگانہ ہوں
     
    آخری تدوین: ‏اکتوبر 14, 2020
  6. Anees jan

    Anees jan محفلین

    مراسلے:
    32
    نمي شوم متحمل بروزِ وعدهِ وصل
    بيا بيا که دلم خوار زار بې تا دي

    گمان مبر که بگردد زه عشق تو خوشحال
    چرا که بر رخِ خوبِ تو ډير شيدا دي

    خوشحال خان بابا کی نیم پشتو فارسی غزل سے دو شعر
    ترجمہ حسان خان
     
  7. Anees jan

    Anees jan محفلین

    مراسلے:
    32
    درجِ بالا شعر کے مصرعِ اول پر ایک یہ شعر بھی ہے

    راحت نه دي بې زحمته چا موندلي
    کوم طبيب دي چه په روغ صورت مرهم ږدي

     
  8. Anees jan

    Anees jan محفلین

    مراسلے:
    32
    رحمان بابا کے ایک شعر میں بھی لفظِ تمه موجود ہے پہلا مصرع ذہن سے نکل گیا ہے

    چه اغزي کرې په تمه د ريحان اي
    "کانٹے بو کر ریحان کی امید رکھتے ہوں"

    نیز ایک ضرب المثل بھی اس پر موجود ہے

    "زه په تمه ته بي غمه"

    میں امید میں اور آپ بے غم
     
    آخری تدوین: ‏اکتوبر 14, 2020

اس صفحے کی تشہیر