احمد ندیم قاسمی قطعات

Umair Maqsood نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 3, 2016

  1. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    آنسوؤں میں بھگو کے آنکھوں کو
    دیکھتے ہو تو خاک دیکھو گے
    آئینے کو ذرا سا نم کر دو

    پیرہن چاک چاک دیکھو گے
     
  2. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    آنکھ کھل جاتی ہے جب رات کو سوتے سوتے
    کتنی سونی نظر آتی ہے گزر گاہ حیات
    ذہن و وجدان میں یوں فاصلے تن جاتے ہیں

    شام کی بات بھی لگتی ہے بہت دور کی بات
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    بات کہنے کا جو ڈھب ہو تو ہزاروں باتیں
    ایک ہی بات میں کہہ جاتے ہیں کہنے والے
    لیکن اِن کے لئے ہر لفظ کا مفہوم ہے ایک

    کتنے بے درد ہیں اس شہر کے رہنے والے
     
  4. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    باجرے کی فصل سے چڑیاں اڑانے کے لئے
    ایک دوشیزہ کھڑی ہے کنکروں کے ڈھیر پر
    وہ جھکی وہ ایک پتھر سنسنایا، وہ گِرا

    کٹ گئے ہیں اس کے جھٹکے سے مرے قلب و جگر
     
  5. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    برس کے چھٹ گئے بادل ہوائیں گاتی ہیں
    گرجتے نالوں میں چرواہیاں نہاتی ہیں
    وہ نیلی دھوئی ہوئی گھاٹیوں سے دو گونجیں

    کسی کو دکھ بھری آواز میں بلاتی ہیں
     
  6. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    بوڑھے ماں باپ بلکتے ہوئے گھر کو پلٹے
    چونک اٹھے ہیں وہ شہنائی بجانے والے
    اف بچھڑتی ہوئی دوشیزہ کے نالوں کا اثر

    ڈولتے جاتے ہیں ڈولی کے اٹھانے والے
     
  7. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    وہ پانی بھرنے چلی اک جوان پنساری
    وہ گورے ٹخنوں پہ پازیب چھنچھناتی ہے
    غضب غضب کہ مرے دل کی سرد راکھ سے پھر

    کسی کی تپتی جوانی کی آنچ آتی ہے
     
  8. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    وہ دور جھیل کے پانی میں تیرتا ہے چاند
    پہاڑیوں کے اندھیروں پہ نور چھانے لگا
    وہ ایک کھوہ میں اک بد نصیب چرواہا

    بھگو کے آنسوؤں میں ایک گیت گانے لگا
     
  9. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    وہ سبز کھیت کے اس پار ایک چٹان کے پاس
    کڑکتی دھوپ میں بیٹھی ہے ایک چرواہی
    پرے چٹان سے پگڈنڈیوں کے جالوں میں

    بھٹکتا پھرتا ہے وہ ایک نوجوان راہی
     
  10. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    یہ بھی کیا چال ہے ہر گام پہ محشر کا گماں
    پائلیں بجتی ہیں لہنگے کی کماں تنتی ہے
    یوں چلو جیسے اترتی ہے کہستاں سے ہوا

    جیسے رنگوں کے تموج سے کرن بنتی ہے
     
  11. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    ایک مدت کے بعد آج مجھے
    ہم زباں ماننے لگے ہیں لوگ
    پہلے روتے تھے، چونکتے ہیں اب
    مجھ کو پہچاننے لگے ہیں لوگ
     

اس صفحے کی تشہیر