1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

سودا محتسب آیا بزم میں، ساقی لے آ شراب کو ۔ سودا

فرخ منظور نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 7, 2010

  1. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,632
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    محتسب آیا بزم میں، ساقی لے آ شراب کو
    یہ نہ سمجھ کہ شب پرک دیکھے گی آفتاب کو

    آنکھوں کا میری ان دنوں، یارو ہے طرفہ ماجرا
    میں تو روؤں ہوں اُن کے تئیں ہنستی ہیں یہ سحاب کو

    دم ہی رہا یہ پیرہن، تن تو ہو اشک بہہ گیا
    جن نے نہ دیکھا ہو مجھے، دیکھے وہ جا حباب کو

    پند سے تیری زاہدا ! حال مرا یہ مے سے ہے
    سگ کا گزیدہ جس طرح دیکھ ڈرے ہے آب کو

    مجنوں بہ ریگِ بادیہ کیوں نے کرے شمارِ غم
    یاں نہ تو جا شمار کی، دخل نہ یاں حساب کو

    موسمِ گُل میں اب کے سال، بادہ بغیر ساقیا
    ہم نے کیا بہ جامِ چشم، خونِ دلِ خراب کو

    یار کے بیتِ ابرو پر خال نہیں، وہ ہے نقط
    آفریں ہے صد آفریں صاحبِ انتخاب کو

    خامشی موجبِ رضا کب ہو سوالِ بوسہ کی
    تنگی ہی اس دہن کی راہ دیتی نہیں جواب کو

    سودا امیدِ وصل کی کس کو ہے یاں کہ رہ نہیں
    اپنے دل اور چشم میں ایسے خیال و خواب کو

    (مرزا رفیع سودا)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  2. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,371
    بہت خوب جناب سخنور صاحب!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,632
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت شکریہ کاشفی صاحب، اعجاز صاحب اور وارث صاحب!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2

اس صفحے کی تشہیر