1. اردو محفل سالگرہ پانزدہم

    اردو محفل کی یوم تاسیس کی پندرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

پاکستان میں کورونا کیسز کی تعداد

sobiaanum نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 16, 2020

  1. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,340
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    آنکھیں کھولیں
    پاکستان میں کورونا کیسز کی تعداد
     
    • متفق متفق × 1
  2. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,402
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    انکھیں بالکل کھلی ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔ میری پوسٹ کے صحت کو جانیں۔۔۔۔۔۔۔ مشکور
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,402
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    انکھیں کھولی ہیں الحمدللہ۔۔۔۔۔۔۔ میں نے لیبرل کا نام لیا اور اپ آگئے۔۔۔ واہ۔۔۔ وہ کچھ جلوس نکلے ہیں کراچی میں۔۔۔ پوچھنا یہ تھا کہ ان سے کرونا تو نہیں ناں پھیلے گا؟؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  4. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,340
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    جو لنک آپ کو دیا تھا اس پر کلک کریں۔ سستی اچھی چیز نہیں
     
    • متفق متفق × 2
  5. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,402
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    دیکھ چکا ہوں محترم۔۔۔۔۔۔۔ لیکن محفل میں وہ بحث اور مباحثہ نہیں وہ جوش و جذبہ نہیں جو دوسروں کے خلاف تھا۔۔۔۔۔۔۔۔۔ دوغلاپن اچھی بات نہیں۔۔۔۔۔۔۔۔
     
    • غمناک غمناک × 1
  6. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,452
  7. سید ذیشان

    سید ذیشان محفلین

    مراسلے:
    7,226
    موڈ:
    Asleep
    اوروں کو نصیحت خود میاں فصیحت!

    آپ تو غالبا وہی صاحب ہیں جو کہ دوسرے دھاگے میں نماز تراویح جماعت سے پڑھنے کا زور و شور سے دفاع کر رہے تھے؟ کیا اس سے کرونا نہیں پھیلتا؟ جبکہ جلوسوں پر یہاں پہلے ہی تشویش ظاہر کی جا چکی ہے، جس کو آپ نظر انداز کر گئے ہیں۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  8. sobiaanum

    sobiaanum محفلین

    مراسلے:
    28
    حیدرآباد میں کورونا وائرس کے مشتبہ مریض ڈاکٹر نوشاد کی موت کے بعد ان کی بیوہ اور 10 سال کے بیٹے کا بھی کورونا ٹیسٹ مثبت آ گیا ہے۔

    ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر (ڈی ایچ او) ڈاکٹر مظہر کے مطابق بظاہر لگتا ہے کہ ڈاکٹر نوشاد کورونا وائرس کے مریض تھے اور وہ ٹیسٹ کرانے کے بجائے ذاتی طور پر علاج کر رہے تھے، انہوں نے اسپتال سے آکسیجن کے سیلنڈر بھی منگوائے تھے۔

    ڈاکٹر مظہر نے بتایا کہ ڈاکٹر نوشاد کی فیملی کے 12 افراد کے ٹیسٹ لیے گئے، جن میں سے ان کی بیوہ اور بیٹے کا کورونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے جنہیں گھر میں ہی قرنطینہ کر دیا گیا ہے جب کہ اس سے پہلے اہلخانہ نے کورونا ٹیسٹ کرانے سے انکار کر دیا تھا۔

    ڈی ایچ او کا کہنا ہےکہ ڈاکٹر نوشاد سے ملنے والوں کی ہسٹری لی جا رہی ہے اور آج اسپتال کے عملے کے بھی ٹیسٹ لیے جا سکتے ہیں۔

    واضح رہے کہ حیدرآباد میں کورونا وائرس کے مشتبہ مریض ڈاکٹر نوشاد دو روز قبل انتقال کر گئے تھے۔

    ڈاکٹر نوشاد لطیف آباد میں نجی کلینک بھی چلاتے تھے اور انھوں نے انتقال سے قبل کئی مریضوں کا چیک اپ بھی کیا تھا۔

    خیال رہے کہ ملک میں کورونا کیسز کی تعداد روز بروز بڑھتی جا رہی ہے جس میں عام افراد سمیت طبی عملہ، ڈاکٹرز ، وزرا، حکومتی اراکین، اور دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد شامل ہیں۔
     
    • غمناک غمناک × 1
  9. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,402
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    بالکل وہی ہوں۔۔۔ لیکن اپ نے کیوں لب سی لی ہیں؟؟ تو اپ تو ماشاء اللہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور میرا زور و شور سے دفاع والا کوئی پوسٹ دکھا دیں۔۔۔
     
    • غمناک غمناک × 1
  10. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,340
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    پاکستان کے اعداد و شمار کے مطابق 9 ہزار سے زائد لوگ صحتیاب ہو چکے ہیں۔ صحتیابی کی یہاں کیا تعریف استعمال کی جا رہی ہے؟
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  11. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    9,321
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    دو مرتبہ ٹسٹ نیگیٹو آجائے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  12. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,452
    ڈاکٹروں پر دباؤ کا احساس ہے لیکن 12 ہزار روپے کب تک کافی ہوں گے؟ عمران خان
    اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ انہیں ڈاکٹروں اور نرسز پر موجود دباؤ کا احساس ہے لیکن لاک ڈاؤن سے اس وقت 15 کروڑ افراد متاثر ہوئے ہیں۔
    انڈپینڈنٹ اردو
    جمعہ 15 مئی 2020 18:30

    [​IMG]
    (اے ایف پی)

    اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ انہیں ڈاکٹروں اور نرسز پر موجود دباؤ کا احساس ہے لیکن لاک ڈاؤن سے اس وقت 15 کروڑ افراد متاثر ہوئے ہیں۔

    انہوں نے بات جاری رکھتے ہوئے سوال کیا کہ ہماری میڈیکل کمیونٹی بتائے ہم ان کا کیا کریں؟ ہم کتنے عرصے تک 12 ہزار روپے انہیں پہنچا سکتے ہیں اور یہ 12 ہزار روپے کب تک ایک خاندان کے لیے کافی ہوں گے؟

    وزیراعظم نے مزید کہا کہ 'لاک ڈاؤن تب ہے کہ لوگوں کو بند کردیں اور وائرس نہ پھیلے۔ لیکن وائرس ختم نہیں ہوگا، ووہان اور جنوبی کوریا میں دوبارہ کیسز سامنے آرہے ہیں۔ وائرس تو موجود ہے، جب بھی لوگوں کو ملنے کا موقع دیں گے تو وائرس پھیلے گا۔ ہمیں اب اس وائرس کے ساتھ گزارا کرنا ہوگا۔ میں پہلے دن سے کہہ رہا تھا ہم امریکا،جرمنی اور چین جیسا لاک ڈاؤن نہیں کرسکتے۔'

    انہوں نے کہا کہ 'اگر کوئی مجھے یقین دلائے کہ ایک یا 3 ماہ تک لاک ڈاؤن سے وائرس ختم ہوجائے گا تو اس سے بہتر کوئی چیز نہیں تھی ہم ملکی وسائل کا استعمال کرکے ایسا کرنے کی کوشش کرتے۔'

    اپنی بات جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا 'کہ ماہرین کہہ رہے ہیں کہ اس سال تک کرونا وائرس کی کوئی ویکسین نہیں تیار ہوسکتی اور وائرس کا اس کے بغیر علاج نہیں۔ اب کرونا وائرس کے کیسز تو بڑھیں گے لیکن اگر ان لوگوں کو روزگار نہ دینا شروع کیا تو کرونا سے زیادہ لوگوں کے بھوک سے مرنے کا مسئلہ بنا ہوا ہے۔'

    وزیر اعظم عمران خان نے مزید کہا کہ 'ہم نے جو بھی اقدامات اٹھائے ان کے باعث اب تک حالات قابو میں ہیں۔ کیسز اور اموات کی تعداد تخمینوں سے کافی کم ہے اور ہمارے ہسپتالوں میں اب تک وہ دباؤ نہیں پڑا۔

    انہوں نے یہ بھی کہا کہ حکومت کیسز میں اضافے کے لیے ذہنی طور پر تیار ہے اور جون کے آخر تک ہمارے ہسپتالوں میں مطلوبہ سہولیات موجود ہوں گی۔ تخمینوں کے مطابق ہر 100 میں سے صرف 4 یا 5 مریضوں کو ہسپتال جانے کی ضرورت پڑتی ہے جس کی وجہ سے انتہائی نگہداشت یونٹ(آئی سی یو) اور اس کی صلاحیت میں اضافے کے لیے تیاری کی جارہی ہے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  13. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,452
    وزیراعظم کی تمام صوبوں سے پبلک ٹرانسپورٹ کھولنے کی اپیل
    ویب ڈیسک جمع۔ء 15 مئ 2020

    اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن سے کورونا وائرس ختم نہیں ہوگا اور تمام صوبوں سے درخواست کرتا ہوں کہ پبلک ٹرانسپورٹ کھول دیں۔

    وزیراعظم عمران خان نے کورونا کی صورتحال پر سرکاری ٹی وی پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لاک ڈاؤن کھولنےکےفیصلےپرطبی عملے کی فکرتھی کہ اسپتالوں پردباؤبڑھےگا، حکومت کو طبی عملےکی پریشانیوں کاپوری طرح احساس ہے۔

    عمران خان نے کہا کہ اگر کوئی یقین دلاتا کہ 2 یا 3 ماہ کے لاک ڈاؤن سے کورونا وائرس ختم ہوجائے گا تو ہم ایسے کرلیتے، لیکن لاک ڈاؤن سے کورونا وائرس ختم نہیں ہوگا اور ایک سال تک بھی کوئی ویکسین آنے کا امکان نہیں، لاک ڈاؤن جب بھی کھولیں گے کیسز میں دوبارہ اضافہ ہوگا، اب اس وائرس کے ساتھ رہنا اور ایک سال گزارہ کرنا ہوگا، مسلسل لاک ڈاؤن کے متحمل نہیں ہوسکتے۔

    وزیراعظم کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن سے ملک میں 15 کروڑ لوگ متاثر ہیں، میڈیکل برادری بتائے کہ ان لوگوں کا کیا کریں، ہم نے احساس پروگرام سمیت وہ کام بھی کیے جو ترقی یافتہ ممالک بھی نہ کرسکے، لیکن کب تک کریں گے، عوام کو روزگار نہ دیا تو کورونا سے زیادہ بھوک سے مرنے کا خطرہ ہے، دن میں 10 دفعہ سوچتا ہوں کہ سفید پوش لوگ کیسے گزارا کررہے ہوں گے، باقی ممالک اپنے عوام کو کورونا سے بچارہے ہیں، ہم تو اپنے لوگوں کو بھوک سے مرنے سے بچارہے ہیں، لاک ڈاؤن کھولنا ہماری مجبوری ہے۔

    عمران خان نے کہا کہ کورونا کی وجہ سے ملک میں پولیو اور بچوں کی ویکسینیشن سمیت دیگر بیماریاں ہیں جو نظرانداز ہورہی ہیں، کورونا کو دیکھ رہے ہیں لیکن باقی ملک بھی تو سنبھالنا ہے، کورونا سے 52 ہزار 324 کیسز اور 1324 اموات ہونے کا خدشہ تھا لیکن اندازے سے کم 35 ہزار 700 کیسز اور 770 اموات ہوئیں۔ انہوں نے کہا کہ جو کاروبار کھولیں گے اس کے مالک کو ایس او پیز پر عمل کرنا ہوگا، جن جگہوں پر کیسز بڑھے انہیں بند کردیا جائے گا، کارخانے دار اور دکاندار ایس او پیز پر عمل کریں اور ذمہ داری لیں۔

    وزیراعظم نے کہا کہ ہم تمام صوبوں کے اتفاق رائے سے فیصلہ کرتے ہیں اور کوئی ایسا فیصلہ نہیں کرتے جس میں ایک صوبہ بھی نہ مان رہا ہوں، اس لیے پبلک ٹرانسپورٹ کھولنے کا فیصلہ نہیں ہوسکا، کیونکہ ایک دو صوبوں کو اس سے کورونا پھیلنے کا خدشہ ہے، میں سب سے درخواست کرتا ہوں کہ پبلک ٹرانسپورٹ کھول دیں، کیونکہ ٹرانسپورٹ بند کرکے غریب کو نقصان پہنچا رہے ہیں، امریکا اور یورپ جہاں ایک دن میں 800 لوگ مررہے ہیں، انہوں نے بند نہ کی تو ہم نے کیوں بند کرکے رکھ دی، دوبارہ درخواست کروں گا کہ پبلک ٹرانسپورٹ کھول دیں۔

    عمران خان نے مزید کہا کہ مزدوروں کو روزگار دینے کےلیے تعمیراتی صنعت کو مراعات دی ہیں، وزیراعظم ریلیف فنڈ کو بے روزگار ہونے والوں کے لیے مختص کردیا، پیر سے پیسے ملنے شروع ہوجائیں گے۔ اس موقعے پر وفاقی وزرا اور وزیر اعظم کے معاونین خصوصی نے بھی مختلف شعبوں سے متعلق صورت حال سے آگاہ کیا۔

    ملک میں کورونا وائرس ٹیسٹنگ کی صلاحیت میں 27 گنا اضافہ ہوگیا، اسدعمر

    وفاقی وزیر منصوبہ اسد عمر نے کہا کہ کوروناٹیسٹنگ کی صلاحیت بتدریج بڑھارہےہیں۔ کوروناٹیسٹنگ کی صلاحیت میں27گنااضافہ ہوچکا۔ ہم مربوط حکمت عملی کےتحت آگے بڑھ رہےہیں۔ 6ہفتےتک صورتحال میں بہتری کاامکان نہیں۔ ،ملک میں لاک ڈاؤن کی وجہ سےغریب کومشکلات ہیں۔ موجودہ صورتحال میں این ڈی ایم اےکاکردارقابل ستائش ہے۔

    انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنےکے لیےعوام کواحتیاطی تدابیراختیار کرنا ہوگی۔ حکومت کوروناصورت حال سےمتعلق آپ سےسچ بول رہی ہے۔ حکومت عوام کی بہتری کے لیےاقدامات کررہی ہے۔دنیا کے بہترین ذہن ہماری مدد کر رہے ہیں۔

    مستقبل میں ٹی بی کےمریضوں کی تعدادبڑھ سکتی ہے، ڈاکٹر فیصل

    وزیر اعظم کے فوکل پرسن برائے کورونا وائرس ڈاکٹر فیصل سلطان نے بتایا کہ وبا کے ساتھ دیگربیماریاں بھی ہیں جواپنااثردکھارہی ہیں۔ پاکستان ٹی بی مریضوں کے اعتبار سے دنیاکے5 بڑے ممالک میں شامل ہے۔ مستقبل میں ٹی بی کےمریضوں کی تعدادبڑھ سکتی ہے۔ لاک ڈاؤن کی وجہ سےحفاظتی ٹیکوں کانظام متاثرہورہاہے۔ بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگوانے کی شرح 55 فی صدکم ہوئی۔ کوروناکےساتھ ساتھ دوسرے معاملات پربھی نظررکھنی ہے


    لاک ڈاؤن سے ایک ماہ میں 15 ہزار بچوں کی اموات کا خدشہ ہے، ڈاکٹر ظفر مرزا


    وزیرا عظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ لاک ڈاؤن سےایک ماہ میں15ہزاربچوں کی اموات کاتخمینہ ہے۔ فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرزکی حفاظت اولین ترجیح ہے۔ حفاظتی کٹس کادرست استعمال نہیں ہورہا۔ ہیلتھ سسٹم کومزیدمضبوط کرنےکی ضرورت ہے۔ صوبائی وزرائےصحت کےساتھ ملکر’’دی کیئر‘‘پروگرام تشکیل دیا گیا ہے۔ ایک لاکھ سےزائدہیلتھ ورکرزکی تربیت کابندوبست کیاہے۔

    انہوں نے بتایا کورونا وائرس سےمتعلق ایک دواکےکلینیکل ٹرائل ہوئےہیں۔ ایک امریکی کمپنی نے یہ دوابنائی ہے۔ دنیا میں صرف 6کمپنیاں اس دواکوبنائیں گی۔ پاکستان میں دوابنی تو127ممالک کوبرآمدکی جائےگی۔
     
  14. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,340
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    100 میں سے دو سے اوپر تو مر رہے ہیں
     
    • غمناک غمناک × 1
  15. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,452
    ایک نیا رونا دھونا۔ اہلسنت مساجد اور اجتماعات پر پابندی لگا کر اہل تشیع اجتماعات کو اجازت دے دی گئی۔
     
  16. سید ذیشان

    سید ذیشان محفلین

    مراسلے:
    7,226
    موڈ:
    Asleep
    مساجد بالکل بھی بند نہیں تھیں لیکن جلوس نکالنے کی بالکل بھی کوئی تک نہیں بنتی۔ ماتمی جلوس نکالنے والوں کی عقلوں پر ماتم کرنے کو جی چاہتا ہے۔ حد سے زیادہ غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کیا گیا ہے۔
     
    • متفق متفق × 1
  17. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,452
  18. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,452
    مریضوں کی تعداد ۴۰ ہزار ہو گئی
     
  19. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,452
    سپریم کورٹ زندہ باد!
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  20. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,402
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    نر کا بچہ ۔۔۔۔۔ ہاہاہاہا
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1

اس صفحے کی تشہیر