ٹوٹا مندر دیکھے کوئی

عاطف ملک نے 'آپ کی شاعری (پابندِ بحور شاعری)' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 20, 2018

  1. عاطف ملک

    عاطف ملک محفلین

    مراسلے:
    1,351
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    ٹوٹا مندر دیکھے کوئی
    میرے دل میں جھانکے کوئی

    ایک اک کر کے بکھر چکے ہیں
    میرے خواب سمیٹے کوئی

    تیری آنکھیں غیر کی طالب
    آئینہ کیوں دیکھے کوئی

    دل کے باغ میں ہے ویرانی
    خوشبو آن بکھیرے کوئی

    کب سوچوں میں گم ہو جائے
    جانے بیٹھے بیٹھے کوئی

    چُھو کر عشق کی بادِ صبا کو
    پھولوں جیسا نکھرے کوئی

    غم کے طوفانوں کے آگے
    انگاروں سا دہکے کوئی

    دھوپ سے لڑتی برف کے جیسے
    قطرہ قطرہ پگھلے کوئی

    راکھ کرے یہ آگ لگن کی
    سلگے، تڑپے، چیخے کوئی

    دَین ہے اس کی، درد کی دولت
    مانگے کوئی، پائے کوئی

    عاطفؔ نے جو بات چھپائی
    بن بولے ہی سمجھے کوئی

    عاطفؔ ملک
    ۲۰ دسمبر ۲۰۱۸
     
    • زبردست زبردست × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی لائبریرین

    مراسلے:
    19,077
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    واہ واہ ،
    زبردست عاطف بھائی ،کیا بات ہے ۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  3. امان زرگر

    امان زرگر محفلین

    مراسلے:
    1,406
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    دل کو مندر کہنا ؟۔۔۔۔ کچھ دل کو اچھا نہیں لگا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. عاطف ملک

    عاطف ملک محفلین

    مراسلے:
    1,351
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    بہت شکریہ عدنان بھائی:)
    میرے خیال میں تو اس میں کوئی قابلِ اعتراض بات نہیں ہے۔(n)
     
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر