نظم - میں‌ گوتم نہیں‌ ہوں - خلیل الرحمٰن اعظمی

محمد وارث نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 14, 2008

  1. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,564
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    میں گوتم نہیں ہوں

    میں گوتم نہیں ہوں
    مگر میں بھی جب گھر سے نکلا تھا
    یہ سوچتا تھا
    کہ میں اپنے ہی آپ کو ڈھونڈنے جا رہا ہوں
    کسی پیڑ کی چھاؤں میں
    میں بھی بیٹھوں گا
    اک دن مجھے بھی کوئی گیان ہوگا

    مگر جسم کی آگ
    جو گھر سے لے کر چلا تھا
    سلگتی رہی
    گھر کے باہر ہوا تیز تھی
    اور بھی یہ بھڑکتی رہی
    ایک اک پیڑ جل کر ہوا راکھ
    میں ایسے صحرا میں اب پھر رہا ہوں
    جہاں میں ہی میں ہوں
    جہاں میرا سایہ ہے
    سائے کا سایہ ہے
    اور درو تک
    بس خلا ہی خلا ہے


    (خلیل الرحمٰن اعظمی)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 7
    • زبردست زبردست × 2
  2. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,855
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت اچھی نظم ہے - مگر وارث صاحب آپ کو تو نظمیں اچھی نہیں لگتیں؟ یہ انقلاب کیسے آیا قبلہ؟ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,564
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ فرخ صاحب، انقلاب کہاں محترم، ایک چھوٹی سی پھلجڑی سمجھیں۔

    ڈھونڈ تو میں کوئی غزل ہی رہا تھا پوسٹ کرنے کیلیئے کہ اسکے عنوان نے چونکا دیا، لیکن سب سے اہم یہ کہ مختصر نظم تھی :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  4. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    خوب جناب!
     
  5. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    22,382
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    واہ

    بہت خوب ۔۔۔۔!

    شکریہ وارث بھائی۔۔۔!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر