ماہر القادری نعت: کچھ کفر نے فتنے پھیلائے، کچھ ظلم نے شعلے بھڑکائے

محمد تابش صدیقی نے 'حمد، نعت، مدحت و منقبت' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 2, 2019

  1. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    26,819
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    کچھ کفر نے فتنے پھیلائے، کچھ ظلم نے شعلے بھڑکائے
    سینوں میں عداوت جاگ اٹھی، انسان سے انساں ٹکرائے

    پامال کیا، برباد کیا، کمزور کو طاقت والوں نے
    جب ظلم و ستم حد سے گزرے، تشریف محمدﷺ لے آئے

    رحمت کی گھٹائیں لہرائیں، دنیا کی امیدیں بر آئیں
    اکرام و عطا کی بارش کی، اخلاق کے موتی برسائے

    تہذیب کی شمعیں روشن کیں، اونٹوں کے چرانے والوں نے
    کانٹوں کو گلوں کی قسمت دی، ذروں کے مقدر چمکائے

    کچھ کیف دیا، کچھ ہوشیاری، کچھ سوز دیا، کچھ ساز دیا
    میخانۂ علم و عرفاں میں، توحید کے ساغر چھلکائے

    ہر چیز کو رعنائی دے کر دنیا کو حیاتِ نو بخشی
    صبحوں کے بھی چہروں کو دھویا، راتوں کے بھی گیسو سلجھائے

    اللہ سے رشتے کو جوڑا، باطل کے طلسموں کو توڑا
    خود وقت کے دھارے کو موڑا، طوفاں میں سفینے تیرائے

    تلوار بھی دی، قرآں بھی دیا، دنیا بھی عطا کی، عقبیٰ بھی
    مرنے کو شہادت فرمایا، جینے کے طریقے سمجھائے

    مکہ کی زمیں اور عرش کہاں، دم بھر میں یہاں، پل بھر میں وہاں
    پتھر کو عطا گویائی کی اور چاند کے ٹکڑے فرمائے

    مظلوموں کی فریاد سنی، مجبوروں کی غم خواری کی
    زخموں پہ خنک مرہم رکھے، بے چین دلوں کے کام آئے

    عورت کو حیا کی چادر دی، غیرت کا غازہ بھی بخشا
    شیشوں میں نزاکت پیدا کی، کردار کے جوہر چمکائے

    توحید کا دھارا رک نہ سکا ، اسلام کا پرچم جھک نہ سکا
    کفار بہت کچھ جھنجلائے، شیطاں نے ہزاروں بل کھائے

    اے نام محمد صلِ علیٰ، ماہرؔ کے لیے تو سب کچھ ہے
    ہونٹوں پہ تبسم بھی آیا، آنکھوں میں بھی آنسو بھر آئے

    ٭٭٭
    مولانا ماہر القادریؒ​
     
    • زبردست زبردست × 12
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    17,556
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    اے نام محمد صلِ علیٰ، ماہرؔ کے لئے تو سب کچھ ہے
    ہونٹوں پہ تبسم بھی آیا، آنکھوں میں بھی آنسو بھر آئے​
     
    آخری تدوین: ‏اگست 2, 2019
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  3. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    17,556
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    توحید کا دھارا رک نہ سکا ، اسلام کا پرچم جھک نہ سکا
    کفار بہت کچھ جھنجلائے، شیطاں نے ہزاروں بل کھائے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  4. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    15,434
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سبحان اللہ
    سبحان اللہ
    اتنی پیاری نعت۔۔۔
    کیسے دل سے نکلے الفاظ ہیں۔ الفاظ نہیں محبتیں ہیں۔ خلوص ہے۔ وفا ہے۔
    کمال!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  5. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    18,816
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    سبحان اللہ۔ کیا ہی بہترین منظر کشی کی گئی ہے۔ اللہ رب العزت مولانا صاحب کی لہد پر ان گنت رحمتوں کا نزول فرمائیں۔ آمین

    یہ جھنجلاہٹ غرقد کے پیچھے چھپنے والے وقت تک جاری رہنی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  6. یاقوت

    یاقوت محفلین

    مراسلے:
    550
    موڈ:
    Breezy
    خوبصوت نعتوں میں سے ایک خوبصورت ترین نعت۔
    ماہر صاحب کے کیا کہنے اللہ پاک انہیں کروٹ کروٹ جنت نصیب فرمائیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  7. فلک شیر

    فلک شیر محفلین

    مراسلے:
    7,480
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    اللہ اللہ
    بہت عمدہ شراکت ہے تابش بھائی
    جزاک اللہ خیر
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  8. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی لائبریرین

    مراسلے:
    19,302
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    سبحان اللہ ،
    زبردست شیئرنگ ۔
    اللہ کریم جزائے خیر عطا فرمائیں۔آمین
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  9. یاسر شاہ

    یاسر شاہ محفلین

    مراسلے:
    1,526
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bitched
    ماشاء اللہ ماہر القادری صاحب کی نہایت خوبصورت نعت ہے۔ان کے زیر سرپرستی فاران مجلہ چھپتا تھا۔اب ان مجلوں کے بہترین مضامین دو کتابوں کی صورت میں شائع ہوئے ہیں ایک کتاب ہے"قلمی معرکے" اور دوسری "ادبی معرکے"۔تنقیدی عالی تبصرے اور ادبی بیش بہا مضامین اس میں شامل ہیں ۔میرے پاس دونوں ہیں۔

    کبھی ان کے لکھے پہ کوئی مدلل تنقید کرتا تو اسے قبول کر لیتے اور اپنے لکھے سے رجوع کر لیتے۔ابھی حیات ہوتے تو اس شعر پہ میں ان کو اپنی رائے ارسال کرتا ۔امید ہے مان لیتے۔

    جب جب میں یہ نعت پڑھتا ہوں درج ذیل شعر کے مصرع اول کی ترتیب کھٹکتی ہے

    تلوار بھی دی، قرآن بھی دیا، دنیا بھی عطا کی، عقبیٰ بھی
    مرنے کو شہادت فرمایا، جینے کے طریقے سمجھائے

    اس شعر کو یوں ہونا چاہیے تھا:

    قرآن دیا تلوار بھی دی دنیا بھی عطا کی عقبیٰ بھی
    مرنے کو شہادت فرمایا، جینے کے طریقے سمجھائے


    زیادہ سے زیادہ یہی ہوتا کہ اگر ان کے شعر میں صنعت لف و نشر مرتب ہے تو اس شعر میں لف و نشر غیر مرتب ہو جاتی۔جبکہ لف و نشر غیر مرتب عیب بھی نہیں جیسا کہ میر کا شعر ہے:

    ایک سب آگ، ایک سب پانی
    دیدہ و دل عذاب ہیں دونوں

    پہلے مصرع میں آگ کا ذکر پہلے ہے اور پانی کا بعد میں جبکہ دوسرے مصرع میں مناسبات کی ترتیب الٹ ہے آگ کی مناسبت سے دل کا ذکر بعد میں ہے اور پانی کی مناسبت سے دیدہ کا پہلے ۔یہی لف و نشر غیر مرتب ہے اور بالکل ٹھیک ہے۔

    لیکن ان کے شعر میں لف و نشر کی ترتیب سے مکی اور مدنی ادوار کی تاریخی ترتیب بدلتی ہوئی، اللہ جل شانہ کی حکمت کے خلاف محسوس ہوتی ہے۔
    و اللہ اعلم بالثواب
     
    • زبردست زبردست × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. صابرہ امین

    صابرہ امین لائبریرین

    مراسلے:
    1,926
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    بہت ہی خوبصورت نعت ۔ اللہ بخشش کا ذریعہ بنائے ۔ آمین
     
  11. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    3,965
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    اللھم صل علیٰ نبینا محمد وعلیٰ آلہ واصحابہ وبارک وسلم ۔

    ماہرالقادری کے مخصوص اندازکی خوبصورت نعت !
    پڑھوانے کے لئے بہت شکریہ تابش بھائی ۔ اس مصرع کا ٹائپو درست کرلیجئے ۔ اس میں قرآن نہیں قرآں ہے ۔
    تلوار بھی دی، قرآن بھی دیا، دنیا بھی عطا کی، عقبیٰ بھی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2

اس صفحے کی تشہیر