1. اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں فراخدلانہ تعاون پر احباب کا بے حد شکریہ نیز ہدف کی تکمیل پر مبارکباد۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    $500.00
    اعلان ختم کریں

لیاقت علی عاصم غزل ۔ کیسی مہک کہاں کا کوئی پھول باغ میں ۔ لیاقت علی عاصم

محمداحمد نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 5, 2014

  1. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,783
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    غزل

    کیسی مہک کہاں کا کوئی پھول باغ میں
    بس رنگِ بے وفائی ہے مقبول باغ میں

    آنکھوں پہ ہاتھ رکھ کے نکلنا پڑا مجھے
    اک یاد نے اڑائی بہت دھول باغ میں

    تتلی کو ڈھلتے دیکھنا جگنو کے رُوپ میں
    میرا یہی ہے روز کا معمول باغ میں

    جانے وہ حُسن تھا کہ ہوس تھی نگاہ میں
    ہر چہرہ لگ رہا تھا مجھے پھول باغ میں

    عاصمؔ رسالہ ہائے گل و برگ و بار دیکھ
    قدرت نے کھول رکھا ہے سکول باغ میں

    لیاقت علی عاصمؔ
     
    • زبردست زبردست × 3
  2. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,371
    جانے وہ حُسن تھا کہ ہوس تھی نگاہ میں
    ہر چہرہ لگ رہا تھا مجھے پھول باغ میں
    بہت عمدہ!
     
  3. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,783
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ کاشفی بھائی ۔۔۔۔!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر